صنعت کار ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں :گورنر سندھ

صنعت کار ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں :گورنر سندھ

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) گورنر سندھ ڈاکٹر عشر ت العباد خان نے کہا ہے کہ صنعت کار کسی بھی ملک کی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں کیونکہ ان کی صنعتوں کے باعث نہ صرف ملازمت کے کثیر مواقع پیدا ہوتے ہیں بلکہ قومی خزانے میں بھی ٹیکسوں اور ڈیوٹیز کی مد میں بھی خطیر رقم جمع ہوتی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے نارتھ کراچی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری کے 5 رکنی وفد سے ملاقات کے دوران کیا جس کی قیادت وفاق ایوانہائے صنعت و تجارت کی امن و امان کے بارے میں اسٹینڈنگ کمیٹی کے چیئرمین نور احمد خان کررہے تھے۔گورنر سندھ نے کہا کہ صوبہ سندھ میں ہر شعبہ میں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجودہیں یہی وجہ ہے کہ حکومت نے کئی شہروں میں خصوصی صنعتی زونز قائم کئے ہیں تاکہ صنعت کار وہاں سرمایہ کاری کرسکیں۔انہوں نے کہا کہ کراچی اپنی جغرافیائی پوزیشن اور سرمایہ کاری کے لئے سازگار ماحول کے باعث پاکستان کا معاشی حب ہے کیونکہ یہاں خام مال کے ساتھ ساتھ افرادی قوت بھی باآسانی دستیاب ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت صوبہ بھر کے صنعتی زونز کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کے لئے اقدامات کر رہی ہے اور ان کو درپیش فراہمی و نکاسء آب،سکیورٹی اور سڑکوں کی تعمیر و مرمت کے مسائل جلد از جلد حل کئے جائیں گے تاکہ ان میں موجود صنعتوں کو بھرپور طریقہ سے چلانیاور پیداوار میں اضافہ کو یقینی بنایا جاسکے۔گورنر سندھ نے مزید کہا کہ دہشت گردی ،ٹارگٹ کلنگ ،بھتہ خوری اور اغوا برائے تاوان میں ملوث مجرمان کے خلاف آپریشن کے بہت مثبت نتائج برآمد ہوئے ہیں اور شہر کی سماجی،ثقافتی اور تفریحی سرگرمیاں بھرپور طریقہ سے بحال ہو چکی ہیں جن کے لئے شہری قانون نافذ کرنے والے اداروں کے شکر گذارہیں۔نور احمد خان کی جانب سے نارتھ کراچی صنعتی علاقہ کی سڑکوں کی خراب حالت پر توجہ مبذول کرائے جانے پر گورنر سندھ نے ضلع وسطی کے ڈپٹی کمشنر اور سینئر ڈائریکٹر ٹیکنیکل سروسز بلدیہ عظمیٰ کراچی سے رابطہ کیا اور انہیں اس معاملہ کو جلد از جلد حل کرنے کی ہدایت کی۔وفد کے اراکین نے اپنے مسائل توجہ سے سننے پر گورنر سندھ کا شکریہ ادا کیا اور انہیں یقین دلایا کہ صوبہ سندھ کی ترقی و خوشحالی کے لئے صنعت کر اپنا مثبت کردار جاری رکھیں گے تاکہ صنعتی پیداوار میں اضافہ کے ساتھ ساتھ روزگار کے نئے مواقع بھی پیدا کئے جا سکیں۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -