عبدالولی خان یونیورسٹی میں پراجیکٹ فارمویشن کے موضوع پر ورکشاپ

عبدالولی خان یونیورسٹی میں پراجیکٹ فارمویشن کے موضوع پر ورکشاپ

  

مردان (بیورورپورٹ )عبدالولی خان یونیورسٹی مردان میں پاکستان سائنس فاؤنڈیشن کے باہمی تعاون سے ڈیپارٹمنٹ آف ایگریکلچرل اور اوریکس کے زیر انتظام "پراجیکٹ فارمولیشن"کے موضوع پر دوروزہ ورکشاپ شروع ہوا۔اجلاس سے پاکستان سائنس فاؤنڈیشن کے ڈاریکٹر ریسرچ سپورٹ ڈاکٹر مرزا حبیب علی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جدید تقاضوں سے ہم آہنگ ریسرچ و تحقیق وقت کی ضرورت ہے۔ اور پاکستان سائنس فاؤنڈیشن اس مقصد کیلئے اپنی تمام وسائل بروئے کار لائے گی۔ اُنہوں نے کہا پاکستان کی معاشی ترقی کا دارومدار ریسرچ و تحقیق پر ہے۔ انہوں نے کہا اکیڈیمیا اور انڈسٹری کے درمیان باہمی تعاون مزید بڑھانا چاہئے۔ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر ڈاکٹر سلیم اللہ خان نے کہا کہ عبدالولی خان یونیورسٹی مردان ریسرچ و تحقیق کیلئے اپنے تمام وسائل بروئے کار لائے گی تاکہ ہم ترقی یافتہ اقوام کے شانہ بشانہ چل سکیں۔ انہوں نے کہا عبدالولی خان یونیورسٹی مردان کے ریسرچ پیپرز کی تعداد 1152تک پہنچ چکی ہے اور اس سال فیکلٹی ممبران نے آج تک 171ریسرچ پراجیکٹ جمع کئے ہیں جو کہ ایک ریکارڈ ہے۔ ورکشاپ میں عبدالولی خان یونیورسٹی کے فیکلٹی ممبران کے علاوہ خیبر پختونخواہ کے دیگر یونیورسٹیوں کے فیکلٹی ممبران نے بھی اس دو روزہ ورکشاپ میں شرکت کی۔آخر میں ورکشاپ کے آرگنائزر ڈاکٹر کوثر علی نے تمام شرکاء کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اس ورکشاپ سے تمام فیکلٹی ممبران کو ریسرچ کیلئے نئے فنڈنگ کی تلاش میں مدد ملے گی اور پراجیکٹ کے بنانے کے طریقے کار سے آگاہی حاصل ہو گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -