پی ڈ ی ایم، پیپلز پارٹی، وکلاء تنظیموں کا مہنگائی کیخلاف احتجاج، (ن) لیگی خواتین کامری روڈ پر دھرنا

پی ڈ ی ایم، پیپلز پارٹی، وکلاء تنظیموں کا مہنگائی کیخلاف احتجاج، (ن) لیگی ...

  

          راولپنڈی،کراچی،حیدرآباد(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوزایجنسیاں)پاکستان مسلم لیگ (ن)،پیپلزپارٹی، اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم سمیت وکلا تنظیموں نے مہنگائی اور بیروز گاری کیخلاف احتجاج کا سلسلہ شروع کر دیا۔تفصیلات کے مطابق پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کی طرف سے اعلان کیا گیا تھا کہ مہنگائی کیخلاف ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالی جائیں گی جس کے بعد گزشتہ روز پاکستان مسلم لیگ ن نے بھی احتجاجی سیاست شروع کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔مہنگائی اور بیروز گاری کے خلاف پاکستان مسلم لیگ ن کا پہلا احتجاجی مظاہرہ راولپنڈی میں ہوا۔ مظاہرہ کی قیادت پاکستان مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب، سابق ایم این اے حنیف عباسی،سردار نسیم اور ملک ابرار کررہے ہیں۔احتجاجی مظاہرے کے دوران مسلم لیگ ن کے کارکنان پولیس کی طرف سے لگائی گئی رکاوٹیں ہٹا کر مری روڈ پہنچ گئے اور مری روڈ کو ٹریفک کیلئے بند کر دیا۔ اس دوران مسلم لیگ ن کے کارکنوں نے حکومت کے خلاف سخت نعرے بازی کی۔اس موقع پر مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم  اورنگزیب نے کہا کہ ملک کی معیشت کا جنازہ نکال دیا گیا ہے، ملک کی سلامتی کو تماشا بنا دیا گیا، حکومت نے عوام کے پاس چینی، دوائی، آٹااور  بچوں کی فیسیں دینے کے پیسے نہیں چھوڑے، یہ ملک ان چوروں کا متحمل نہیں ہوسکتا، ان نالائقوں کو اب گھر جانا ہوگا، انہیں ووٹ دینے والے بھی اب پریشان اور انھیں بددعائیں دے رہے ہیں۔ پیپلز پارٹی کے سیکرٹری اطلاعات فیصل کریم کنڈی  نے کہا ہے کہ مہنگائی اور بیروزگاری کے خلاف پیپلزپارٹی کا ملک بھر میں احتجاج جاری ہے۔ انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ ڈالر کی اڑان اور سلیکٹڈ سرکار کی گراٹ تیز رفتاری سے جاری ہے۔ سیکرٹری اطلاعات کا کہنا ہے کہ مہنگائی اور بیروزگاری کے خلاف پیپلزپارٹی کا ملک بھر میں احتجاج جاری ہے، غیر منتخب مشیر خزانہ واشنگٹن میں آئی ایم ایف سے تباہ کن معاہدے کر رہے ہیں۔ فیصل کریم کنڈی نے کہا کہ عمران خان 200 معیشت کے ماہر کہاں غائب ہیں، حیرت کی بات ہے پی ٹی آئی کا ایک بھی اسمبلی ممبر وزیر خرانہ کے لائق نہیں ہے، عمران خان کی سوچ انڈوں اور کٹوں سے شروع ہوکر بھنگ پر ختم ہوتی ہے۔رآباد میں پریس کلب کے سامنے وکلا کی جانب سے مہنگائی کیخلاف نعرے بازی بھی کی گئی ہے۔ وکلا نے کہا ملک میں مہنگائی اتنی بڑھ گئی ہے کہ عام آدمی کا جینا مشکل ہوچکا ہے، حکومت مہنگائی کو کنٹرول کرنے میں ناکام ہوگئی ہے۔وکلا نے کہا کہ  پٹرول کی قیمت ساری اشیا کی قیمتوں کو بڑھا دیتی ہے لیکن جب پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نیچے آجاتی ہیں جب بھی  چیزوں کی قیمتیں کم نہیں ہوتی ہیں۔ واضح رہے کہ وکلا کی جانب سے یہ مطالبہ کیا گیا ہے کہ حکومت فل فور مہنگائی پر کنٹرول کرے اور عوام کو ریلیف فراہم کرے۔

مہنگائی مخالف مظاہرے

مزید :

صفحہ اول -