آج یوم عاشور ، مجالس جلوسوں کی کڑی نگرانی ، داخلی ، خارجی راستے بند

آج یوم عاشور ، مجالس جلوسوں کی کڑی نگرانی ، داخلی ، خارجی راستے بند

ملتان (سٹی رپورٹر ‘ سپیشل رپورٹر )ملتان سمیت ملک بھر میں آج یوم عاشور مذہبی عقیدت و احترام سے منایا جائے گا ،ملتان میں آج 150 سے زائد مجالس عزا منعقدہونگی اور 120 ماتمی جلوس برآمد ہونگے ، جن میں 89 لائسنسی اور 28 روایتی جلوس شامل ہونگے ،ملک کے دیگر شہروں کی طرح ملتان میں بھی قدیمی امام بارگاہوں میں شہزادہ حضرت علی اکبرؓ کی یاد میں علماء کرام، زاکرین عظام ازان دیں گے بعدازاں نماز فجر کے بعدحضرت امام حسینؓ کی یاد میں انکی شہادت کے حوالے سے مجالس عزا منعقد ہوں گی اور ماتمی جلوس برآمد کئے جائیں گے ماتمی جلوسوں کے موقع پر عزادار تلواروں اور زنجیروں کا ماتم کریں گے ملتان کے قدیمی مرکزی امام بارگاہوں میں آج یوم عاشورہ کے موقع پر علماء کرام، زاکرین خطاب کریں گے بعدازاں علم ، ذوالجناح، تعزیہ کے جلوس برآمد کئے جائیں گے جو اپنے اپنے مقررہ راستوں سے ہوتے ہو ئے مقررہ مقامات پر اختتام پذیرہوں گے ماتمی جلوسوں کے موقع پر عزادار تلواروں، زنجیر زنی کا ماتم کریں گے اس سلسلے میں قدیمی امام بارگاہوں کے لائسنسداروں ، متولیوں نے تمام انتظامات مکمل کر لئے ہیں جبکہ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے ماتمی جلوسوں کے موقع پرسیکیورٹی کے فول پروف انتظامات کئے گئے ہیں ماتمی جلوسوں کے روٹس پر داخلی و خارجی راستے بند رہیں گے ۔ 9 محرم الحرام کو ملتان میں 186 مجالس عزا منعقد ہوئیں اور جبکہ 82 ماتمی جلوس برآمد ہوئے ،مرکزی ماتمی جلوس امام بارگاہ گلستان زہرہؓ ممتاز آباد سے برآمد ہوا ، جس میں ہزاروں عزاداروں شرکت کی نو حہ خوانی کی گئی اور عزاداروں نے ماتم کیا ، اس موقع پر سیکیورٹی کے خصوصی اور سخت انتظامات کیئے گئے تھے ،علاوہ ازیں امام بارگاہ اُستاد والے سے سیج کے ماتمی جلوس قیادت کی لائسنسدارخلیفہ الطاف حسین، مخدوم قسور شمسی،سید وسیم عباس شمسی، سید خضر عباس جعفری، شاہ زیب نے کی ،جبکہ تحفظ عزاداری کے ضلعی صد،ر لائسنسدارقاضی غضنفر حسین اعوان کے زیراہتمام امام بارگاہ سجادیہ قا ضیان معصوم شاہ روڈ سے علم و ذوالجناح کے ماتمی جلوس سید طالب حسین پرواز، قاضی مظفر اعوان،قاضی حسن رضا،قاضی سجاد حسین،قاضی غیات حسین مہر محمداکرم کی قیادت میں برآمد ہوا، وہاڑی روڈ جیل موڑ سے علم و ذوالجناح کے ماتمی جلوس کی قیادت یوسی چیئرمین ججی ڈوگر،شیخ طاہر سخاوت حسین، کررہے ہیں جبکہ مہرغلام حسین،مہراللّٰدڈتہ، مہرریا ض حسین ،مہروسیم عباس،مرید حسین، سجاد حسین نے کی عباس پورہ میں ماتمی جلوس علم و ذوالجناح کے ساتھ متولی امجدرضا کربلائی کی قیادت میں بر آمدہوا،اس موقع پر متولی امجد رضا کربلائی نے کہا کہ حضرت امام حسینؒ نے اسلام کی خاطر اپنی جان قربان کردی مگر یزیدی طاقتوں کے آگے سر خم نہیں کیا ۔اس موقع پرشفقت حسنین بھٹہ ، سید طالب حسین پرواز نے شرکت کی۔ دربار حضرت پیرسید سخی سُلطان علی ا کبر شمسی پر سو رج میا نی میں نویں محرم الحرام زو الجناح کے ماتمی جلوس کی قیادت مخدوم سید قسور علی شمسی نے کی ۔علم و ذوالجناح کامرکزی ماتمی جلوس رہائش گاہ لائسنسدارسردار طالب حسین سنٹرل جیل روڈ سے برآمد ہوا جو اپنے مخصوص راستوں جیل موڑ مین وہاڑی روڈ سے ہوتا ہوا امام بار گاہ ابوذر غفاری پر اختتام پذیر ہوا سکیورٹی کے پیش نظردوران جلوس وہاڑی روڈ ہر قسم کی ٹریفک کے لیئے مکمل طو ر پر بند رہا مقامی امن کمیٹی کے ارکان جلوس کے ہمراہ رہے جلوس سے قبل مجلس عزا کا انعقاد کیا گیا ۔علاوہ ازیں دربار عالیہ حضرت شاہ شمس ؒ تبریز سبزواری کے سجادہ نشین مخدوم سید طارق عباس شمسی، دربار عالیہ حضرت سخی نواب ؒ کے سجادہ نشین مخدوم سید ذوہیب گیلانی نے کہا ہے کہ شہدائے کربلا کی قربانیاں ہمیں اس بات کا بھی درس دیتی ہیں کہ آپس میں اتحاد، اخوت ، امن اور بھائی چارے کی فضا کو قائم رکھا جائے ان خیالات کا اظہار انہوں نے دولت گیٹ کے علاقہ میں ملک اعجاز حسین سومرو کے زیراہتمام شبیہ زیارت حضرت شہزادہ علی اکبر ؑ کی یاد میں زیارت کی برآمدگی کے موقع پر خطاب کرتے ہو ئے کیا اس موقع پر سبطین رضا لودھی ، شیخ غلام جیلانی، نعیم صدیقی، طاہر امیر، ملک اعجاز حسین آرائیں، مظہر جعفری ،ریاض جعفری ودیگر نے شرکت کی اس موقع پر استحکام پاکستان، امن ، ترقی و خوشحالی اور سلامتی کے سلسلے میں خصوصی طور پر دعا کی گئی۔علاوہ ازیں امن کمیٹی کے ممبران کا خصوصی اور غیر رسمی اجلاس سرکٹ ہاؤس میں منعقد ہوا جس کے میزبان سید علی رضا گردیزی تھے جس کی صدارت ڈپٹی کمشنر ملتان مدثر ریاض ملک اور مہمان خصوصی صوبائی وزیر ڈاکٹر اختر ملک تھے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر ڈاکٹر اختر ملک نے کہا کہ حکومت شرپسندوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹے گی۔ کسی کو بھی قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دے گی۔ عزاداروں کو ہر ممکن سہولتیں فراہم کریں گے۔ ڈپٹی کمشنر مدثر ریاض ملک نے کہا کہ ملتان میں محرم الحرام کے انتظامات مکمل ہیں۔ تمام ادارے عزاداروں کو ہرممکن سہولتیں دینے میں مصروف ہیں۔ صفائی اور روشنی کے خصوصی انتظامات کئے گئے ہیں۔ سی پی او ملتان منیر مسعود نے کہا کہ مجالس اور جلوسوں کی مانیٹرنگ کیلئے کنٹرول روم قائم کردیا گیا ہے۔ جلوسوں کو حسب روایت سابقہ اوقات میں مقررہ راستوں سے گزارا جائے گا۔ ضرورت پڑنے پر سریع الحرکت فورس استعمال ہوگی۔اجلاس کے میزبان سید علی رضا گردیزی نے کہا کہ صحابہ کرام اور اہل بیت عظام کا احتترام ہمارے ایمان کا حصہ ہے۔ مقررین دل آزار گفتگو سے پرہیز کریں ۔ ممتاز عالم دین قاری محمد حنیف جالندھری نے کہا کہ اتحادِ امت کیلئے ہم اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے۔ قیام امن کیلئے انتظامیہ کے اقدامات قابل قدر ہیں۔ علما کرام نے ہمیشہ مثبت کردار ادا کیا ہے۔ اجلاس میں ملک سلیم لابر ، مفتی غلام مصطفی رضوی ، قاری احمد میاں ، خواجہ شفیق ، رحیم بخش اے ڈی سی ، ظہیر شیرازی اے سی سٹی ، شفقت حسین بھٹہ ، اصغر عباس نقوی ، مولانا عبدالحق مجاہد ، علامہ فاروق خان سعیدی ، ایوب مغل ، علامہ عنایت اللہ رحمانی ، علامہ خالد محمود ندیم ، ڈاکٹر صدیق قادری ، قاری عبدالغفار نقشبندی ، زاہد بلال قریشی ، قاری سیف اللہ ، مفتی عثمان پسروری ، بلال عطاری ، ظفر صدیقی ، محسن ہمدانی ، خاور بھٹہ ، انوار الحق ، ذوالفقار رضوی ، اختر عباس اعوان ، قاری سعید نقشبندی اور علما کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ دریں اثناء ممبر صوبائی اتحاد بین المسلمین کمیٹی پنجاب و تحفظ عزاداری حضرت امام حسین ؑ کے مرکزی صدر الحاج شفقت حسنین بھٹہ کے زیراہتمام امام بارگاہ حیدری کمیٹی محلہ شاہ شکور بر النگ دولت گیٹ سے دولت گیٹ چوک تک سینئر سیاستدان مخدوم جاوید ہاشمی کی قیادت میں حسینی ؑ امن ریلی نکالی گئی جس میں شرکاء نے شیعہ سنی بھائی بھائی، اتحاد بین المسلمین کے فلک شگاف نعرے لگائے ریلی میں علامہ عبد الحق مجاہد، سید علی رضا گردیزی، علامہ عنائیت اللہ رحمانی، سبطین رضا لودھی، ڈاکٹر محمد صدیق خان قادری، علامہ خالد محمود ندیم، زاہد بلال قریشی، سید طالب حسین پرواز، ڈاکٹر سید تراب رضا، علامہ سلیم حیدر، پیر عظمت سلطان سروری قادری، عامر شہزاد صدیقی، تاجر رہنما ظفر اقبال، سید حسن عباس رضوی، خاور حسنین بھٹہ، سہیل حسنین بھٹہ، سید محمد علی رضوی، میثم علی بھٹہ، عامر نقشبندی، ظفر صدیقی، ڈاکٹر سعید قاضی، ملک اکرم تھہیم، زاہد بشیر، رضا صدیقی،صاجزادہ محمد علی سلطان سمیت لائسنسداروں، متولیوں کے علاوہ معززین علاقہ نے بڑی تعداد میں شرکت کی اس موقع پر سینئر سیاستدان مخدوم جاوید ہاشمی نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ ملتان اولیاء اللہ کا شہر ہے اور امن کا گہوارہ ہے جہاں سے پاکستان سمیت پوری دنیا میں امن کا پیغام پہنچتا ہے ہم سب اکٹھے ہیں حسینی ؑ امن ریلی میں تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے علماء کرام، مشائخ عظام سمیت دیگر شعبہ ہائے نے شامل ہو کر ثابت کردیا ہے کہ ہم سب ایک ہیں اور متحد ہیں شہدائے کربلا نے امن کا پیغام دیا جنگ کا پیغام نہیں دیا فکر حسین ؑ ہم سب کے لئے مشعل راہ ہے علامہ عبد الحق مجاہد، علامہ خالد محمود ندیم علامہ عنائیت اللہ رحمانی نے کہا کہ اسلام و پاکستان دشمن قوتوں کی سازشوں کو متحد ہو کر ناکام بنائیں گے ہم سب ایک ہیں اور ہم میں کوئی اختلاف نہیں اس موقع پر پیر عظمت سلطان سروری قادری نے استحکام پاکستان، ترقی و خوشحالی اور امن و امان کے قیام کے سلسلے میں خصوصی طور پر دعا کرائی۔ادھر ضلعی پولیس نے 10محرم الحرام اج 21 ستمبر(جمعہ) کو تمام جلوسوں اور مجالس کیلئے سکیورٹی پلان تشکیل دے دیا ہے۔ جس کے مطابق ضلع ملتان میں کل117جلوس برآمد ہوں گے اور137مجالس منعقد ہوں گی۔ان میں سے 21جلوس اور36مجالس اے کیٹگری کے ہوں گے۔ سٹی پولیس آفیسر ملتان کی سرپرستی میں تمام ڈویژنل ایس پیز اپنے اپنے ڈویژن میں محرم سیکیورٹی کی نگرانی کریں گے اور وقتاً فوقتاً ڈیوٹی پر تعینات افسران اور اہلکاروں کو بریفنگ بھی دیں گے۔اس حوالے سے ضلع ملتان پولیس کے مجموعی طور پر 3066 پولیس افسران و اہلکار سیکیورٹی ڈیوٹی پر مامور ہوں گے۔جن میں 54انسپکٹرز170سب انسپکٹر266اسسٹنٹ سب انسپکٹرز،135ہیڈ کنسٹیبل اور2424کنسٹیبلان اپنے فرائض انجام دیں گے۔ اس کے علاوہ 10 ریزروز ڈسٹرکٹ پولیس لائن میں ہائی الرٹ رہیں گی جنھیں بوقت ضرورت استعمال کیا جائے گا۔بوقت ضرورت 400پولیس قومی رضاکاران اور 1700ولنٹئرز بھی معاونت کریں گے۔ رکن قومی اسمبلی مخدومزادہ زین حسین قریشی ‘صوبائی وزیر اختر ملک نے کہا کہ پنجاب کی طرح ملتان میں بھی محرم الحرام میں جلوسوں اور مجالس کیلئے مثالی انتظامات کئے گئے ہیں۔ اس سلسلے میں تمام انتظامیہ ۔ تمام مکاتب فکر کے علماء کرام اور امن کمیٹی کے ممبران سے رابطے میں ہیں۔ جبکہ ڈپٹی کمشنر آفس میں مرکزی کنٹرول روم بنایا گیا ہے۔ جہاں پر مجالس اور جلوسوں کو مانیٹر کیا جائیگا۔ عزاداروں کو ہر ممکن سہولیات فراہم کی جائیگی۔ اور کوشش کی جائیگی کہ جلوسوں کے اور مجالس کے دوران کسی قسم کی کوتاہی نہ ہو۔ مخدومزادہ زین حسین قریشی نے کہا کہ اس دفعہ حکومت نے محرم میں امن وامان کے قیام کیلئے بھرپور اقدامات کئے ہیں۔ عزاداروں کو سہولیات کی فراہمی کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں۔ نویں محرم کا ممتاز آباد کا مرکزی جلوس پر امن طریقے سے اختتام پذیر ہوا ہے۔ اور امید ہے آج ملتان سمیت ملک بھر میں یوم عاشور انتہائی پر امن طریقے سے منایا جائیگا۔ انہوں نے کہا ممتاز آباد جلوس کے لائسنس دار سید قمر نقوی اور جلوس کی دیگر انتظامیہ سے بات چیت ہوئی ہے۔ جو انتظامیہ کی طرف سے کئے گئے اقدامات سے مطمعئن ہیں۔ قبل ازیں صوبائی وزیر ڈاکٹر اختر ملک اور مخدومزادہ زین حسین قریشی نے نویں محرم کے ممتاز آباد کے مرکزی جلوس میں شرکت کی۔ حکومت کی جانب سے کئے جانے والے انتظامات کا جائزہ لیا۔ جلوس کے لائسنسدار سید قمر حسین نقوی اور دیگر عزاداروں سے ملاقات کی اور جلوس اور عزاداری کے حوالے سے اپنے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔ جبکہ میونسپل کارپوریشن اور ضلع کونسل کی انتظامیہ نے جلوس کے روٹس پر افسران اور اہلکاروں کی تعیناتی کاشیڈول جاری کردیا ہے اور جلوس کے روٹس پر آفیسران اور فوکل پرسن کو پی ٹی سی ایل نمبرز دینے کی ہدایت کی گئی ہے۔ ڈیوٹی پر نہ پہنچنے والے آفیسران کیخلاف پیڈا ایکٹ کے تحت کاروائی کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ علاوہ ازیں 9محرم الحرام کو حکومت کی ہدایت پر بند ہو نے والی موبائل فون سروس معطل ہو نے کی وجہ سے قدیمی امام بارگاہوں کے لائسنسدار، متولی پریشان ہو کر رہ گئے اور انہیں ماتمی جلوس روٹس پر سیکیورٹی اداروں کے ذمہ داروں اور دیگر محکموں کے افسران سے رابطہ منقطع ہو کر گیا جس کی وجہ سے انہیں شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا اور وہ مسائل کے حل کے لئے دن بھر متعلقہ محکموں کے افسران سے رابطوں کے لئے دن بھر مارے مارے پھرتے رہے۔ سید طالب حسین پرواز نے کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے 9محرم کو موبائل فون سروس بند کرنے کے لئے کم از کم اس بات کا ضرورخیال رکھنا چاہیئے تھا کہ ماتمی جلوسوں کے علاقوں میں ہی موبائل فون سروس بند کی جاتی اور مکمل طور پر بند نہ کی جاتی اور صرف دس محرم الحرام کو ہی موبائل فون سروس مکمل طور پر بند ہو تی موبائل فون سروس بند ہونے کی وجہ سے گذشتہ روز لائسنسداروں، متولیوں سمیت شہریوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا اور شہری بھی شدید پریشان رہے ۔

خانیوال ‘ مظفر گڑھ ‘ کوٹ ادو ‘ راجن پور ( بیورو نیوز ‘ نامہ نگار ‘ تحصیل رپورٹر ‘ ڈسٹرکٹ رپورٹر ) ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر خانیوال فیصل مختار کی ہدایت پر 10محرم الحرام کے حوالے سے سکیورٹی کے فول پروف انتظامات مکمل کر لئے گئے تفصیل کے مطابق ڈسٹرکٹ خانیوال میں 10محرم الحرام کو 82جلوس ہوں گے جن میں Aکیٹگری کے 6اور Bکیٹگری کے 6اور Cکیٹگری کے 70جلوس ہوں گے۔58مجالس میں Aکیٹگری کی 5،Cکیٹگری کی 53مجالس ہوں گی۔ضلع بھر میں 82جلوس اور مجالس 58کے لئے ضلع بھر کی نفری جو 1300سے زائد ہے ڈیوٹی سرانجام دیں گے۔جن میں چاروں سرکل کے ایس۔ڈی پی اوز اور ڈی ایس پی ٹریفک بھی ڈیوٹی دیں گے جن کے ساتھ ساتھ 18انسپکٹر ایس ایچ۔اوز اور 200سے زائد اپر سبارڈینیٹ ڈیوٹی دیں گے اسکے ساتھ ساتھ ایلیٹ فورس کی 2گاڑیاں گشت کناں رہیں گی۔ٹریفک ڈیوٹی ٹریفک کو رواں دواں رکھنے کے لئے اپنی ڈیوٹی دیں گے 82جلوسوں کے لئے 700سے زائد اہلکار ڈیوٹی دیں گے ان کے ساتھ ساتھ PQRکی تعداد 250تمام ڈیوٹی پر مامور ہوں گے۔وولینٹئر کی تعداد 650سے زائد ھے مجالس اور جلوس کے ساتھ ڈیوٹی پر مامور ہوں گے۔ 250لیڈیز مجالس میں ڈیوٹی ادا کریں گی۔دریں اثناء خانیوال میں دسویں محرم الحرام کا مرکزی جلوس آج بروز جمعۃ المبارک صبح10بجے مرکزی امام بارگاہ حسینیہ بلاک نمبر11سے برآمد ہوگا جلو س کے تمام راستوں اہل حدیث روڈ، گپی چوک، جامع مسجد روڈ، چوک سنگلانوالہ، کچہری بازار، ایوب چوک، ریلوے روڈ، پرانا خانیوال روڈ کو سیل کردیاگیا ہے پورے روٹ کی مرمت کردی گئی ایوب چوک میں نماز ظہرین ادا کی جائے گی ڈپٹی کمشنر اشفاق چوہدری، اے سی عبدالجبار نے امن کمیٹی کے ممبران کے ہمراہ پورے روٹ کا دورہ کیا ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر فیصل مختار کے مطابق ایک ہزار سے زائد سکیورٹی اہلکار ڈیوٹی کریں گے داخلی اور خارجی راستوں پر واک تھرو گیٹ نصب ہیں روٹ پر سی سی ٹی وی کیمرے لگائے ہیں عذاداران کی حفاظت اور جلوس کی نگرانی ہر طرح سے گریڈ ون کی گئی ہے ۔علاوہ ازیں پولیس ترجمان کے مطابق ضلع بھر میں تین ہزار سے زائد پولیس اہلکار اور رضا کار سیکیورٹی پر مامور ہیں، حساس مجالس اور جلوسوں پر ایلیٹ فورس کی ٹیمیں تعینات اور کیمروں کے ذریعے مانیٹرنگ کی جا رہی ہے، مجالس اور جلوسوں میں شامل ہونے والے افراد کی تھری لئیر یعنی واک تھروگیٹس,میٹل ڈیٹیکٹر اور فیزیکل سرچ کی جارہی ہے، مظفرگڑھ، کنٹرول روم میں لمحہ با لمحہ صورتحال کو مانیٹر کیا جارہا ہے،تمام پروگرامز مثالی امن کے ساتھ جاری ہیں،دریں اثناء ملک بھر کی طرح کوٹ ادو میں بھی آج یوم عاشور انتہائی عقیدت واحترام کے ساتھ منایا جائے گا،تحصیل کوٹ ادو کی کل 61امام بارگاہوں سے57تعزیے،پنگوڑے علم وجلوس برآمد ہوں گے،مرکزی جلوس امام بارگاہ نہنگ شاہ اوربخاری روڈسے برآمد ہوں گے،تحصیل کوٹ ادو انتہائی حساس قرار،15جلوس اے کیٹگری میں شامل،جلوسوں کی نگرانی کیلئے آرمی کے دستے بھی پہنچ گئے،روٹس کے راستوں پرواک تھرو گیٹ، سی سی ٹی کیمرے بھی نصب ،خار دار تاروں سمیت جلوس کے راستوں پر بیرئیر بھی لگادئے گئے،تحصیل کوٹ ادو کی 61امام بارگاہوں سے 57تعزیے،پنگوڑے علم وجلوس برآمد ہوں گے،لائسنسی مرکزی جلوس امام بارگاہ نہنگ شاہ اور موضع چوہدری سے لائسنسی نبی بخش بخاری روڈسے برآمد ہوگا،جو کہ اپنے مقررہ راستوں سے گزرتا ہوا ریلوے چوک پہنچے گا جہاں چھوٹے بڑے کئی جلوس اس میں شامل ہو جائیں گے،جہاں مجالس عزاء برپاکی جائے گی،بعدنماز عصر یہ جلوس ریلوے روڈ سے گزرتے ہوئے ریلوے لائن کراس کرکے امام بار گاہ حسینہ ٹبہ کربلا اختتام پذیر ہوں گے اس جلوس کو اے کیٹگری میں شامل کیا گیا ہے جبکہ شہر کے دیگر جلوس مرکزی امام بارگاہ غلام عباس شاہ لائسنسی آستانہ خادم حسین سے 10بجے برآمد ہو کر3بجے ٹبہ کربلا پہنچے گا،جبکہ ایک بڑا جلوس آستانہ اللہ وسایا سے برآمد ہو کر ٹبہ شہر کربلا پہنچے گا،مخدوم سجاد زوار حسین پتل روڈ سے ایک جلوس برآمد ہوگا جوکہ آستانہ اللہ وسایا والے جلوس کے ساتھ شامل ہو جائے گا،گذشتہ4 سال قبل جلوس کے راستے ریلوے لائن کراس سے بم برآمد ہونے اور پولیس وین پر بم حملہ اور واپڈا آفس کے سامنے بم بلاسٹ ہونے کے بعد تحصیل کوٹ ادو کو انتہائی حساس قرار دیا گیا ہے اور تحصیل بھر کے15جلوسوں کو اے کیٹگری میں رکھا گیا جبکہ 21بی اور21جلوسوں کو سی کیٹگری میں رکھا گیا گیا ہے،جلوسوں کی نگرانی کیلئے ساڑھے5سو سے زائد پولیس ملازمین اپر سپاڈی نیٹ،ہیڈ کانسٹیبل،کانسٹیبل رضاکارتعینات کئے گئے ہیں جبکہ آرمی کے چاق وچوبند دستے بھی کوٹ ادو پہنچ گئے ہیں جو کہ مجالس و جلوسوں کی حفاظت کریں گے ، تحصیل بھر میں جلوسوں کے راستوں پر90سے زائد سی سی ٹی وی کیمرے نصب کر دئے گئے جن سے تمام جلوسوں کی نگرانی کی جائے گی جس کیلئے اسسٹنٹ کمشنر آفس کوٹ ادو اورآرمی کی جانب سے واپڈا کالونی کوٹ ادو میں کنٹرول روم بھی قائم کر دیے گئے ہیں جبکہ30سے زائد واک تھروگیٹ60بیرئیرز،20سوبنڈل خار دار تاریں بھی پہنچ گئی ہیں جو کہ جلوس کے راستوں پر بچھادی گئی ہیں، دوسری طرف سے کسی نا ممکنہ حالات کے پیش نظرسخت حفاظتی انتظامات کئے گئے ہیں اور شہر کو چاروں اطراف سے سیل کر دیا گیا ہے،اس بارے ایس ڈی پی او شاہ عالم گشکوری نے بتایا کہ عاشورہ محرم کے جلوسوں کی نگرانی وہ خود کریں گے جبکہ تما م تھانوں کے ایس ایچ اوز بھی جلوسوں کے ہمراہ ہوں گے جبکہ حفاظت کیلئے سیکیورٹی کے سخت حفاظتی انتظامات کئے گئے ہیں اور پاک آرمی سمیت پولیس اور رینجرز کے دستے جلوسوں کی نگرانی کریں گے۔

مزید : کراچی صفحہ اول