"آپ کے ٹرک واہگہ کے راستے بھارت نہیں جاسکتے" پاکستان نے دوست ملک ازبکستان کو واضح پیغام دے دیا

"آپ کے ٹرک واہگہ کے راستے بھارت نہیں جاسکتے" پاکستان نے دوست ملک ازبکستان کو ...

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) سید نوید قمر کی زیر صدارت قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی کا اجلا س ہوا ، اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد نے کہا کہ ازبکستان کو بتادیا کہ ان کے ٹرک واہگہ بارڈر تک آ سکتے ہیں مگر واہگہ کے راستے بھارت نہیں جا سکیں گے ۔

سید نوید قمر کی زیر صدارت قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی کا اجلاس ہوا ، اجلاس میں تجارتی معاملات پر غور کیا گیا ،وزارت تجارت کی جانب سے اجلاس کو بتایا گیا کہ ایران کے ساتھ ٹی آئی آر معاہدے کے تحت تجارت شروع ہو چکی ہے ، آذر بائیجان کے ساتھ روڈ نیٹ ورک ایگریمنٹ نہیں ہے ۔نوید قمر نے استفسار کیا کہ کیا ایران نے پاکستان کے ذریعے بھارت تک رسائی مانگی ہے ، جس پر مشیر تجارت عبدالرزاق داو¿د نے کہا کہ ایران نے پاکستان کے ذریعے بھارت تک رسائی نہیں مانگی ، رزاق داو¿د نے بتایا کہ ترکی کے وزیر کی جانب سے پوچھا گیا کہ افغان حکومت کو تسلیم نہیں کرتے تو تجارت کیسے ہوگی ؟، ہم نے جواب دیا کہ اگر حکومت کو تسلیم نہیں کرتے تو تجارت جاری رہے گی ، ازبکستان کو بتایا ہے کہ ان کے ٹرک واہگہ بارڈر تک آسکتے ہیں مگر واہگہ کے راستے بھارت نہیں جا سکیں گے ۔

عبدالرزاق داو¿د نے کمیٹی کو بتایا کہ ایل این سی کا تجربہ اچھی مثال نہیں ، ملک میں اس وقت گندم ضرورت کے مطابق موجود ہے ، گندم کا 4ملین ٹن سٹاک کیا جا رہا ہے ، ایک ملین ٹن گندم نجی سیکٹر درآمد کر رہا ہے ، ایک ملین گورنمنٹ ٹو گورنمنٹ بنیاد پر درآمد کی جا رہی ہے جبکہ دو ملین ٹی سی پی درآمد کر رہا ہے ۔ ٹی سی پی نے ایک ملین ٹن گندم درآمد کرنے کا آرڈر دے دیا ہے ، درآمدی گندم آنا شروع ہو چکی ہے ۔

وزارت تجارت کی جانب سے بتایا گیا کہ سٹیٹ بینک کےساتھ بات چیت چل رہی ہے ، ایف پی سی سی آئی کے ساتھ مذاکرا ت کر رہے ہیں ۔

مزید :

قومی -الیکشن -قومی اسمبلی -بزنس -