کرونا سے 4ہلاکتیں، ویکسی نیشن مہم تیز کرنے کا فیصلہ، جعل ساز گرفتار 

  کرونا سے 4ہلاکتیں، ویکسی نیشن مہم تیز کرنے کا فیصلہ، جعل ساز گرفتار 

  

  ملتان، ڈیرہ غازیخان (وقانع نگار،سٹی رپورٹر) ٹیچنگ ہسپتال ڈی جی خان کے کرونا وارڈ میں داخل دوروز میں ایک خاتون سمیت چار مریض جاں بحق، (بقیہ نمبر45صفحہ7پر)

16مریض ہسپتال میں داخل،7مریضوں کے ٹیسٹ مثبت، ایک میں کرونا کاخدشہ،2مریضوں کی حالت تشویشناک، تفصیلات کے مطابق ٹیچنگ ہسپتال ڈی جی خان کے فوکل پرسن ڈاکٹر خالد تحسین نے بتایا کہ ٹیچنگ ہسپتال میں 2مریضوں کی حالت انتہائی خطرناک ہے ٹیچنگ ہسپتال کے کرونا وارڈ میں داخل ایک خاتون سلمی بی بی،تین مرد منظور احمد، محمد علی اور تاج محمد جان کی بازی ہار گئے،جبکہ ٹیچنگ ہسپتال کے کرونا وارڈ میں داخل کل 16مریضوں میں سے7 مریضوں میں کرونا کا خدشہ پایا جارہا ہے ایک مریض کا ٹیسٹ مثبت آیاہے جبکہ ہسپتال میں گزشتہ دو روز میں 1014مریضوں کے کرونا سیمپل لئے گئے جن میں 4 مریضوں کارزلٹ مثبت اور 1010 مریضوں کے رزلٹ نیگیٹو آئے فوکل پرسن ڈاکٹر خالد تحسین نے کہا کہ کرونا ایک خطرناک وباء ہے حکومتی ایس او پیز پرعمل کرکے اس سے محفوظ رہاجاسکتا ہے شہری حکومتی ایس اوپیز پر عملدرآمد کویقینی بنائیں خود بھی محفوظ رہیں اور دوسروں کوبھی محفوظ رکھیں۔ڈیرہ غازی خان کے علاقے شادن لنڈ میں بھی کورونا ویکسی نیشن کے جعلی سر  ٹیفکیٹ بنانے والا پکڑا گیا،فوٹو سٹیٹ دکان سربمہر،مقدمہ درج کرکے قانونی کاروائی شروع کردی گئی سی ای او ہیلتھ ڈیرہ غازی خان ڈاکٹر عتیق الرحمن نے بتایا کہ ثاقب جمیل کمیونیکیشن/فوٹو سٹیٹ شادن لنڈ کے مالک ثاقب جمیل پانچ، پانچ سو روپے کے عوض کورونا ویکسی نیشن کے جعلی سرٹیفکیٹس بناکر دے رہا تھا اطلاع پر ڈی ڈی ایچ او ڈاکٹر رابعہ رحمان نے اپنے ڈرائیور کو گاہک بناکر بھیجاپانچ سو روپے فیس کے عوض کورونا ویکسی نیشن کا جعلی سرٹیفکیٹ تیار ہونے کی فون کال ملنے پر اسسٹنٹ کمشنر صدر نبیل احمد میمن اور ڈی ڈی ایچ او موقع پر پہنچے اور جعلساز کو رنگے ہاتھوں پکڑلیاجعلساز نے نیٹ ورک بنا رکھا تھاکسی آپریٹر کی ملی بھگت سے آن لائن انٹری کرانے کے ساتھ ویکسی نیشن کے بغیر سر  ٹیفکیٹ جاری کئے جارہے تھے ڈیٹا انٹری آپریٹر کی نشاندہی اور گینگ کی گرفتاری کیلئے تحقیقات کی جارہی ہیں۔حکومت پنجاب کی ہدایت پر ڈویژنل انتظامیہ نے کورونا ویکسین مہم تیز کرنے کا فیصلہ کرلیا۔اس سلسلے میں کورونا ویکسی نیشن بارے اجلاس منعقد ہوا، جس کی صدارت کرتے ہوئے کمشنر ملتان ڈویژن ڈاکٹر ارشاد احمد نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں موبائل ٹیمیں بھیجی جارہی ہیں۔کورونا ویکسین کی آن لائن سسٹم میں انٹری ہر صورت یقینی بنائی جائے۔کورونا ویکسین مکمل محفوظ ہے،عوام افواہوں پر کان نہ دھریں۔مکمل ویکسی نیشن کے بغیر اس وباسے چھٹکارا پانا نا ممکن ہے۔ اجلاس میں فیلڈ سٹاف کی عالمی ادارہ صحت سے تھرڈ پارٹی مانیٹرنگ پر بھی غور کیا گیا۔علاوہ ازیں انسداد ڈینگی مہم بارے جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کمشنر ڈاکٹر ارشاد نے کہا کہ انسدادِ ڈینگی مہم کو موثر بنایا جائے۔شہری اپنے اردگرد کا ماحول خشک اور صاف رکھیں،موسم کی تبدیلی اور ڈینگی وباکے پیش نظر سوئمنگ پولز بند کردئیے جائیں۔ اجلاس میں ڈپٹی کمشنر ملتان عامر کریم خاں، ڈائریکٹر ہیلتھ، سی او ہیلتھ ملتان،متعلقہ افسران جبکہ ویڈیو لنک پر ڈویژن کے ڈپٹی کمشنرز اورسی اوز ہیلتھ موجود تھے۔نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کوئئ مریض جاں بحق نہیں ہوا، یوں یکم اپریل 2020  سے 20 اکتوبر   2021 کے درمیان کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 927   ہے،جبکہ نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا کہ مریضوں کی تعداد 08ہو گئی ہے جن میں سے 04 مریضوں کا تعلق ملتان سے ہے,جبکہ کورونا کے شبہ میں 48مریض زیر علاج ہیں جن کی رپورٹس کا انتظار  ہے،ادھر رواں سال نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں 8ہزار 185 افراد رپورٹ ہوئے جن میں سے 2 ہزار 927 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے،ادھر کورونا مریضوں کے لئے  مختص  68 وینٹی لیٹرز میں سے 32 وینٹی لیٹر خالی ہیں،   جبکہ کورونا آئی سو لیشن بلاک میں بستروں کی تعداد 195 کر دی گئی  ہے، جن میں سے  83 خالی ہیں،ادھر ترجمان نشتر ہسپتال ڈاکٹر عرفان کے مطابق داخل 112مریضوں میں سے 103 نے موذی وائرس کے خلاف ویکسین نہیں کروا رکھی ہے جبکہ زیر علاج کورونا میں مبتلا 08مریضوں میں سے 08مریضوں نے بھی کورونا ویکسین نہیں لگوا رکھی ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -