سینیٹر سراج الحق نے مختلف عوامی اور قومی ایشوز پرپارلیمانی بزنس سینیٹ میں جمع کروادیا

 سینیٹر سراج الحق نے مختلف عوامی اور قومی ایشوز پرپارلیمانی بزنس سینیٹ میں ...
  سینیٹر سراج الحق نے مختلف عوامی اور قومی ایشوز پرپارلیمانی بزنس سینیٹ میں جمع کروادیا

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سینیٹر سراج الحق نے مختلف عوامی اور قومی ایشوز پرپارلیمانی بزنس سینیٹ میں جمع کروادیا،وزیر اعظم کے گزشتہ دورہ امریکہ کے دوران ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی کے لیے ملاقاتیں،رابطوں،اور پیش رفت کے حوالہ سے تفصیلات مانگی گئی ہیں۔

تحاریک زیر قاعدہ 218کے تحت ملک بھر میں اساتذہ کو درپیش مشکلات،پولیس کی زیر حراست ملزموں کے ساتھ بدسلوکی،تشدد،اموات اور طاقت کے بے جا اور ناجائز استعمال ، بچوں ، بچیوں کے اغواء اور انکےساتھ زیادتی کےواقعات کی روک تھام کے حوالہ سے وفاقی حکومت کی ناکامی،ملک بھر میں ہر سطح کے بچیوں کے تمام تعلیمی اداروں میں بچیوں کومحفوظ ماحول کی فراہمی کے لیے سیکیورٹی عملہ کے علاوہ مردانہ عملہ کی جگہ خواتین عملہ رکھنے کا فی الفور انتظام کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ملک بھر میں ہر سطح کے تمام تعلیمی اداروں میں مخلوط تعلیم ختم کرنے کا انتظام کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے،وفاقی حکومت کےتحت سرکاری اورنیم سرکاری اداروں میں ملازم افرادکوسرکاری رہائشیں دینےکےفی الفور انتظام کرنے،اس پارلیمانی بزنس میں وفاقی حکومت کے تحت سرکاری اور نیم سرکاری اداروں میںکنٹریکٹ پر رکھے گئے افراد کو  فی الفور مستقل کرنے کا مطالبہ کیا گیا،ڈریپ کی طرف سے ادویات کی قیمتوں کا تعین کیےبغیررجسٹریشن کرنے کامعاملہ سمیت،صدر مملکت کی طرف سے اسلام آباد کے پچاس فیصد طلباء کےنشہ کےاستعمال کی نشاندہی،پاکستان ریلوے کی کارکردگی کوزیربحث لانے ، یوٹیلیٹی سٹورز پر مہنگائی میں اضافہ واپس لینے،موٹرویز پرٹول ٹیکس میں حالیہ10فیصد اضافہ کوواپس لینے،حالیہ مون سون بارشوں سےہونے والی تباہ کاریاں اوروفاقی حکومت کے اقدامات ،کے معاملات کو سینیٹ میں زیر بحث لانے،سفارش کرنے کی استدعا کی گئی ہے۔متذکرہ معاملات سوالات ,تحاریک زیر قاعدہ218  اورقراردادوں کے نوٹسزکے  تحت اٹھائے گئے ہیں۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...