سپریم کورٹ :دوہرے قتل کے ملزموں کی درخواست ضمانت خارج ،ملزم ٹہلتے ٹہلتے فرار

سپریم کورٹ :دوہرے قتل کے ملزموں کی درخواست ضمانت خارج ،ملزم ٹہلتے ٹہلتے فرار
سپریم کورٹ :دوہرے قتل کے ملزموں کی درخواست ضمانت خارج ،ملزم ٹہلتے ٹہلتے فرار

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی)سپریم کورٹ نے دوہرے قتل کے مقدمہ کے دو ملزموںکی ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواستیں مسترد کردیں تاہم متعلقہ پولیس اور سکیورٹی اہلکار وں کی ان کی گرفتاری میں عدم دلچسپی کے باعث وہ آسانی سے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری سے فرار ہوگئے ۔

ملزم اقبال اور جبار کی ضمانت کی درخواستوں کی سماعت کے دوران ملزموں کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ تھانہ بتولا پاکپتن پولیس نے ایک ہی وقوعہ کے دو مقدمات درج کئے ہیں، ملزم اقبال اور جبار کے کے خلاف کوئی گواہ نہیں ہے ، ایڈیشنل پراسکیوٹر جنرل اسجد گرال نے بنچ کو بتایا کہ یہ دونو ں درخواست گزار مقتولین زاہد اور شہباز کے قتل کی دوسری ایف آئی آر میں نامزد ملزم ہیں، یہ لوگ مقتولین کی فصلیں اٹھا کر لے گئے ،اس موقع پر انہوں نے فائرنگ کر کے کئی افراد کو زخمی جبکہ زاہد اور شہبازکو قتل کیا، زخمیوں نے دونوںملزموںکی شناخت بھی کر لی ہے۔

اس مرحلے پر ملزموں کو عبوری ضمانت نہیں دی جاسکتی، فاضل بنچ نے فریقین کے دلائل سننے اور ریکارڈ دیکھنے کے بعد ملزم اقبال اور جبار کی ضمانت کی درخواست مسترد کردی جس کے بعد ملزم آرام سے ٹہلتے ہوئے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری سے فرار ہوگئے ۔

مزید : لاہور