اردو سرکاری زبان نفاذسے متعلق دائر درخواست پر فیصلہ محفوظ

اردو سرکاری زبان نفاذسے متعلق دائر درخواست پر فیصلہ محفوظ

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شمس محمود مرزا نے اردوزبان کے نفاذ سے متعلق محفوظ کیا گیافیصلہ سنانے تک پنجاب میں انگریزی زبان پرپابندی عائد کرنے کے لئے دائر متفرق درخواست مسترد کر دی ہے ۔یہ درخواست ڈاکٹر اشرف نظامی کی طرف سے دائر کی گئی تھی ، درخواست گزار کی طرف سے اے کے ڈوگر ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ سپریم کورٹ نے ملک بھر میں اردو کو سرکاری زبان کے طور پر نافذ کرنے کا فیصلہ دے رکھا ہے، سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل درآمد کے لئے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی گئی ہے جس پر عدالت نے تمام فریقین کو سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر رکھا ہے ، انہوں نے استدعا کی کہ عدالتی فیصلہ آنے تک پنجاب کے سرکاری محکموں ، سکول اور کالجز میں انگریزی زبان پر پابندی عائد کی جائے، ابتدائی سماعت کے بعد عدالت نے متفرق درخواست پررجسٹرار آفس کے اعتراض کو برقرار رکھتے ہوئے اسے مسترد کردیا اور قرار دیا کہ عدالتی فیصلے تک انتظار کیا جائے،درخواست پر رجسٹرار آفس نے اعتراض لگایا تھا کہ بنیادی رٹ درخواست کی سماعت مکمل ہونے کے بعد متفرق درخواست دائر نہیں کی جاسکتی جسے عدالت نے برقرار رکھا ہے۔

فیصلہ محفوظ

مزید :

صفحہ آخر -