اڑی حملے کا سوشل میڈیا پر تزکرہ ، کشمیری نوجوان کو علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے نکال دیا گیا

اڑی حملے کا سوشل میڈیا پر تزکرہ ، کشمیری نوجوان کو علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے ...

  

 علی گڑھ ( اے این این ) اڑی حملے کے حوالے سے سوشل میڈیا پر تبصرہ کرنے پر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے کشمیری طالب علم کو نکال دیا گیا ٗبی جے پی کے رکن نے وائس چانسلر کو خط لکھ کر طالب علم کے خلاف سخت سے سخت ایکشن لینے کا مطالبہ کردیا ٗ طالب علم کی واقعہ پر وائس چانسلر سے معافی ٗ یونیورسٹی انتظامیہ ٹس سے مس نہ ہوئی ۔بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق تحریک پاکستان میں نمایاں کردار ادا کرنے والی علی گڑھ مسلم یونیورسٹی نے بھارتی فوج کی بریگیڈ ہیڈ کوارٹر پر حملے کے حوالے سے فیس بک پر تبصرہ کرنے پر کشمیری طالب علم مدثر یوسف کو یونیورسٹی سے نکال دیا۔یونیورسٹی ترجمان کا کہنا ہے کہ وائس چانسلر نے واقعے کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے کہا ہے کہ یونی ورسٹی ایسے کسی واقعے کو کسی صورت برداشت نہیں کرسکتی جس میں ملک کے خلاف جذبات کو ابھارا گیا ہو۔دوسری جانب بی جے پی کے رکن اور ممبر پارلیمنٹ ستیش کمار نے وائس چانسلر کو خط لکھ کر طالب علم کے خلاف سخت سے سخت ایکشن لینے کا مطالبہ کیا ہے۔کشمیری طالب علم مدثریوسف سری نگر کا رہائشی ہے اور علیگڑھ مسلم یونیورسٹی سے ایم ایس سی کررہا تھا۔ طالب علم نے واقعے پر وائس چانسلر نے معافی بھی مانگی تاہم یونیورسٹی انتظامیہ ٹس سے مس نہ ہوئی ۔وائس چانسلر کے مطابق یونیورسٹی میں اس قسم کی حرکت کے لئے کوئی جگہ نہیں اور نہ قوم دشمن رجحانات کو برداشت کیا جاسکتا ہے۔

مزید :

علاقائی -