دنیا کی تاریخ کے انوکھے لیکن خوفناک مظاہرے

دنیا کی تاریخ کے انوکھے لیکن خوفناک مظاہرے
دنیا کی تاریخ کے انوکھے لیکن خوفناک مظاہرے

  

واشنگٹن (نیوز ڈیسک) پاکستان مین آج کل احتجاج اور دھرنوں کا دور دورہ ہے، یہ احتجاج کن نتائج کے حامل ہوں گے، یہ کہنا تو ابھی قبل از وقت ہوگا لیکن دنیا میں ایسے احتجاج بھی ہوچکے ہیں جنہوں نے اپنی انفرادیت اور شدت کی وجہ سے گہرے اثرات چھوڑے، ماضی کے یہ یادگار احتجاج درج ذیل ہیں:

-1 کینٹ سٹیٹ کی ہلاکت

امریکہ کی کینٹ سٹیٹ یونیورسٹی میں طلباءنے ویت نام کی جنگ کے خلاف احتجاج کیا جس پر سکیورٹی ادارے نیشنل گارڈ کو بلوالیا گیا۔ نیشنل گارڈ نے محض 13 سیکنڈ 67 گولیاں چلائیں جن سے متعدد ہلاکتیں ہوئیں۔ اس واقعے کا اتنا گہرا اثر ہوا کہ اس کے بعد سکیورٹی اداروں نے مظاہرین کو کنٹرول کرنے کیلئے اصلی گولیوں کا استعمال ترک کردیا۔

-2 جانوروں پر تجربات کے خلاف احتجاج

قدرتی میک اپ بنانے والی کمپنی لش نے 2012ءمیں میک اپ کی صنعت میں جانوروں کو تجربات کیلئے استعمال کرنے کے خلاف احتجاج کیا۔ اس مقصد کیلئے 24 سالہ فنکارہ جیکولین کی خدمات لی گئیں اور اس پر ویسے ہی تجربات فلمائے گئے جیسے کہ جانوروں پرکئے جاتے ہیں۔ جیکولین کی آنکھوں میں ادویات ڈالنے کے علاوہ، بجلی کے جھٹکے لگانے اور بال مونڈنے جیسے مظالم کو بھی فنکارانہ انداز میں پیش کیا گیا۔

-3 بدھ راہب کا حتجاج

بدھ راہب تھیچ کوانگ نے 1963ءمیں ویت نامی حکومت کے مظالم کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے اپنے آپ کو پٹرول چھڑک کر آگ لگالی۔ اس احتجاج کے بعد ایک سلسلہ چل نکلا اور چینی حکومت کے تبت پر مبینہ قبضے کے خلاف 2009ءتک 125 بدھ مت پیروکاروں نے آگ لگا کر خودکشی کی۔

-4 فیمن کا احتجاج

فیمن (FEMEN) ایک یوکریی ادارہ ہے جو خواتین کے حقوق کے لئے کام کرتا ہے۔ 2012ءمیں انہوں نے ترکی میں خواتین پر تیزاب پھینکنے اور گھریلو تشدد کے خلاف احتجاج کیا جس میں نیم برہنہ ماڈلز نے جسم پر میک اپ سے جلنے اور زخموں کے نشان بنارکھے تھے۔ پولیس نے بالآخر ان احتجاجی ماڈل کو گرفتار کرلیا۔

فیشن وکٹمز

بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ کسی کپڑے کی فیکٹری رانا بلڈنگ کے منہدم ہونے سے 1129 افراد ہلاک اور 2500 سے زائد زخمی ہوئے۔ ہسپانوی فنکارہ پولینڈا نے اس اندوہناک حادثے اور غریب ملازموں کے بغیر سہولتوں اور ناقص عمارتوں والی فیکٹریوں میں استحصال کو اجاگر کرنے کیلئے ماڈلز کو اینٹ پتھر اور ٹوٹے پھوٹے سامان اور کچرے کے ملبے تلے دبا دکھایا۔ اس احتجاج نے دنیا بھر میں توجہ حاصل کی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -