”وزیراعظم عمران خان چاہتے ہیں کہ پنجاب پولیس میں سیاسی مداخلت نہ ہو مگر۔۔۔“ پنجاب میں پی ٹی آئی رہنماﺅں نے عمران خان سے کیا کہا؟ سابق آئی جی پولیس ذوالفقار چیمہ نے تہلکہ خیز انکشاف کر دیا

”وزیراعظم عمران خان چاہتے ہیں کہ پنجاب پولیس میں سیاسی مداخلت نہ ہو مگر۔۔۔“ ...
”وزیراعظم عمران خان چاہتے ہیں کہ پنجاب پولیس میں سیاسی مداخلت نہ ہو مگر۔۔۔“ پنجاب میں پی ٹی آئی رہنماﺅں نے عمران خان سے کیا کہا؟ سابق آئی جی پولیس ذوالفقار چیمہ نے تہلکہ خیز انکشاف کر دیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق آئی جی موٹر وے پولیس ذوالفقار چیمہ کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان چاہتے تھے کہ پولیس میں سیاسی مداخلت ختم ہو مگر پنجاب کے ’جوگادری‘ سیاستدانوں نے ان کے کان میں ڈالا ہے کہ یہاں خیبرپختونخواہ والا کلچر نہیں چل سکتا۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ذوالفقار چیمہ نے کہا کہ عمران خان چاہتے ضرور تھے کہ پولیس میں سیاسی مداخلت نہ ہوا مگر پنجاب کے جوگادری سیاستدانوں نے ان کے کان میں ڈالا ہے کہ یہاں خیبرپختونخواہ والا کلچر نہیں چل سکتا اور انہیں ڈرایا گیا کہ اپوزیشن اتنی مضبوط ہے کہ ہمیں لے دے جائے گی جس کا نتیجہ یہ نکلا کہ ایک طرف وزیراعظم کی خواہش ہے اور دوسری طرف سیاست اور جب انہیں ڈرایا جاتا ہے تو وہ سیاسی فیصلہ کرتے ہیں۔

ذوالفقار چیمہ نے کہا کہ کاش وزیراعظم ایم این ایز اور وزیروں سے کہتے کہ میں نے خیبرپختونخواہ میں بھی پولیس سے سیاسی مداخلت ختم کی اور یہاں بھی کروں گا جبکہ یہاں کے سول سرونٹس او ر پولیس افسروں کے کان اس نغمے کے منتظر ہیں کہ وزیراعلیٰ بھی ان کے کام میں مداخلت نہیں کرے گا۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ کسی میں اتنی ہمت نہیں کہ وہ حکومت کے کام میں رکاوٹ ڈالے اور اگر ایسا ہے تو وزیراعظم بااختیار ہیں، وہ اپنی نئی ٹیم لے آئیں جو وہ لا بھی سکتے ہیں کیونکہ آئین انہیں اس کی اجازت دیتا ہے۔ پی ٹی آئی کی جیت کے بعد میںنے خود جا کر انہیں کہا کہ میں ایک محکمے کا سربراہ ہوں، آپ کی نئی حکومت آئی ہے اور آپ کو پورا اختیار ہے کہ اپنی مرضی کا سربراہ لائیں، یہ کہہ کر میں نے استعفیٰ دیدیا جو کہ انہوں نے خود قبول نہیں کیا۔

ذوالفقار چیمہ نے کہا کہ میں اب بھی یہ کہوں گا کہ اگر سیاسی مداخلت ختم نہ ہوئی اور وزیراعظم نے بھی سول سرونٹس کا حوصلہ بڑھانے کے بجائے سیاست کا خیال رکھا اور ڈرانے والوں کی باتوں میں آ گئے تو اس سے نقصان ہو گا۔

مزید :

قومی -