ہماری قیادت کی برداشت اورمصلحت پسندی کوکمزوری نہ سمجھاجائے،چودھری سلیم

ہماری قیادت کی برداشت اورمصلحت پسندی کوکمزوری نہ سمجھاجائے،چودھری سلیم

  

لاہور ( پ ر) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ممتاز رہنما ءچودھری سلیم علی نے کہا ہے کہ ہماری قیادت کی برداشت اورمصلحت پسندی کوکمزوری نہ سمجھاجائے ۔ دھرنے والی پارٹیوں کواپناموقف پیش کرنے کی بہت مہلت دی ،عمران خان اورڈاکٹرطاہرالقادری نے اپنے دھرنے میں من گھڑت باتیں دہرانے کے سواکچھ نہیں کیا دوسروں کی پگڑیاں اچھالنا سیاست نہیں عداوت ہے عمران خان اورڈاکٹرطاہرالقادری سیاسی آداب اوراخلاقیات سے نابلد ہیں ۔اپنے ایک بیان میں چودھری سلیم علی نے مزید کہا کہ عمران خان اب دھاندلی دھاندلی کی گردان اورمعاملہ عدلیہ پر چھوڑدیں

پارلیمنٹ اورعدلیہ سمیت کسی پراعتماد نہیں ،وہ دھونس اوردباﺅسے اپنے ناجائزمطالبات منوانے کاخیال دل سے نکال دیں۔انہوں نے کہا کہ عمران خان اورڈاکٹرطاہرالقادری کوکس نے وزیراعظم میاں نوازشریف سے استعفیٰ طلب کرنے کااختیار اورمینڈیٹ دیا ہے ۔ایک طرف پوری قوم اپنے منتخب وزیراعظم میاں نوازشریف کی پشت پرکھڑی ہے جبکہ دوسری طرف چند گمراہ لوگ ہیں لہٰذاءان کی آمرانہ سوچ تسلیم نہیں کی جائے گی ۔عوام کی واضح اکثریت نے میاں نوازشریف کووزیراعظم منتخب کرتے ہوئے پانچ سال تک حکومت کرنے کامینڈیٹ دیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ابھی حکومت کوبنے ڈیڑھ سال نہیں ہوا لیکن تانگہ پارٹیاں ہماری قیادت سے پورے پانچ سال کاحساب مانگ رہی ہیں۔عمران خان نہ خودکچھ کرتے ہیں اورنہدوسروں کوکرنے دیتے ہیں ،موصوف نے خیبرپختونخوا کے وزیراعلیٰ پرویز خٹک کوبھی ایک ماہ سے زبردستی دھرنے میں بٹھایا ہوا ہے جبکہ خیبرپختونخوا کے عوام نادان کپتان کی جان کورورہے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -