وزیراعلٰی کی بلین ٹری سونامی منصوبے کو شعبہ زراعت تک تو سیع دینے کی ہدایت

وزیراعلٰی کی بلین ٹری سونامی منصوبے کو شعبہ زراعت تک تو سیع دینے کی ہدایت

  

پشاور( پاکستان نیوز)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے بلین ٹری سونامی منصوبے کو شعبہ زراعت تک توسیع دینے کی ہدایت کی ہے اور کہا ہے کہ محکمہ زراعت اور فارسٹ آپس میں معاہدہ کریں۔ محکمہ جنگلات کی مشینری استعمال کی جائے اور محکمہ زراعت سروسز مہیا کرے۔ انہوں نے ہدایت کی کہ ایسے پودے بھی لگائے جائیں جو مقامی سطح پر ایندھن کی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے بھی استعمال کئے جا سکیں۔ وہ وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور میں اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔وزیراعلی کے معاون خصوصی برائے ماحولیات ، سیکرٹری ماحولیات ، سیکرٹری زراعت ، ڈائریکٹر جنرل فارم واٹر مینجمنٹ اور دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ بلین ٹری سونامی منصوبہ محفوظ مستقبل کا ضامن منصوبہ ہے جس کیلئے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں ۔ انہوں نے ہدایت کی کہ جس جگہ تک رسائی ممکن نہ ہو وہاں ائر ڈراپ کریں اور سائنسی طریقے سے شجرکاری اور مطلوبہ نتائج حاصل کرنے کیلئے نگرانی یقینی بنائیں۔ وزیراعلیٰ نے ضرورت کی بنیاد پر پلانٹیشن سکیموں کو آؤٹ سورس کرنے کا بھی حکم دیا تاکہ مقررہ اہداف کا حصول احسن طریقے سے ممکن ہو سکے ۔ پرویز خٹک نے کہاکہ یہ منصوبہ ہزاروں بے روزگار افراد کیلئے روزگار کا باعزت ذریعہ ہے۔ انہوں نے منصوبے میں نوجوانوں اور خواتین کو برابر مواقع فراہم کرنے کی ہدایت کی اور کہاکہ اس سلسلے میں انصاف کے تقاضے پور ے کئے جائیں اور شفافیت یقینی بنائی جائے اور نتیجہ خیز شجرکاری کیلئے لوگوں کو تربیت دی جائے ۔ انہوں نے کہاکہ صوبہ بھر میں شجرکاری مہم کے نتائج پر نظر رکھی جائے اور بہترین بیج استعمال کئے جائیں جن علاقوں میں نتیجہ اطمینان بخش نہیں وہاں بیج کی کوالٹی چیک کی جانی چاہئے انہوں نے کہاکہ ہم نے مستقبل کیلئے ایک نرسری کلچر متعارف کرایا ہے جس میں کمیونٹی کو شامل کیا ہے ۔ صوبائی حکومت نے منصوبے کی کامیابی کیلئے سائنٹیفک مینجمنٹ پالیسی بنائی ہے ۔ وزیراعلیٰ نے صوبے میں پلانٹیشن لیب کی ضرورت پر بھی زور دیا تاکہ صوبے کے مختلف علاقوں کو وہاں کی ضروریات کے مطابق ماحول دوست پودوں کی فراہمی یقینی ہو سکے۔ پرویز خٹک نے کہاکہ خیبرپختونخوا کا بلین ٹری سونامی منصوبہ دُنیا کی چوتھی بڑی کامیاب مہم ہے۔یاد رہے کہ چین ، انڈیا اور امریکہ کے بعد خیبرپختونخوا حکومت کی سطح پر شجرکاری کی سب سے بڑی مہم ہے۔انہوں نے اُمید ظاہر کی کہ وہ اس منصوبے کے تحت مقررہ اہداف سے بھی آگے تک جائیں گے ۔

پشاور( پاکستان نیوز)وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے حکام کو سختی سے ہدایت کی ہے کہ وہ صوبائی حکومت کے سولر ٹیوب ویل لگانے کے پروگرام کو عالمی معیار کے مطابق آگے بڑھائیں اور اس میں معیار اور شفافیت کو ہر قیمت پر یقینی بنائیں ۔انہوں نے محکمہ بلدیات اور ضلعی حکومتوں کی انتظامیہ کو بھی واضح تاکید کی ہے کہ وہ اپنے متعلقہ علاقوں کے سکولوں اور ہسپتالوں میں تعلیمی اور طبی سہولیات اور ضروریات کی سو فیصد تکمیل یقینی بنائیں تاکہ لوگ ان سے بہتر انداز میں استفادہ کر سکیں اور حکومت و بلدیاتی اداروں پر عوام کا اعتماد بحال ہو انہوں نے واضح کیا کہ ہماری حکومت نے وعدے کے مطابق اپنے اختیارات اور وسائل پوری فراخدلی کے ساتھ مقامی حکومتوں کو منتقل کئے اور اب منتخب بلدیاتی نمائندوں کا بھی فرض ہے کہ وہ پوری احساس ذمہ داری کا مظاہرہ کریں تاکہ عوام کو فیصلہ سازی کے عمل میں شامل کرنے کا نیا اسلوب حکمرانی کامیابی سے ہمکنار ہووہ وزیراعلیٰ ہاوس پشاور میں لوکل گورنمنٹ کمیشن اور بلدیاتی اُمور سے متعلق اجلاس کی صدارت کر رہے تھے جس میں صوبائی وزراء علی امین گنڈا پور ، محمد عاطف خان اور رکن صوبائی اسمبلی محمود بیٹنی کے علاوہ دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی ۔اس موقع پر وزیراعلیٰ نے ٹانک کے ضلعی بجٹ کو چیئرمین لوکل گورنمنٹ کمیشن کو بھیجنے کی ہدایت کی تاکہ وہ متعلقہ قوانین کی روشنی میں اس کا جائزہ لے اور پاس کریں انہوں نے ایسے تمام معاملات لوکل گورنمنٹ کمیشن اور متعلقہ اضلاع کے ڈپٹی کمشنر کی کڑی نگرانی میں نمٹانے کی ہدایت کی اور واضح کیا کہ اضلاع کا بجٹ قواعد کے مطابق شفاف انداز میں تیار اور خرچ ہونا چاہیے جو حکام کا جیب گرم کرنے کی بجائے خالصتاً عوامی مفاد پر مبنی ہواُنہوں نے ٹانک سمیت ضلعی حکومتوں میں افسران کی کمی دور کرنے کیلئے 10 پی ایم ایس افسران کی خدمات ضلعی حکومتوں کے حوالے کرنے کی ہدایت بھی کی تاکہ فیصلہ سازی کا عمل زیادہ تیز بنے ، ضلعی حکومتیں مضبوط بنیں اور وہ ڈیلیو ر کر سکیں انہوں نے ٹانک میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی خالی آسامی فوری پر کرنے جبکہ ٹی ایم او کو ایک مہینہ کا نوٹس دیتے ہوئے ٹانک میں سولر ٹیوب ویل اور سڑکوں کے تعمیراتی کام کو معیاری بنانے کی ہدایت بھی کی ۔ انہوں نے بعض اضلاع میں اضافی اعزازیہ دینے کا نوٹس لیتے ہوئے اضافی رقوم واپس لینے کی ہدایت بھی کی اور واضح کیا کہ تمام ملازمین کو عوامی اعتماد کے مطابق اپنے فرائض پور ی تندہی سے ادا کرنے ہوں گے وزیراعلیٰ نے ضلعی حکومتوں کے زیر اہتمام شہریوں کو آبنوشی ، صفائی اور تعلیم و صحت کی سہولیات کی فراہمی یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ ان کی خوبصورتی کا عمل مسلسل جاری رکھنے کی ہدایت بھی کی اور بالخصوص پارکوں میں رات کی رانی سمیت خوشبودار پودے اور پھول لگانے کی ہدایت کی تاکہ پارکوں میں آنے والے بڑوں اور بچوں کو صحت مند ماحول میسر ہو۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -