بلاول کی حضرت عبداللہ شاہ غازیؒ کے مزار پر حاضری، علاقے میں کرفیو

بلاول کی حضرت عبداللہ شاہ غازیؒ کے مزار پر حاضری، علاقے میں کرفیو

کراچی (این این آئی) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی اچانک درگاہ سید حضرت عبداللہ شاہ غازی پر حاضری کے باعث درگاہ کو ایک گھنٹے تک زائرین کے لیئے بند کردیا گیا‘ جبکہ درگاہ کے اطراف غیر اعلانیہ کرفیو کا سماں تھا اور کسی بھی عام آدمی کو درگاہ کی حدود میں داخلے کی اجازت نہیں تھی۔تفصیلات کے مطابق اتوار کی شام جب ہزاروں کی تعداد میں زائرین برصغیر کے عظیم صوفی بزرگ سید عبداللہ شاہ غازی کے مزار پر حاضری کیلئے جمع تھے تو اچانک انہیں درگاہ خالی کرنے کا حکم دے دیا گیا تاہم انہیں یہ نہیں بتایا گیا کہ درگاہ خالی کرانے کے مقاصد کیا ہیں‘ ہزاروں کی تعداد میں خواتین اور بچے درگاہ کے اندر موجود تھے جبکہ درگاہ کے باہر کئی میٹر لمبی قطار درگاہ میں حاضری کیلئے چیکنگ کے مراحل سے گزر رہی تھی‘ درگاہ خالی کرانے کی وجہ کو صیغہ راز میں رکھا گیا شام 6 بجے کے قریب بلاول بھٹو زرداری سخت حفاظتی حصار میں درگاہ میں داخل ہوئے جہاں انہوں نے فاتحہ خوانی کی اور مزار پر چادر چڑھائی اس دوران درگاہ کے اطراف سیکڑوں کی تعداد میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار مامور تھے‘ بلاول بھٹو کی روانگی کے بعد درگاہ کو عام زائرین کیلئے کھول دیا گیا۔ زائرین کی بڑی تعداد کلفٹن کی سڑکوں پر ایک گھنٹے تک سید عبداللہ شاہ غازی کے مزار پر حاضری دینے کیلئے کھڑی رہی۔

مزید : صفحہ اول


loading...