انٹرنیٹ پر بلیک میلنگ ،درجنوں لیڈی ڈاکٹرز پیشہ چھوڑگئیں ،رشتے ٹوٹ گئے ،ہائی کورٹ نے ملزم کی درخواست ضمانت خارج کردی

انٹرنیٹ پر بلیک میلنگ ،درجنوں لیڈی ڈاکٹرز پیشہ چھوڑگئیں ،رشتے ٹوٹ گئے ،ہائی ...
انٹرنیٹ پر بلیک میلنگ ،درجنوں لیڈی ڈاکٹرز پیشہ چھوڑگئیں ،رشتے ٹوٹ گئے ،ہائی کورٹ نے ملزم کی درخواست ضمانت خارج کردی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے فیس بک اور انٹرنیٹ کے ذریعے 200 سے زائد لیڈی ڈاکٹروں کو بلیک میل کرنے کے الزام میں گرفتار ملزم کی درخواست ضمانت مسترد کر دی۔

جسٹس عبدالسمیع خان کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی۔ملزم عبدالوہاب کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ پولیس نے میڈیا کے دباﺅ پر اسکے موکل کے خلاف لیڈی ڈاکٹرز کو ہراساں کرنے کے بے بنیاد الزامات کے تحت مقدمہ درج کر رکھا ہے۔انہوں نے کہا پولیس نے مقدمہ میں دہشت گردی کی دفعات بھی عائد کر رکھی ہیں ،عدالت ملزم کی درخواست ضمانت منظور کرے۔ینگ ڈاکٹرز ایسویسی ایشن کے سیکرٹری ڈاکٹر سلمان کاظمی نے عدالت کو بتایا کہ ملزم عبدالوہاب علوی نے فیس بک اور انٹرنیٹ کے ذریعے لیڈی ڈاکٹروں کو ہراساں کیا جس کے باعث درجنوں خواتین ڈاکٹرز پیشہ چھوڑنے پر مجبور ہو گئیں۔

ملزم کی نازیبا حرکات کی بناءپر کئی خواتین ڈاکٹرز کے رشتے ٹوٹ گئے جبکہ ملزم ڈاکٹر ز کو بلیک میل کر کے بھتہ بھی وصول کرتا رہا، ملزم نے لیڈی ڈاکٹرز کی جعلی ویڈیو ز بنائی اور انہیں بلیک میل کیا،ملزم کا موبائل ڈیٹا ریکارڈ کا حصہ ہے جبکہ ملزم سے میموری کارڈز بھی برآمد کئے جا چکے ہیںجس پر عدالت نے ملزم کی درخواست ضمانت مسترد کرتے ہوئے ٹرائل کورٹ کو 3ماہ میں مقدمے کاٹرائل مکمل کرنے کی ہدایت کر دی۔

مزید :

لاہور -