بہاولنگر : پنچائتی فیصلے پر 13سالہ لڑکی وی ، ڈی پی او کا نوٹس 5افراد گرفتار

بہاولنگر : پنچائتی فیصلے پر 13سالہ لڑکی وی ، ڈی پی او کا نوٹس 5افراد گرفتار

بہاولنگر(ڈسٹرکٹ رپورٹر) پنچائت نے مظلوم خاندان کی 13 سالہ بچی کو ونی کردیا ۔ظفر نے پسند کی شادی کی جس کے جرم میں بااثر پنچائت نے اسکی بہن کو ونی کرنے کا حکم سنادیا، میڈیا کے پہنچنے پر ڈی پی او نے نوٹس لے لیا ،بائیس افراد کے خلاف مقدمہ درج کرکے ،پانچ گرفتارکر لیا۔ چک ہمدیرا کے رہائشی وزیر نامی شخص کے 19 سالہ بیٹے ظفر نے اپنے گاؤں کے اسلم کی بیٹی نادرا سے پسند کی شادی کی تھی ۔پسند کی شادی کی رنجش پر نادرا کے ورثاء نے ظفر کی13 (بقیہ نمبر54صفحہ12پر )

سالہ بہن کو گن پوائنٹ پر اغوا کرلیا ۔اغوا کرتے وقت ملزمان نے بچی کے والد سمیت دیگر ورثاء پر تشدد بھی کیا ۔13 سالہ گلشن کو اغوا کرکے مبینہ طور پر شہزاد نے بداخلاقی بھی کی اغوا کے پانچ روز بعد 13 سالہ گلشن کو پنچائت کے ذریعے واپس کیا گیا ۔ پنچائت نے ظفر اور نادرا کی شادی کے عوض لڑکے کی 13 سالہ بہن کو ونی کرنے کا فیصلہ سنایا ۔بااثر پنچائتیوں نے گن پوائنٹ پر 13 سالہ گلشن کے والد اور پھوپھا کے نکاح نامے پر انگوٹھے لگوائے جب میڈیا متاثرہ خاندان کے پاس پہنچاتو ڈی پی او بہاولنگر نے فوری طور پر نوٹس لیتے ہوئے بائیس افراد کے خلاف مقدمہ درج کر کے پانچ ملزمان کو گرفتار کر لیا ۔بااثر ملزمان کے خوف سے نذیر کی بیٹی اور بیوی نے دوسرے ضلع میں پناہ لی ہوئی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر