تالاب کے کنارے پڑا ایک گلاب کا پھول اور ایک خط۔۔۔ آدمی نے اُٹھا کر دیکھا تو اس میں کیا لکھا تھا؟ پڑھ کر کوئی بھی آنسو نہ روک پائے کیونکہ۔۔۔

تالاب کے کنارے پڑا ایک گلاب کا پھول اور ایک خط۔۔۔ آدمی نے اُٹھا کر دیکھا تو اس ...
تالاب کے کنارے پڑا ایک گلاب کا پھول اور ایک خط۔۔۔ آدمی نے اُٹھا کر دیکھا تو اس میں کیا لکھا تھا؟ پڑھ کر کوئی بھی آنسو نہ روک پائے کیونکہ۔۔۔

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانوی شہر سوٹن کولڈ فیلڈ میں واقع ایک جھیل کے پاس ایک شخص کو سرخ گلاب کا ایک پھول اور ایک خط ملا۔ جب اس نے خط کھول کر پڑھا تو اس میں ایسی بات لکھی تھی کہ سن کر ہر شخص کی آنکھیں نم ہو جائیں۔ دی انڈیپنڈنٹ کے مطابق یہ خط کسی خاتون کی جانب سے لکھا گیا تھا جو معذور تھی اور اپنے آنجہانی شوہر کے لیے یہ پھول جھیل میں پھینکنا چاہتی تھی لیکن معذوری کے باعث جھیل تک نہیں پہنچ سکتی تھی۔

اس نے خط میں لکھا تھا کہ ”برائے مہربانی کوئی شخص میری خاطر اس پھول کو جھیل میں پھینک سکتا ہے؟ میرے آنجہانی شوہر کی راکھ اس جھیل میں ہے اور میں اپنی وہیل چیئر پر بیٹھ کر جھیل کے پانی تک نہیں پہنچ سکتی اور گیٹ بھی اس وقت بند ہے۔ مجھے آج ہی واپس نارتھ کے لیے نکلنا ہے۔ شکریہ“رپورٹ کے مطابق یہ خط بشپ وسیز گرائمر سکول رونگ کلب کے ایک ٹیچر کو ملا جس نے اس خط کی تصویرسکول کے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر پوسٹ کر دی اور ساتھ لکھا کہ ”یہ خط جھیل کے گیٹ پر ملا۔ اس پر کوئی نام یافون نمبرنہیں لکھا تاہم یہ جس کسی نے بھی وہاں رکھا تھا، وہ مطمئن رہے ، ہم نے اس کا گلاب جھیل کے درمیان پانی میں رکھ دیا ہے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -برطانیہ -