افغانستان میں جنگ مسلط کی جارہی ہے10 انتہاپسند گروپ سرگرم ہیں،اقوام متحدہ مہاجرین کے مسائل حل کروانے کے لیے اپناکرداراداکرے: محمد سروردانش

افغانستان میں جنگ مسلط کی جارہی ہے10 انتہاپسند گروپ سرگرم ہیں،اقوام متحدہ ...
افغانستان میں جنگ مسلط کی جارہی ہے10 انتہاپسند گروپ سرگرم ہیں،اقوام متحدہ مہاجرین کے مسائل حل کروانے کے لیے اپناکرداراداکرے: محمد سروردانش

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) افغانستان کے نائب صدرسروردانش نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان میں اس وقت جنگ مسلط کی جارہی ہے ۔ افغانستان میں 10 انتہاپسند گروپ جنگ کے حالات پیدا کرنے میں سرگرم ہیں۔

نجی ٹی وی چینل جیو نیوز کے مطابق افغان نائب صدر کا کہنا تھا کہ افغانستان میں موجود شدت پسندگروپ قوم کے لیے بہت بڑا خطرہ ہیں۔ تمام مسائل پرعالی برادری کے سا تھ اشتراک اورتعاون جاری ہے۔افغان حکومت انسانی اورخواتین کے حقوق میں پہلے کی نسبت بہت بہتری لائی ہے۔افغان حکومت لوگوں کو ان کا حق دینے کے لئے بہت کو ششیں کر رہی ہے۔نیشنل یونیٹی گورنمنٹ کی حکمرانی میں افغانستان نے کئی فوائدحاصل کیے ہیں۔21ویں صدی میں دنیاکودہشتگردی اورماحولیاتی تبدیلی جیسے خطرات درپیش ہیں ہمیں ان تمام مسائل کا حل نکالنا ہوگا۔اقوام متحدہ مہاجرین کے میزبان ممالک سے بہترسلوک کی یقین دہانی کروائے۔اقوام متحدہ مہاجرین کے مسائل حل کروانے کے لیے اپناکرداراداکرے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم انسانیت کی حفاظت کے لیے دہشتگردی اورانتہاپسندی کیخلاف جنگ جاری رکھیں گے۔خطے میں دہشتگردی اورمنشیات کے مسائل سے مل کر نمٹنے کی ضرورت ہے۔اسلام کسی بھی صورت میں خودکش حملوں کی اجازت نہیں دیتا۔اسلام امن کامذہب ہے اورہرقسم کی دہشتگردی کی بھرپور مذمت کرتاہے۔

مزید :

بین الاقوامی -