چین عالمی سطح پر پراپرٹی رائٹس کیلئے متحرک کردار ادا کر رہا ہے

چین عالمی سطح پر پراپرٹی رائٹس کیلئے متحرک کردار ادا کر رہا ہے

بیجنگ(آئی این پی)چین نے2001میں عالمی تجارتی تنظیم (WTO)میں شمولیت کے بعد سے عالمی سطح پر انٹی لیکچوئل پراپرٹی رائٹس کے تحفظ اور اس کے قوانین وضوابط کو عالمی معیار کے اسٹینڈرڈز کے مطابق ڈھالنے کے حوالے سے نہ صرف ایک کلیدی کردار ادا کیا ہے۔ بلکہ اس ضمن میں متعلقہ عوامل کی قانون سازی یقینی بناتے ہوئے نہ صرف خامیوں کو درست کیا گیا بلکہ متعلقہ قوانین اور ضوابط پر نظر ثانی کی گئی اور عالمی تجارتی تنظییم میں شمولیت کے بعد سے چین کی حکومت نے متعلقہ عدالتی وضاحتوں اور قواعدو ضوابط میں تیزی سے تمام متعلقہ عوامل کی تبدیلیوں کو یقینی بنایا ہے۔ایک طرف یہ ایک حقیقیت ہے کہ عالمی سطع پرٹیکنالوجی ٹرانسفر کے حوالے سے کوئی واضح کثیر الجہتی قواعد اور قوانین موجود نہیں ہیں۔تاہم چینی حکومت نے2001میں شمولیت کرنے سے قبل اس امر کی یقین دہانی یقینی بنائی تھی کہ غیر ملکی سرمایہ کاری اور ٹیکنالوجی منتقلی کے حوالے سے حکومتی منظوری کسی بھی قسم کے حوالے سے ممکنہ رکاوٹ کا باعث نہیں بنے گی۔اس ضمن میں چینی حکومت نے گزشتہ18 برسوں میں انٹی لیکچوئل پراپرٹی رائٹس کے تحفظ کے حوالے سے ایک شفاف اور مستحکم حکمت عملی یقینی بنائی ہے۔

مزید : عالمی منظر