مدارس کیخلاف حکومت اقدامات سے باز رہے، معراج الہدی

مدارس کیخلاف حکومت اقدامات سے باز رہے، معراج الہدی

کراچی (اسٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی سندھ ڈاکٹر معراج الہدی صدیقی نے کہاکہ پشاورکے حالیہ واقعے سمیت ہشتگردی کی تمام وارداتوں میں ملک دشمن ریا ستیں ملوث ہیں۔ تمام مکاتب فکر کے علماء و مشائخ اسلامی ریاست کی سالمیت کیلئے مسلکی اختلافات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے اتحاد امت کا مظاہرہ کریں۔ دینی مدارس کے طلباء اندھیرے میں روشنی کی کرن ہیں انشاء اللہ تعالی منبرو محراب خوشحال واسلامی پاکستان کی بنیاد بنے گا۔ قوم دینی قوتوں کا ساتھ دے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعیت طلبہ عربیہ سند ھ کے تحت قباء آڈیٹو ریم میں منعقدہ ذ مہ داران کی دو روزہ تربیت گاہ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر نائب امیرجماعت اسلامی سندھ محمد حسین مختی، منتظم عربیہ سندھ حافظ عبدلواسع قلندرانی، سابق منتظم عربیہ پاکستان کا شف شیخ، امین صوبہ جلال الدین منصوری، مولانا خالد مسعود، شاھد شیخ اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ڈاکٹر معراج الہدی نے مزید کہا کہ دینی مدارس کے خلاف حالیہ حکومتی اقدامات مغرب کی خوشنودی کیلیے ہیں جو قابل مذمت ہیں۔دینی قوتیں دہشت گردی کے خلاف متحد ہیں اوربد امنی کے خاتمے کیلئے تمام جائزحکومتی شرائط ماننے کیلئے تیار ہیں۔محمد حسین محنتی نے کہا کہ موجودہ دور میں امت مسلمہ کو چیلنجز کا مقابلہ کرنے کیلئے اتحاد کی اشد ضرورت ہے۔ حافظ عبدلواسع قلندرانی نے اسلامی وخوشخال پاکستان کے لئے یکم جنوری سے ۵۱فروری تک جمعیت طلبہ عربیہ کے زیر اہتمام ملک بھر میں نفاذاسلام مہم چلانے کا اعلان کیااور کہا یہ مہم معاشرے کی اصلاح و ملک وقوم کی ترقی و خوشحال کا پیش خیمہ ثابت ہوگی ۔مولاناکاشف شیخ نے کہا جمعیت طلبہ عربیہ امن کی پیامبرہے اوراس کے کارکنان پاکستان کا ہراول دستہ ہے۔ مولانا خالد مسعود نے کہا امت محمدی ظلم و بر بر یت کا شکار ہے۔اس سے چھٹکارے کے لئے مسلمان اسلام دشمن مغرب کے خلاف مزا حمت کے لئے تیار جائیں۔مولانا عرفان عادل نے کہا جمعیت عربیہ کا منشور رضا الہی کی خوشنودی کے لئے ہے اور اس کے کار کنان و قیا دت ظلم کے خلاف میدان عمل میں موجود ہے۔ شاہد شیخ نے کہا دشمن ممالک میڈیا وار کے ذریعے پاکستان کو زیر کرنے کی کو ششوں میں مصروف ہیں ۔ نظریاتی سر حدوں کے حفاظت کے لئے مغرب و پڑوسی ملک کی ثقافتی یلغار کو روکنا وقت کی اولین ضرورت ہے۔ جلال الدین منصوری نے کہا برادر تنظیمات کے تعلق کو مضبوط کرنے کی دینی قیادت اپنا بھرپور کردار ادا کرے۔

مزید : صفحہ آخر