اندرونی انتشار اور بوکھلاہٹ کا شکار بھارت پاکستان سے جنگ کا سوچ بھی نہیں سکتا: عسکری و خارجہ امور ماہرین

اندرونی انتشار اور بوکھلاہٹ کا شکار بھارت پاکستان سے جنگ کا سوچ بھی نہیں ...

  

لاہور(محمد نواز سنگرا)بھارت میں اڑی واقعہ خود ساختہ ہے احمقانہ باتیں کر کے وہ اقوام متحدہ کے اجلاس میں کشمیر سے توجہ ہٹانا چاہتا ہے۔بھارت دنیا کا سب سے بڑا دہشت گردہے جو کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی کر رہا ہے۔پاکستان کے پاس دنیا کی مضبوط ترین فوج ہے جس کی مکمل تیاری ہے اگر بھارت نے کوئی غلطی کی تو اس کا خمیازہ رہتی دنیا تک ا س کو بھگتنا ہو گا۔لائن آف کنٹرول پر لیز ر وال لگی ہوئی ہے جہاں سے بھارت میں داخلہ ناممکن ہے ۔اندورنی طور پر انتشار اور بوکھلاہٹ کا شکار بھارت جنگ کا سوچ بھی نہیں سکتا ۔ان خیالات کا اظہار ملک کے عسکری اور خارجہ امورکے ماہرین نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ہے۔اس حوالے سے جنرل (ر)اسلم بیگ نے کہا کہ کشمیر میں بھارت کی 6لاکھ فوج پھنسی ہوئی ہے جس کو نکلنے کا راستہ نہیں مل رہا کشمیر میں جہادی گروپ بن چکا ہے خالصتان تحریک کسی بھی وقت شروع ہو سکتی ہے اور1990کی طرح افغانستان سے جہادی پھر سے کشمیر میں آسکتے ہیں ۔بھارت اندرونی طور پر الجھ چکا ہے وہ جنگ کا سوچ بھی نہیں سکتا ۔پاکستان اکیلا نہیں ہے بھارت روس کا جواب بھی سن چکا ہے اور اگر چین نے سرحدوں پر حرکت شروع کر دی تو بھارت کی آنکھیں کھل جائیں گی۔پاکستان کی فوج 1971والی نہیں ہے بھارت کو سوچ سمجھ کر باتیں کرنی چاہیں ۔بھارت کشمیر سے ذلیل وخوار ہو کر نکلے گا جس طرح افغانستان سے روس اور امریکہ کا انخلا ہوا ہے ،بھارت کو دھونس دھاندلی سے نکل کر مسئلہ کشمیر پر آگے بڑھنے کی ضرورت ہے۔جنرل(ر)راحت لطیف نے کہا کہ اڑی جموں کے قریب واقع ہے جہاں ہندو اکثریت میں ہیں ۔لائن آف کنٹرول پر جس طرح سنسر لگائے گئے ہیں بھارت داخل ہونا ناممکن ہے بھارت سری نگر میں انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی کر رہا ہے ۔آرمی چیف نے کور کمانڈر کانفرنس میں بھرپور جواب دے دیا ،اس وقت پاکستان آرمی مکمل تیار ہے اگر بھارت نے کوئی غلطی کی تو اس کا خمیازہ بھارت کو ہمیشہ کیلئے بھگتنا ہو گا۔پاکستان کی کمزور خارجہ پالیسی کا بھارت فائدہ اٹھاتا ہے جس کو مضبوط کرنے اور غیر ملکی سفیروں کے ذریعے بھارت کا چہرہ پوری دنیا کے سامنے بے نقاب کرنا چاہیے۔جنرل (ر)جمشید ایاز نے کہا کہ بھارت ہمیشہ اپنی کوتاہیوں کا ملبہ پاکستان پر ڈالتا ہے اور پاکستان نے بڑی دانشمندی کا مظاہر ہ کیا۔دنیا جانتی ہے کہ بھارت کشمیر میں ظلم و جبر کر رہا ہے اور کشمیر یوں کے اٹھ کھڑے ہونے کی وجہ سے بھارت بوکھلاہٹ کا شکا ہے ۔پاک بھارت جنگ کبھی نہیں ہو سکتی۔برگیڈئیر(ر)اسلم گھمن نے کہا کہ اڑی حملہ بھارتی ڈرامہ ہے جس کا پول اس کے متضاد بیانات نے کھول دیا ہے ۔دنیا کے تمام سربراہان کا سامنے نہ کرنے پانے کی وجہ سے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت نہیں کر رہا وہ صرف یو این او اجلاس میں مسئلہ کشمیر پر توجہ ہٹانا چاہتا ہے ۔پاکستان کے پاس مسلح فوج،نیوکلئیر پاورجس کا بھارت سامنا نہیں کر سکتا ۔بھارت دنیا کا سب سے بڑ ا دہشتگرد ہے جو کشمیر میں شہریوں پر ظلم ٖڈھا رہا ہے۔سابق وزیر خارجہ سردار آصف احمد علی نے کہا کہ پاکستان بھارت جنگ صرف دونوں ممالک نہیں دنیا بھر کی تباہی ہے بھارت کی احمقانہ قیادت اور انسانی حقوق سے بے پرواہ حکمرانوں کی وجہ سے بھارت کے اندر بھی لوگ تنگ ہیں ۔مودی حکومت پاکستان کو کمزور اور تنہا کرنا چاہتی ہے جس کیلئے کشمیر،افغانستان اور لائن آف کنٹرول کو استعمال کرتی ہے ۔پاکستان ایک مضبوط ملک ہے دو تین ممالک مل کر پاکستان کو تتربتر نہیں کر سکتے ۔بھارت میں دنیا کا چھیواں حصہ آباد ہے۔پاکستان کو مشرق اور مغرب دونوں اطراف سے مشکلا ت کا سامنا ہے لیکن حکومت پاکستان کو جنگی جنون کی بجائے تحمل،منطق اور حوصلے سے آگے بڑھنے کی ضرورت ہے۔سابق امریکی سفیر بیگم عابدہ حسین نے کہا کہ اڑی واقعہ خود ساختہ ہے بھارت اقوام متحدہ کے اجلاس میں مسئلہ کشمیر سے توجہ ہٹانے کیلئے پراپیگنڈہ کر رہا ہے پاک بھارت جنگ کا امکان نہیں ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -