پاکستان سمیت دنیا بھر میں احتجاج جاری،اسلام آباد میں جلاﺅ گھیراﺅ جھڑپیں،فوج طلب:

پاکستان سمیت دنیا بھر میں احتجاج جاری،اسلام آباد میں جلاﺅ گھیراﺅ ...

اسلام آباد ، کراچی، لاہور، پشاور، کوئٹہ، مظفر آباد ، واشنگٹن (این این آئی، آئی این پی، سٹاف رپورٹر، نمائندگان) پیغمبر اسلام بارے امریکہ میں بننے والی گستاخانہ فلم کےخلاف مذہبی جماعتوں ¾ طلباء¾ تاجروں ¾ ہر مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے شہریوں کی جانب سے وفاقی دارالحکومت اسلام آباداور آزاد کشمیر سمیت ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے کئے گئے ¾ اسلام آباد میں مظاہرین اور پولیس کے درمیان جھڑپوں اور پتھراﺅ کے نتیجے میں ایس ایچ او ¾ پولیس اہلکاروں سمیت درجنوں افراد زخمی ہوگئے ¾ مشتعل مظاہرین نے چار پولیس چوکیوں ¾ گاڑیوں اور بینکرز کو آگ لگاتے ہوئے فیڈرل لاجز میں داخل ہوئے جس پر ریڈ زون اور ڈپلو میٹک انکلیوکی حفاظت کےلئے فوج طلب کرلی گئی ¾ متعدد شہروں میں معلون پادری اور امریکہ کے پرچم نذر آتش کئے گئے جبکہ امریکہ نے اپنے شہریوں کوپاکستان کے غیرضروری سفرسے گریز کی ہدایت کی ہے تفصیلات کے مطابق جمعرات کو گستاخانہ فلم کے خلاف تاجر وں ¾ طلباء¾ مذہبی جماعتوں اور ہر مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے شہریوں کی جانب سے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں بھی احتجاج کیا گیا راولپنڈی اور اسلام آباد کے مظاہرین نے احتجاج کے دور ان ریڈو زون میں داخل ہونے کی کوشش کی اس دور ان اسلام آباد پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپیں ہوئیں پولیس نے آنسو گیس کی شیلنگ کی جبکہ مظاہرین کی جانب سے پولیس اہلکاروں پر شدید پتھراﺅ کیا گیا جس کے نتیجے میں ایس ایچ او پولیس اہلکاروں سمیت درجنوں افراد زخمی ہوگئے اس دور ان مظاہرین شدید مشتعل ہوئے اور پولیس کی چوکیوں ¾ بینکرز اور گاڑیوں کو آگ لگادی پولیس اور مظاہرین کے درمیان کئی گھنٹے جھڑپیں جاری رہیں مقامی ہوٹل کے سامنے والا چوک میدان جنگ بنا رہا پولیس کی جانب سے مظاہرین پر لاٹھی چارج، آنسو گیس کی شیلنگ اور ہوائی فائرنگ کی گئی احتجاج کرنے والوں نے پولیس، فائیو اسٹار ہوٹل اور ان کی گاڑیوں پر پتھراﺅ کیا جس سے پولیس موبائل کے شیشے ٹوٹ گئے،صورت حال کے پیش نظر امریکی سفارت خانے کے اطراف پولیس اور رینجرز کی بھاری تعداد تعینات کردی گئی۔ سفارتی اہلکاروں کو باہر نہ نکلنے کی ہدایت کرتے ہوئے سفارت خانے کی طرف جانے والے تمام راستوں کو بھی سیل کیا گیا ۔احتجاج کے دور ان ضلعی انتظامیہ نے مشتعل طلبا سے مذاکرات کی کوشش کی تاہم طلبا نے مذاکرات سے انکارکردیا جس کے حالات کشیدہ ہونے پر ریڈ زون اور ڈپلومیٹک انکلیو کی حفاظت کیلئے پاک فوج کو طلب کرلیا گیا تاہم شام کے بعد مظاہرین آہستہ آہستہ منتشر ہونا شروع ہوئے اور حالات معمول پر آنا شروع ہوئے ۔ راولپنڈی میں بھی گستاخانہ امریکی فلم کے خلاف طلبہ سمیت مختلف طبقات فکر نے مظاہرے کئے۔ مظاہرین نے کئی مقامات پر ٹائر جلائے جس کے باعث مختلف سڑکیں ٹریفک کیلئے بند ہوگئیں۔ احتجاج کرنے والا ایک طالب علم پولیس کی گاڑی کے ساتھ ٹکرانے سے زخمی ہوا مظاہرین نے پولیس سے حفاظتی جیکٹ اور ہیلمٹ بھی چھین لیے جس پولیس نے مظاہرہ کرنے والے پانچ طالب علموں کو حراست میں لے لیا ادھر گستاخانہ فلم کے خلاف کراچی میں داﺅد انجینئرنگ کالج کے طلبہ کی جانب سے ایم اے جناح روڈ پر احتجاجی مظاہرہ کیا گیاجس کے سبب ٹریفک کی روانی بھی متاثر ہوئی۔ ایم اے جناح روڈ پر نمائش چورنگی کے مقام پر داود انجینئرنگ کالج کے طالبعلموں کی جانب سے گستاخانہ فلم کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا،احتجاجی مظاہرے میں شریک طلبہ وطالبات نے بینرز اور پلے کارڈ بھی اٹھا رکھے تھے، مظاہرین کا کہنا تھا کہ ناموس رسالتﷺ کے قانون کو سخت کیا جائے اور اس میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کی جائے۔ مظاہرین کاکہنا تھا کہ نبی کریم ﷺکی شان میں گستاخی کھلی دہشت گردی ہے مظاہرین کی جانب سے احتجاج مظاہرے کے باعث ایم اے جناح روڈ ٹریفک کے لئے بند ہوگئی،اور اطراف کی سٹرکوں پر شدید ٹریفک جام ہوگیا۔ سنی تحریک نے تھر بازار سے پریس کلب تک ریلی نکالی جہاں براک اوباما کا پتلا اور امریکی پرچم نذر آتش کیا گیا ۔لاڑکانہ میں جے یو آئی کے تحت درگاہ قائم شاہ بخاری سے جناح باغ چوک تک ریلی نکالی۔ نوابشاہ ، میرپور خاص، ، سانگھڑ، ، مٹیاری، بدین، سمیت سندھ کے دیگر اضلاع میں بھی مظاہرے اور ریلیاں نکال کرعوام نے اپنے غم و غصے کا اظہار کیا ۔ دریںاثناءپنجاب میں گستاخانہ فلم کے خلاف جمعرات کو دن بھر احتجاج جاری رہا ، مختلف شہروں میں تاجروں نے شٹر ڈاﺅن ہڑتال کی گئی طلبا و طالبات سمیت مختلف تنظیمیں ریلیاں نکالی گئیں۔ طلبا و طالبات، تاجر، وکلا ، ڈاکٹرز اور سرکاری ملازمین توہین رسالت پر مبنی امریکی فلم کے خلاف مظاہرے کئے اور ریلیاں نکالیں۔ سیالکوٹ میں پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کی جانب سے احتجاجی ریلی نکالی گئی جو کمشنر روڈ پر اختتام پذیر ہوئی۔ ملتان، گوجرانوالہ، فیصل آباد ، سیالکوٹ اور شیخوپورہ سمیت دیگر شہروں میں بھی احتجاج کیا گیا۔ چشتیاں میں گستاخانہ فلم کے خلاف ہڑتال کے دوران شہرکی تمام مارکیٹیں بندرہیں۔ مظفرگڑھ سپورٹس فیڈریشن نے بھی احتجاج کیا۔ امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق امریکہ نے اپنے شہریوں کوپاکستان کاغیرضروری سفرکرنے سے منع کردیا ہے،امریکہ نے اپنے شہریوں کو ہدایت جاری کی ہے کہ وہ عوامی مقامات،مظاہروں یابڑے اجتماعات سے دوررہیں۔ لاہور میں گستاخانہ امریکی فلم کے خلاف ٹریفک وارڈن بھی احتجاج میں شامل ہو گئے اور بازوﺅں پر سیاہ پٹیاں باندھ کر ڈیوٹی انجام دینے لگے۔ ٹریفک وارڈنز کا کہنا ہے کہ عوام بھی احتجاج کے لئے پرامن راستے اپنا کر نجی و سرکاری املاک کے نقصان سے اجتناب کریں۔ بلوچستان کے ضلع نوشکی میں توہین آمیز فلم کے خلاف جمعیت علمائے اسلام کے زیر اہتمام احتجاجی ریلی نکالی گئی اور اس فلم کو امت مسلمہ کے خلاف ایک گہری سازش قرار دیا گیا۔ پنجاب حکومت کی طرف سے آج کے احتجاج کے سلسلہ میں سیکیورٹی انتظامات کی ہدایات پر پولیس سمیت دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے حکام کے اجلاس میں حکمت عملی طے کی گئی۔ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کے لئے پولیس کی بھاری نفری سرکاری و غیر سرکاری عمارتوں کے باہر تعینات ہو گی جبکہ امریکی قونصل خانے کی حفاظت کے لئے پولیس کے ساتھ کمانڈوز بھی تعینات ہوں گے۔ وزیر قانون رانا ثناءاللہ خان اور آئی جی پولیس حفاظتی انتظامات کے سلسلہ میں مانیٹرنگ کریں گے اور حکام سے رابطے میں رہیں گے۔ پشاور کے شہریوں کا امریکی فلم کے خلاف غم و غصہ برقرار، سیاسی جماعتوں ، طلباءتنظموں ، ٹرانسپورٹرز ، اساتذہ ، تاجروں اور ہر مکتب فکر کے لوگوں کا حتجاج جاری ۔ دن بھر مظاہروں کی وجہ سے ٹریفک پورا دن جام رہی ۔ گزشتہ روز ، پاکستان پیپلز پارٹی ، آئی جے ٹی خیبر پختونخواء، پیپلز لیبر بیورو ریلوے لیبر ونگ ، آل ٹیچرز ایسو سی ایشن پشاور، سٹی یونیورسٹی پشاور، خےبرگرلز مےڈےکل کالج حےات آباد پشاور کے ٹےچرز اےسوسی اےشن اور آل اےمپلائز اےسوسی اےشن، پاکستان پیپلز پارٹی (شےرپاﺅ)حےات آباد اور ےوتھ ونگ ضلع پشاور ،متحدہ طلباءمحاذ، مسلم لیگ ( ن) اقلیتی ونگ،صرافہ ایسوسی ایشن اور وحدت اساتذہ نے احتجاج جلوس اور ریلیاںنکالیں جن کی قیادت ، پاکستان پیلز پارٹی کے رہنماءایوب شاہ ، شوکت علی ذوالفقار افغانی ، طہٰ محمد، اشرف خان ، عامی ہاشمی ، ناصر شکوتر، اشرف خان ،اعجاز خان ، عطاءالرحمان ، کامران خان بشےرخان اورکزئی اورعامر خان ،پروفےسر ڈاکٹر عابد حسےن ،وائس پر نسپل اےسوسی اےٹ پروفےسر ڈاکٹر ثمےنہ زاہد ،ڈاکٹرز اور دیگر کر رہے تھے ۔ پاکستان پیپلز پشاور ڈویژن کے زیر اہتمام ہشتنگری سے ریلی نعالی گئی جس میں سینکڑوں افراد نے شرکت کی ریلی جی روڈ سے ہوتی اشرف روڈ پہنچی جہاں پر جیالوں نے جی ٹی روڈ کو ہرقسم کی ٹریفک کے لئے بند کردیا اس موقع پر مظاہرین نے مخلف کتبے اور بینر اٹھارکھے تھے جن پر گستاخ رسول اور امریکہ و یہودی لابی کے خلاف نعرے درج تھے مظاہرین نے امریکہ اور اسکے حواریوں کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ یونائیٹڈ ورکرز یونین رجسٹرڈ سٹی ڈسٹرکٹ اینڈ ٹاﺅنز پشاور سمیت چاروں ٹاونز کے مسلم وکرسچن ملازمین کی ایک مشترکہ ریلی نکالی گئی ،میاں منڈی بازارمیں علماءاور عوام کاجبکہ غلنئی میںالفاروقی اسلامی پبلک سکول کے طلباءاور اساتذہ کاتوہین امیز فلم کے خلاف مہمند پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ۔ چارسدہ مےں تاجروں نے شٹر ڈاﺅن ہڑتال کا اعلان کر دےا ۔ توہین آمیز فلم کے کرداروں کو سر عام پھانسی پر لٹکا کر نشان عبرت بنایا جائے۔گزشتہ روز انصاف سٹو ڈنٹس فےڈریشن کے زےر اہتما م لا ہو ر بھر مےںمختلف مقا ما ت پر مظا ہر ے کےے گئے ۔ جس کی قےا دت صدر انصاف سٹو ڈنٹس فےڈریشن لاہور گلرےز اقبال نے کی ۔ جس مےں پنجا ب کا لج ، ےو نےو رسٹی آف اےجو کےشن لاہور ، شاہدرہ ڈگر ی کالج مےں مظاہر ے کےے گے ۔اس کے علا وہ انصاف سٹوڈ نٹس فےڈرےشن گزلز ونگ نے پرےس کلب کے با ہر مظا ہر ہ کےا ۔ اس دوران امرےکی جھنڈ ے اور فلم ڈائر ےکٹر کے پتلے بھی نظر ِ آتش کےے گئے۔ علاوہ ازیں پاکستان تحرےک انصاف لاہور کے رہنماﺅں کی قےادت مےں آج امرےکی گستاخانہ فلم کے خلاف چےرنگ کراس سے نکالے جانے والی رےلی مےں شرکت کے لئے جلوس کوٹ لکھپت سے شبےر سےا ل، بےدےاں روڈ سے ملک نواز اعوان، صدر کےنٹ سے ڈاکٹر فاروق طاہر چشتی، اندورن لاہور سے ملک زمان نصےب ،شاہدرہ سے ےاسر گےلانی،سبزہ زار سے شےخ امتےاز،اچھرہ سے اکرم عثمان ،شمالی لاہور سے ارشد خان ،شوکت شاہ ، عاطف چودھری، فتح گڑھ سے جمشےد اقبال چےمہ،واہگہ سے ضمےر ڈےال ،گلبرگ سے ڈاکٹر مراد راس،نشتر ٹاﺅن سے علی امتےاز وڑائچ،اقبال ٹاﺅن سے مےاں محمود الرشےد، شادی وال سے ظہےر عباس کھو کھر، حاجی کرامت کھو کھر، سرفراز کھو کھر، ہنجر وال سے طاہر اشرف بارا،غازی آباد سے افتخار شاہ،نعےم خان،چوبرجی سے عقےل احمد،نادرآباد سے وقار خان،آئی اےس اےف کے صدر گلرےز اقبال،ڈےفنس سے آصف بشےر خواتےن ممبران عالےہ حمزہ ،رخسانہ نوےد ، سعےدےہ سےف ،ام البنےن،ثوبےہ کمال،سنت نگر سے جاوےد اکرم ٹونی،نوےد کمال بھٹی،بادامی باغ سے فاروق خان،داتا ٹاﺅن سے اصغر گجر،ملک نسےم اکبر،سمےت دےگراپنے اپنے علاقوں مےں سے پارٹی رہنماﺅں کی قےادت مےں کارکنان ہزاروں کی تعداد مےں شرکت کرےں گے ۔ صنعا، کابل، جکارتہ، واشنگٹن (آئی این پی، این این آئی ) گستاخانہ فلم اور فرانسیسی ہفت روزہ کے رحمت العالمین حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی شان میں گستاخانہ خاکے شائع کرنے کے خلاف مسلم ممالک میں احتجاج کا سلسلہ جاری، مظاہرین نے صنعا میں فرانسیسی سفارت خانے کی جانب مارچ کیا اور فرانسیسی حکومت کے خلاف نعرے لگائے، یمنی حکومت کی جانب سے فرانسیسی سفارت خانے پر اضافی نفری تعینات کرکے سیکیورٹی سخت کر دی گئی، جکارتہ میں بھی گستاخ فلم کے خلاف مظاہرے کئے گئے،جلال آباد میں گستاخ فلم کے خلاف مظاہرہ کیا گیا جس میں ہزاروں طلبہ نے شرکت کی۔ گزشتہ روز عالمی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق گستاخانہ فلم اور فرانسیسی ہفت روزہ کے رحمت العالمین حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی شان میں گستاخانہ خاکے شائع کرنے کے خلاف مسلم ممالک میں احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔دنیا بھر میں اب تک گستاخ فلم کے خلاف مظاہرہ کرتے ہوئے40سے زائد مسلمان شہید ہوچکے ہیں۔ مظاہرین نے صنعا میں واقع فرانسیسی سفارت خانے کی جانب مارچ کیا اور فرانسیسی حکومت کے خلاف نعرے لگائے۔ اس موقع پر یمنی حکومت کی جانب سے فرانسیسی سفارت خانے پر اضافی نفری تعینات کرکے سیکیورٹی کو سخت کردی گئی ہے۔ اندونیشا کے درالحکومت جکارتہ میں بھی گستاخ فلم کے خلاف مظاہرے کیے گئے۔ مظاہرین نے جکارتہ میں امریکی سفارت خانے جانے کی کوشش کی جنہیں سیکیورٹی اہلکاروں نے روک دیا۔ دوسری طرف افغانستان کے صوبے جلال آباد میں گستاخ فلم کے خلاف مظاہرہ کیا گیا جس میں ہزاروں طلبہ نے شرکت کی۔ مظاہرین نے کابل جانے والی مرکزی شاہراہ بلاک کردی۔ انہوں نے گستاخانہ فلم کے مرکزی کرداروں کو سزائے موت دینے کا مطالبہ کیا۔ ادھر واشنگٹن میں انتخابی مہم کے حوالے سے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے امریکی صدر باراک اوباما نے کہا ہے کہ اسلام مخالف فلم سے امریکی حکومت کا کوئی تعلق نہیں۔ فلم بنانے والا تاریک کردار کا مالک ہے۔ لیبیا میں امریکی سفیر کی ہلاکت متنازع فلم کے باعث ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ ایک شخص کا انفرادی اقدام پورے امریکی معاشرے کی سوچ کی عکاسی نہیں کرتا۔

مزید : صفحہ اول