رائیونڈ مارچ کرنے والوں پر رکاوٹ نہیں ڈالنی چاہیے‘ غلام فرید کوریجہ

رائیونڈ مارچ کرنے والوں پر رکاوٹ نہیں ڈالنی چاہیے‘ غلام فرید کوریجہ

  

جھوک اترا(نمائندہ پاکستان+ نمائندہ خصوصی) سرائیکستان قومی اتحاد کے سربراہ و عہدیداروں کے اعزاز میں علاقہ کے معروف شخصیت سرائیکستان قومی اتحاد کے سینئر رہنما ملک غلام مصطفی بھپلا نے ایک شاندار اعشائیہ کا اہتمام کیا ۔اعشائیہ میں چےئرمین و سربراہ سرائیکستان قومی اتحاد خواجہ غلام فرید کوریجہ سمیت علاقہ معززین بھی شریک ہوئے ۔ خواجہ غلام فرید کوریجہ نے اعشائیہ میں گفتگو کرتے (بقیہ نمبر37صفحہ12پر )

ہوئے کہا کہ ساہیوال کو ملتان ہائی کورٹ سے الگ کرنا تخت لاہور کی وسعت پسند سوچ کی عکاسی ہے۔ اوکاڑہ، جھنگ ، بھکر، میانوالی کو بھی ملتان بنچ میں شامل کیا جائے۔ یہ علاقہ تاریخی اور انتظامی حوالہ سے ملتان کا حصہ ہیں۔ رائیونڈ مارچ کرنے والوں پر رکاوٹ نہیں ڈالنی چاہیے۔ احتجاج جمہوری حق ہے حکمران جماعت کے ڈنڈہ بردار عسکریت پسند فورس کی کاروائیاں افسوسناک ہیں۔ سکھوں کی مقدس کتاب حکومت کی طرف سے چھپوانے پر اعتراض نہیں لیکن دیگر اقلیتوں کو بھی مساوی حقوق ملنے چاہیے اور سرائیکی وسیب کے عظیم ہیرو کے مزار پر خواجہ غلام فرید پر عائد پابندیاں غیر آئینی اقدام ہیں۔ اور خواجہ غلام فرید کا سرائیکی دیوان بھی سکھوں کی کتاب کی طرح سرکاری سطح پر چھپوایا جائے۔ سکھوں کو تخت لاہور لسانی بنیاد پر سپورٹ کر رہا ہے حکمران احتجاج کا خاتمہ چاہتے ہیں تو کرپشن کی شفاف تحقیقات کرانے کیلئے نواز شریف کو مستعفیٰ ہو جانا چاہیے۔ قومی اداروں کو حکمرانوں کو ذاتی فورس کا حصہ نہیں بننا چاہیے۔ اس موقع پر میزبان ملک غلام مصطفے بھپلا نے اپنے بیان میں کہا۔ ہمارے علاقے کو جان بوجھ کر پسماندہ رکھا گیا ہے ہمارے علاقہ کے سڑکوں کی حالت ناقص ہو چکی ہے آج تک کسی نے توجہ نہیں دی۔ اَپر پنجاب میں اربوں روپے خرچ کیے جا رہے ہیں سرائیکی وسیب خصوصاً دیہی علاقوں میں محرومی و ناانصافی کے سوا کچھ نہیں ملا ہمارے منتخب ایم این اے علاقہ میں کوئی توجہ نہیں دے رہے ہیں اعشائیہ میں شرکت کرنے والے ڈویژنل صدر عبدالحی خان چانڈیہ، سابق ٹکٹ ہولڈر عبدالحکیم خان لغاری، زمیندار ملک اللہ بخش خان بھپلا، فیض کریم بھٹی، ملک خادم حسین ڈھولن، سردار شریف خان لغاری، سید صفدر حسین شاہ، سینئر نائب صدر حاجی عبدالغفور خان لغاری، مہر حسین چنگوانی، ملک ممتاز احمد بھپلا، غلام فرید بھپلا، منظور حسین بھپلا، خادم حسین بھپلا، صادق حسین بھپلا، عاشق حسین بھپلا، خالد حسین بھپلا، ملک اسماعیل بھپلا، ملک مجاہد حسین بھپلا، ملک عطاء اللہ بھپلا، ملک رشید احمد بھپلا، ملک منظور احمد بھپلا، سردار شاہنواز خان کھوسہ، حاجی غلام حسین ملیہ، سردار رب نواز کھوسہ، سردار کریم بخش کھوسہ، ملک منیر احمد بھپلا، ملک فیصل احمد بھپلا، ملک مظفر احمد بھپلا، حافظ مقبول احمد بودلہ، ملک جمال احمد بھپلا، ملک عبدالرحمن بھپلا موجود تھے۔

غلام فرید

مزید :

ملتان صفحہ آخر -