فواد عالم کے بعد اعزاز چیمہ بھی پرفارمنس کے باوجود نظرانداز

فواد عالم کے بعد اعزاز چیمہ بھی پرفارمنس کے باوجود نظرانداز
 فواد عالم کے بعد اعزاز چیمہ بھی پرفارمنس کے باوجود نظرانداز

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر)ڈومیسٹک کرکٹ میں فواد عالم کے ساتھ فاسٹ باؤلر اعزاز چیمہ کو بھی مسلسل پرفارمنس کے باوجود نظر انداز کیا جارہا ہے۔ذرائع مطابق قومی فاسٹ باؤلر اعزاز چیمہ لاہور بلیوز کی جانب سے 7 میچز میں 44 وکٹ کے ساتھ اس وقت قائد اعظم ٹرافی کے ٹاپ وکٹ ٹیکر بولر بن چکے ہیں اور ان کی بہترین بولنگ 40 رنز دے کر 6 وکٹ ہیں، وہ پانچ بار ایک اننگزمیں مخالف ٹیم کے کیمپ میں ہلچل مچانے کا اعزاز رکھتے ہیں لیکن اس کے باوجود انہیں نظرانداز کیا جارہا ہے۔اعزاز چیمہ کا کہنا ہے کہ گزشتہ برس قائداعظم ٹرافی کے بہترین بولر کا ایوارڈ ملا اور اس سال کی کارکردگی بھی سب کے سامنے ہے، فٹ اور بھرپور فارم میں ہوں، سخت محنت اور عمدہ کارکردگی کے باوجود کیوں منتخب نہیں کیا جارہا، جب قومی ٹیم میں نام نہیں آتا تو پریشان ضرور ہوتا ہوں لیکن ہمت ہارنے والوں میں سے نہیں اور کرکٹ چھوڑنے کا ہرگز نہیں سوچ رہا، جب تک دم اور جذبے جوان ہیں، کھیل جاری رکھنے کا ارادہ کیا ہواہے۔فاسٹ باؤلر کا کہنا ہے کہ میری بڑھتی عمر کا کھیل سے تعلق نہیں، مصباح الحق کی مثال سب کے سامنے ہے، اصل چیز فٹنس اور فارم ہے، جب تک پرفارمنس ہورہی ہے ، اس وقت تک ملک کی نمائندگی کا بھی ضرور موقع ملنا چاہیے۔ پی ایس ایل میں کوئٹہ کی طرف سے کھیل چکا ہوں، اس بار بھی یقین ہے کہ کسی فرنچائز کی ٹیم سے چانس ملے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ بہت خوشی ہے کہ ساتھی بولر محمد عباس نے دبئی کی کنڈیشنز میں جس طرح شاندار بولنگ کرکے قومی ٹیم کی جیت میں کردار ادا کیا، اس سے ثابت ہوتا ہے کہ وکٹیں لینے کے لیے زیادہ رفتار نہیں بلکہ اچھی لائن اور لینتھ کی ضرورت ہوتی ہے۔

واضح رہے 29 سالہ چیمہ 7 ٹیسٹ، 14 ون ڈے اور 5 ٹی ٹوئنٹی میں بھی ملک کی نمائندگی کرچکے ہیں۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -