ملک موجودہ چوروں کا متحمل نہیں ہوسکتا، نالائقوں کو گھر جانا ہوگا، مریم اورنگزیب 

ملک موجودہ چوروں کا متحمل نہیں ہوسکتا، نالائقوں کو گھر جانا ہوگا، مریم ...

  

راولپنڈی (این این آئی) پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اور نگزیب نے کہاہے کہ عوام کے پاس چینی، دوائی، آٹا، بچوں کی فیسیں دینے کے پیسے نہیں، ملک موجودہ چوروں کا متحمل نہیں ہوسکتا، نالائقوں کو گھر جانا ہوگا۔ میڈیا سے گفتگو میں مریم اور نگزیب نے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ عوام کے پاس چینی،دوائی، آٹا، بچوں کی فیسیں دینے کے پیسے نہیں چھوڑے،ملک جو ترقی کر رہا تھا اس ملک کی معیشت کا جنازہ نکال دیا گیا،ملک کی سلامتی کو تماشا بنا دیا گیا۔ انہوں نے کہاکہ غریب عوام کو گھرکا کرایہ دینے کے قابل نہیں چھوڑا،ان ناہلوں چوروں کی وجہ سے ہر شعبہ سے تعلق رکھنے والوں کوکہیں کا نہیں چھوڑا، انہوں نے کہاکہ اب ان کی کوئی ضرورت نہیں عوام ہمارے ساتھ ہیں،انکو ووٹ دینے والے بھی اب پریشان اور انھیں بددعائیں دے رہے ہیں، ان چوروں کی وجہ اب عوام اشیاء خوردونوش بھی نہیں خرید سکتی،عوام کو اب سڑکوں پر نکلنا ہوگا،چور حکومت مافیا ہے جسے گھر جانا ہوگا۔

مریم اورنگزیب

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما احسن اقبال نے کہا ہے کہ پورا ملک معاشی و اقتصادی بد حالی کا شکارہے، دسمبر میں ملک کی تاریخ کا بدترین گیس بحران آ رہا ہے،فیصلہ کن تحریک چلا کر حکمرانوں کو گھر بھیجیں گے۔اسلام آباد احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا کہ پورا ملک معاشی و اقتصادی بد حالی کا شکار ہے، ایک ایک کرکے پاکستان کے قومی ادادوں کو غیر فعال کیا گیا، پارلیمنٹ اور سپریم کورٹ کے فیصلے بے توقیر ہو رہے ہیں۔رہنما پاکستان مسلم لیگ(ن) کاکہنا تھا کہ آئی جی، چیف سیکرٹریز، چیئرمین ایف بی آر کو بدلا جا رہا ہے، پاکستان ایٹمی طاقت ہے لیکن دنیا ہنس رہی ہے، آج پی ٹی آئی کے ووٹرز خود رو رہے ہیں، حکومت نے پیٹرول مہنگا کرکے مہنگائی کا ایٹم بم چلایا جبکہ دسمبر میں ملک کی تاریخ کا گیس کا بحران آ رہا ہے۔احسن اقبال کا مزید کہنا تھا کہ ریاست مدینہ کے دعوے دار بتائیں،کیا ریاست مدینہ میں مہنگائی سے عوام کی چیخیں نکلتی ہیں، عمران خان مذہبی کارڈ کھیلتے ہیں، کیا ریاست مدینہ میں غیر ملکی تحفے ہڑپ کئے جا سکتے ہیں؟۔انہوں نے کہا کہ عمران نیازی ریاست مدینہ کے خود ساختہ امیر ہیں، پی ڈی ایم نے فیصلہ کن تحریک چلانے کا فیصلہ کیاہے جبکہ مسلم لیگ ن میں قیادت کی کوئی جنگ نہیں،نواز شریف ہمارے قائد ہیں اور اپوزیشن نے نیب اور الیکشن ریفارمز پر پارلیمنٹ میں مذاکرات کئے۔سابق وزیر داخلہ نے کہا کہ حکومت نے خود ہی تمام عمل کو ویٹو کیا، یہ صرف فاشسٹ ایجنڈا چاہتے ہیں، پی ٹی آئی کو پتہ ہے کہ اصلی ووٹوں سے الیکشن نہیں جیت سکتے اور یہ آئندہ الیکشن کو چرانا چاہتے ہیں۔

احسن اقبال

کراچی (اسٹاف رپورٹر)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ اس وقت ملک کی معاشی صورت حال انتہائی خراب ہے۔حکومت مہنگائی کو کوئی مسئلہ سمجھنے کے لیے تیار ہی نہیں ہے۔عمران خان کی حکومت میں ساڑھے 7 کروڑ شہری خط غربت کے نیچے زندگی گذاررہے ہیں۔ملک میں بلند ترین سطح پر پٹرول فروخت کیا جارہا ہے،ہم حکومت کوپٹرولیم مصنوعات پر اب مزید ایک روپے بھی اضافہ نہیں کرنے دیں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو مسلم لیگ ہاؤس کارساز میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر سندھ کے سینئر نائب صدر علی اکبر گجر،سیکرٹری اطلاعات خواجہ طارق نذیر اور دیگر بھی موجود تھے۔مفتاح اسماعیل نے کہا کہ وفاقی حکومت برآمدات بڑھانے میں مکمل طور پر ناکام ہوئی ہے۔ملکی تاریخ میں سب سے زیادہ درآمدات کی جارہی ہے۔حکومت کو سمجھ ہی نہیں آرہا ہے کہ اس وقت مہنگائی سب سے بڑا مسئلہ ہے۔دنیا کے تمام ممالک کے مقابلے میں پاکستان میں سب سے زیادہ مہنگائی ہوئی ہے۔پاکستان میں تین ماہ میں خوراک کی قیمتوں میں 12فیصد اضافہ ہوا ہے۔مہنگائی گزشتہ سال 17 فیصد زیادہ ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں بلند ترین سطح پر پیٹرول فروخت ہو رہا ہے۔آج پیٹرول کی قیمت 137 روپے لیٹر ہے اور اس میں مزید اضافے کا خدشہ ہے۔ملک کے معاشی حالات انتہائی خراب ہیں اور حکومت مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کرکے عوام کو زندہ درگور کرنا چاہتی ہے۔انہوں نے کہا کہ احتجاج کرنا ہمارا حق ہے۔ہم اس نااہل حکومت کی پالیسیوں اور مہنگائی کے خلاف احتجاج کریں گے۔ہم پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اب ایک روپے کا اضافہ بھی برداشت نہیں کریں گے۔مفتاح اسماعیل نے کہا کہ عمران خان نے جس شعبے میں بھی ہاتھ ڈالا ہے اس کا برا حال ہوا ہے۔بجلی مزید مہنگی ہونے جارہی ہے۔گیس کا بحران آنے والا ہے۔گیس 141فیصد مہنگی کی گئی ہے۔حکومت کی 5 گیس کمپنیاں ہیں۔انہوں نے کہا کہ عمران خان نے ریاست مدینہ کی بڑی بڑی باتیں کیں لیکن صورت حال یہ ہے کہ ان کی حکومت میں ساڑھے 7کروڑ شہری خط غربت سے نیچے زندگی گذارنے پر مجبور ہیں۔ہمارے دور میں یہ تعداد 5کروڑ تھی۔عمران خان حکومت نے ملکی تاریخ کا سب سے زیادہ قرضہ لیا ہے۔یہ ملک کپاس پر چلتا ہے لیکن اس کو بھی مہنگا کردیا گیا ہے۔نجانے کون ارسطو ہے جو ان کو یہ مشورہ دیتا ہے۔ایک سوال کے جواب میں مفتاح اسماعیل نے کہا کہ نواز شریف کے پاکستان آنے سے اگر مہنگائی کم ہوتی ہے تو میں نواز شریف سے کہتا ہوں کہ وہ پاکستان آجائیں۔

مفتاح اسمعیل 

مزید :

صفحہ آخر -