سیلاب زدہ علاقے میں نقصان کا سروے جلد مکمل کیا جائے،کابینہ کمیٹی

سیلاب زدہ علاقے میں نقصان کا سروے جلد مکمل کیا جائے،کابینہ کمیٹی

  

لاہور(پ ر) وزیرتحفظ ماحولیات پنجاب کرنل (ر) شجاع خانزادہ نے کیبنٹ کمیٹی برائے فلڈ ریلیف پنجاب کے اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کی جس میں وزیرخوراک بلال یٰسین بھی موجود تھے۔کیبنٹ کمیٹی برائے فلڈ ریلیف نے پنجاب میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کے متعلق موجودہ صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا۔ کابینہ کمیٹی برائے فلڈ کو آگاہ کیا گیا کہ پنجاب حکومت کے زیرانتظام سیلاب متاثرین کی امداد اور بحالی کا آپریشن بڑی تیزی سے جاری ہے جبکہ قبل ازیں ریسکیو اور ریلیف کارروائیوں کے مرحلے میں بروقت اور موثر اقدامات کی وجہ سے ہزاروں قیمتی انسانی جانوں کو بھی بچایا گیا ہے۔کمیٹی کو آگاہ کیا گیا کہ سیلاب سے متاثر ہونے والے تمام اضلاع کو آفت زدہ قرار دے دیا گیا ہے جبکہ متاثرہ خاندانوں کو جانی ومالی نقصانات کا معاوضہ بہت جلد ادا کر دیا جائے گا۔ کابینہ کمیٹی نے تمام ڈی سی اوز کو ہدایت کی کہ لوگوں کے گھروں‘ فصلوں اور املاک کو پہنچنے والے نقصانات کا مستند اور شفاف بنیادوں پر جامع سروے جلد سے جلد مکمل کیا جائے تاکہ پوسٹ فلڈ صورتحال سے موثر طریقے سے نپٹا جا سکے۔ صوبائی وزیر نے بعد ازاں سیالکوٹ‘ گجرات‘ جھنگ اور بہاولپور کے اضلاع کے ڈی سی اوز کے ساتھ ویڈیولنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے ہدایت کی کہ وہ سیلاب متاثرین کی امداد و بحالی کے لئے کئے جانے والے پوسٹ فلڈ اقدامات اٹھانے میں کوئی کسر نہ اٹھا رکھیں۔ بلال یٰسین نے کہا کہ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف کے عزم کے مطابق متاثرین سیلاب کی مکمل بحالی تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ نشیبی علاقوں میں پانی کی نکاسی کا عمل تیزی سے جاری ہے اور متاثرین کی گھروں کو واپسی شروع ہو چکی ہے۔ وزیرخوراک نے بتایا کہ 303 ریلیف کیمپوں میں مقیم متاثرین کو صبح‘ دوپہر‘ شام کھانا فراہم کیا جا رہا ہے اور وزیراعلیٰ کی ہدایت پر روٹی فراہم کرنے کے لئے مکینیکل تندور نصب کئے جا چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ متاثرین سیلاب کو کھانے میں چکن وغیرہ بھی فراہم کیا جا رہا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -