”وزیر اعظم یرغمال، آئین ٹوٹ چکا“ ن لیگ نے کیپٹن صفدر کے بعد مریم نواز کی بھی گرفتاری کا خدشہ ظاہر کردیا

”وزیر اعظم یرغمال، آئین ٹوٹ چکا“ ن لیگ نے کیپٹن صفدر کے بعد مریم نواز کی بھی ...
”وزیر اعظم یرغمال، آئین ٹوٹ چکا“ ن لیگ نے کیپٹن صفدر کے بعد مریم نواز کی بھی گرفتاری کا خدشہ ظاہر کردیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق گورنر سندھ اورنوازشریف کے ترجمان محمد زبیر نے کہا ہے کہ وزیراعلیٰ سندھ نے بتایا کہ آئی جی کو رات چار بجے اغواکرکے سیکٹر کمانڈر کے دفتر لے جا کر گرفتاری کے لیے دباﺅ ڈالاگیا۔وزیراعظم یرغما ل ہوچکے ان کے پاس کوئی اختیارات نہیں۔ مریم نوازکی نیب کے ذریعے گرفتار ی متوقع ہے۔ 

نجی ٹی وی سماءنیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ن لیگ کے رہنما محمد زبیر نے کہا ہے کہ مریم نوازنے مجھے صبح سواسات بجے میسج کیا کہ کیپٹن صفدر کو گرفتار کر لیا ہے۔ میں نے سعید غنی کو فون کیا تو انہوں نے بتایا کہ عزیز بھٹی تھانے میں ہیں، وہاں پہنچے تو اندر جانے کی اجازت نہیں دی گئی ۔انہوں نے کہا کہ مجھے وزیراعلیٰ سندھ نے بتایا کہ رات کو چاربجے آئی جی سندھ کو اغوا کر کے سیکٹر کمانڈر دفتر لے گئے وہاں ان پر دباﺅ ڈال کر کیپٹن صفدر کی گرفتاری پر پریشرائز کیا گیا ۔ پولیس کے ساتھ رینجرز کے اہلکار ہوٹل گئے اور کمرہ کا دروازہ زور سے مارنے پر کیپٹن صفدر باہر نکلے تو انہوں نے کہا ہم گرفتار کرنے آئے ہیں تو کیپٹن صفدر نے کہا کہ اندر نہ آئیں ، کیونکہ میری اہلیہ بھی میرے ساتھ ہیں ، میں کپڑے تبدیل کر کے باہر آتا ہوں لیکن دروازہ توڑ کر انہیں گرفتار کیا گیا۔ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کی طر ف سے واقعہ پر کوئی ردعمل نہیں دیا گیا یا تو انہیں واقعہ کی حساسیت کا نہیں یا پھر وہ بالکل بے اختیار ہیں۔ وزیراعظم اب چھپ کر بیٹھ گئے ہیں انہیں پوچھنا چاہیے کہ پولیس کے افسران کو کس سے شکایت ہے ،یہ بھی این آراو تو نہیں چاہتے۔

سابق گورنر سندھ محمد زبیر کا کہنا تھا کہ وزیراعظم بے اختیار ہیں، وہ یرغمال بنے ہوئے ہیں، آئین مکمل طور پر ٹوٹ چکا ہے ۔یہ ہمارے جلسوں سے گھبرا گئے ہیں ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ مریم نواز کو نیب کے ذریعے گرفتار کرنے کی خبریں گردش کر رہی ہیں ، ہم عمران خان سے کچھ بھی متوقع کر سکتے ہیں۔ 

مزید :

قومی -