کسٹم حکام سے تنازع، پی آئی اے عملے نے کام چھوڑ دیا

کسٹم حکام سے تنازع، پی آئی اے عملے نے کام چھوڑ دیا
کسٹم حکام سے تنازع، پی آئی اے عملے نے کام چھوڑ دیا

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) کسٹم حکام سے تنازع کے بعد پی آئی اے کے عملے نے کام چھوڑ دیاہے اور مانچسٹر جانیوالی پرواز کا عملہ کاک پٹ سے نیچے اُترآیاتاہم بعدازاں مبینہ سملنگ کے معاملات قانون کے مطابق حل کرنے پر اتفاق کے بعد عملے نے رضامندی ظاہرکردی۔تفصیلات کے مطابق لندن سے لاہور پہنچنے والی پرواز کے عملے سے سمگل کیے گئے موبائل فونز، الیکٹرانک مصنوعات اورغیرملکی کرنسی برآمد ہونے کے بعد پائلٹ سے پوچھ گچھ پر پی آئی اے کے عملے نے کام چھوڑ دیا اور مانچسٹر جانیوالی پرواز پی کے 709کے کیپٹن قدوائی فلائیٹ سے انکار کرتے ہوئے کاک پٹ سے نیچے اُترآئے ۔ ترجمان سول ایوی ایشن اتھارٹی نے کہاکہ پرواز اپنے وقت پر روانہ ہوگی ، طیارے کی چیکنگ کی جارہی ہے جبکہ پرواز 2:05منٹ پر شیڈول تھی لیکن مقررہ وقت سے تھوڑی ہی دیر پہلے عملے نے پرواز اوپریٹ کرنے سے انکار کردیا۔ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق ملازمین کی سی بی اے یونین اور ایئرلیگ نے کسٹم حکام سے ملاقات کی اور مبینہ سمگلنگ کا معاملہ ”قانون“ کے مطابق حل کرنے کے اتفاق کے بعد پرواز روانہ ہوگئی ہے ۔ 

مزید :

قومی -