پنجاب میں نیشنل ایکشن پلان پر بھرپور عملدرآمد جاری ہے‘ ثاقب خورشید

پنجاب میں نیشنل ایکشن پلان پر بھرپور عملدرآمد جاری ہے‘ ثاقب خورشید

  

وہاڑی+میلسی (بیو رو رپورٹ+نما ئندہ خصوصی+ نامہ نگار)ممبر پبلک اکاؤنٹس کمیٹی پنجاب میاں محمد ثاقب خورشید نے کہا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف کی قیادت میں صوبہ بھر میں نیشنل ایکشن پلان پربھر پور عمل درآمد جاری ہے نیشنل ایکشن پلان کے تحت حکومت پنجاب کی طرف سے دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف اٹھائے گئے فوری اقدامات کے نتیجے میں 5ستمبر 2016 ؁ء تک (بقیہ نمبر9صفحہ12پر )

صوبہ بھر میں97ہزار 608 مقدمات درج کئے گئے جبکہ نفرت انگیز تقاریر، وال چاکنگ، اسلحہ کی نمائش اور دیگر قوانین کی خلاف ورزی کرنے پر ایک لاکھ 5ہزار 131 افراد کو گرفتار کیا گیامیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے میاں ثاقب خورشید نے کہا کہ کرایہ داری ایکٹ، وال چاکنگ (ترمیمی ایکٹ) 2015ء، اسلحہ ایکٹ (ترمیمی ایکٹ)2015ء پنجاب ساؤنڈ سسٹم ایکٹ 2015، پبلک آرڈر ایکٹ 2015ء کی ترمیم شدہ بحالی قوانین کے نفاذ کے بعد خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائیاں کی جا رہی ہیں پنجاب ساؤنڈ سسٹم ریگولیشن آرڈیننس کے تحت پنجاب میں 10691مقدمات درج کر کے 11399ملزمان کو گرفتار کرکے 9768چالان عدالتوں میں پیش کئے گئے4007مقدمات کے فیصلوں میں 3448مجرموں کو جرمانے اور قید کی سزا دی گئی ہے انہوں نے بتایا کہ نفرت انگیزمواد کی نشر و اشاعت اور ابلاغ کے ایکٹ میں ترمیم کے بعد صوبہ بھر میں کارروائی کے دوران 981مقدمات درج کر کے 1191ملزموں کو گرفتار کیا گیا عدالتوں میں 790 چالان پیش کئے گئے511مقدمات کے فیصلے ہو چکے ہیں اور 157 افراد کو جرمانے اور قید کی سزا سنائی جا چکی ہے میاں ثاقب خورشید نے کہا کہ پنجاب مینٹیننس آف پبلک آرڈر آرڈیننس کی خلاف ورزی پر صوبہ بھر میں 204مقدمات درج کرکے 367افراد کو گرفتار کیا گیا144افراد کے خلاف عدالتوں میں چالان پیش کئے گئے20مقدمات کے فیصلے کے بعد 17افراد کو جرمانے اور قید کی سزا سنائی گئی جبکہ پنجاب کرایہ داری آرڈیننس 2015 ؁ء کی خلاف ورزی پر صوبہ بھر میں 14804 مقدمات درج کرکے 21959 افراد کو گرفتار کیا گیا جن میں 7510 مالکان، 10392 کرائے دار، 96پراپرٹی ڈیلر اور 3961 منیجر وغیرہ شامل ہیں11595 چالان عدالتوں میں پیش کئے گئے4041 مقدمات کے فیصلوں کے بعد 3669 افراد کو جرمانے اور قید کی سزا سنائی گئی میاں ثاقب خورشید نے کہا کہ انسداد وال چاکنگ ترمیمی آرڈیننس 2015 ؁ء کے تحت صوبہ بھر میں 1941 مقدمات درج کرکے 1905افراد کو گرفتار کیا گیا 1797 ملزمان کے چالان عدالتوں میں پیش کر دیئے گئے جبکہ 673 مقدمات کے فیصلے بھی ہو چکے ہیں500ملزموں کو جرمانے اور قید کی سزا دی جا چکی ہے پنجاب اسلحہ آرڈیننس کی خلاف ورزی کرنے پر 60691 مقدمات درج کئے گئے جبکہ 60674 افراد کو گرفتار کر لیا گیا53953 چالان عدالتوں میں داخل کئے گئے4245 مقدمات کے فیصلے سنا دیئے گئے3676 افراد کوجرم ثابت ہونے پر قید اور جرمانے کی سزائیں سنائی جا چکی ہیں انہوں نے بتایا کہ فرقہ ورانہ نفرت انگیز تحریری مواد چھاپنے والوں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے 189کتابیں اور 1500سی ڈیز 570 میگزین اور 3900پمفلٹ ضبط کر لئے گئے ہیں جبکہ متحدہ علماء بورڈ کی سفارش پر نفرت انگیز مواد پر مبنی 210کتابیں اور سی ڈیز پر پابندی عائد کر دی گئی ہے انہوں نے کہا کہ حکومتی اقدامات کے نتیجہ میں پنجاب میں دہشت گردی کے واقعات میں 70% کمی واقع ہوئی ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -