بھارت معافی مانگنے کی بجائے دھمکیاں لگا رہا ہے،عبدالعلیم خان

بھارت معافی مانگنے کی بجائے دھمکیاں لگا رہا ہے،عبدالعلیم خان

  

لاہور (نمائندہ خصوصی )تحریک انصاف سنٹرل پنجاب کے صدر عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ برابری کی سطح پر بات چیت کرنے کی بجائے بھارت سے یکطرفہ دوستی کی پینگھیں بڑھانے کے باعث آج پاکستان کو آنکھیں دکھائی جا رہی ہیں اور کشمیر میں انسانیت سوز مظالم پر شرمندہ ہونے یا معافی مانگنے کی بجائے بھارت پاکستان پر حملہ کرنے کی گیدڑ بھبھکیاں لگا رہا ہے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کو اپنے دورہ امریکہ میں کشمیر سے زیادہ دوسرے معاملات کی فکر لاحق دکھائی دیتی ہے پارٹی دفتر میں پی ٹی آئی کے مشاورتی اجلاس اور پارٹی کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے عبدالعلیم خان نے کہا کہ قومی سلامتی ہم سب کی ترجیح ہونی چاہیے لیکن بد قسمتی سے بھارت کی اشتعال انگیزیوں کے باعث 57پاکستانی شہید اور 225زخمی ہوئے ہیں بھارت نے صرف ایک سال میں 248مرتبہ سیز فائر کی خلاف ورزی کی ہے جبکہ کنٹرول لائن پر315مرتبہ یکطرفہ کاروائی کا آغاز کیا ہے عبدالعلیم خان نے کہا کہ یہ موجودہ حکومت کی کمزور پالیسیوں کا نتیجہ ہے کہ افواج پاکستان کی قربانیوں اور جوانوں کا اپنی زندگیاں داؤ پر لگا کر سرحدوں کی حفاظت کرنے والوں کا کیس کمزور طریقے سے پیش کیا گیا ہے عبدالعلیم خان نے کہا کہ آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے بھارت کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر دلیرانہ موقف اختیار کیا ہے اور ہر پاکستانی کے دل کی ترجمانی کی ہے سیاسی حکومت کی طرف سے بھی ایسا ہی موقف آنا چاہیے تھا لیکن بدقسمتی سے ان کی ترجیحات مختلف دکھائی دیتی ہیں ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -