رقم واپسی کیس : برطانیہ کی عدالت نے پولیس کو الطاف حسین اور سرفراز مرچنٹ کیخلاف 5اکتوبر تک فرد جرم عائد کرنے کی ہدایت کر دی

رقم واپسی کیس : برطانیہ کی عدالت نے پولیس کو الطاف حسین اور سرفراز مرچنٹ ...
رقم واپسی کیس : برطانیہ کی عدالت نے پولیس کو الطاف حسین اور سرفراز مرچنٹ کیخلاف 5اکتوبر تک فرد جرم عائد کرنے کی ہدایت کر دی

  

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک ) برطانیہ کی عدالت نے پولیس کو ایم کیو ایم بانی الطاف حسین اور سرفراز مرچنٹ کیخلاف 5اکتوبر تک فرد جرم عائد کرنے کی ہدایت کر دی ۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق  ہیمر سمتھ مجسٹریٹ کی عدالت میں متحدہ بانی الطاف حسین اور سرفراز مرچنٹ سے برآمد کی گئی رقم کی واپسی کے حوالے سے کیس کی سماعت ہوئی ۔ سرفراز مرچنٹ کے وکلاءنے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ الطاف حسین کے گھر سے برآمد ہونے والے پیسوں میں سرفراز مرچنٹ کے پیسے بھی شامل ہیں جنہیں پولیس نے ضبط کر رکھا ہے ۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

وکلاءنے دلائل دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ سرفراز مرچنٹ کے ضبط شدہ پیسوں کا منی لانڈرنگ سے کوئی تعلق نہیں لہذٰا وہ رقم واپس کی جائے جس پر سکا ٹ لینڈیارڈ پولیس نے دو ٹوک جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ ضبط شدہ پیسے غیر قانونی ہیں جو واپس نہیں کر سکتے ۔

پولیس نے عدالت کو مزید بتایا ہے کہ 5اکتوبر کو الطاف حسین اور سرفراز مرچنٹ کیخلاف منی لانڈرنگ کے ثبوت بھی عدالت کو دیں گے جس پر عدالت نے پولیس کو ہدایت کی ہے کہ 5 اکتوبر تک دونوں کیخلاف فردجرم بھی عائد کی جائے۔

مزید :

بین الاقوامی -