وزیراعظم عمران خان دورہ سعودی عرب کے بعد امریکا پہنچ گئے

وزیراعظم عمران خان دورہ سعودی عرب کے بعد امریکا پہنچ گئے
وزیراعظم عمران خان دورہ سعودی عرب کے بعد امریکا پہنچ گئے

  


واشنگٹن(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم عمران خان دورہ سعودی عرب کے بعد امریکا پہنچ گئے ,اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی،مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ اور معاون خصوصی اوورسیز  سید ذلفی بخاری بھی وزیراعظم کے ہمراہ ہیں۔

نجی ٹی وی کے مطابق وزیراعظم دورے کے دوران امریکا میں روز ویلٹ ہوٹل میں قیام کریں گے،وزیراعظم کے استقبال کیلئے پاکستانی سفارتخانے کا عملہ روز ویلٹ ہوٹل پہنچ گیا ہے۔عمران خان 23ستمبر کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کریں گے جبکہ 23 ستمبر کو ہی وزیراعظم عمران خان اور ترک صدر طیب اردگان کے درمیان ملاقات ہوگی ۔وزیراعظم کی نیویارک میں کشمیری رہنماؤں سے بھی ملاقات طے ہے ،وزیراعظم ورلڈ بینک کے صدر اور بل گیٹس سے بھی ملیں گے۔وزیراعظم ملائیشیا اور بیلجیئم کے ہم منصبوں سے بھی ملاقات کریں گے۔ 27 ستمبر کو وزیراعظم جنرل اسمبلی سے خطاب بھی کریں گے ۔وزیراعظم چینی حکام سے بھی ملاقات کریں گے۔ وزیراعظم عالمی میڈیا کے نمائندگان سے بھی ملاقات کریں گے جس میں وہ مسئلہ کشمیر پر پاکستان کا موقف بیان کریں گے۔ دورے کے دوران سائیڈ لائن پر پاکستان، ترکی اور ملائیشیا کا سہ فریقی اجلاس بھی ہوگا۔

علاوہ ازیں ایک میڈیا رپورٹ کے مطابق سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے وزیر اعظم عمران خان کو کمرشل فلائٹ سے امریکا جانے سے روک دیا اور انہیں اپنا ذاتی طیارہ فراہم کردیا۔وزیر اعظم عمران خان دورہ سعودی عرب مکمل کرنے کے بعد امریکا کیلئے روانہ ہونے لگے تو سعودی ولی عہد نے وزیر اعظم سے سوال پوچھا کہ آپ امریکہ کیسے جائیں گے؟ جس پر انہیں بتایا گیا کہ وزیر اعظم عمران خان کمرشل فلائٹ سے امریکہ جائیں گے۔سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے وزیر اعظم عمران خان کو کمرشل فلائٹ سے امریکا جانے سے روک دیا اور کہا کہ آپ ہمارے مہمان ہیں اس لیے کمرشل فلائٹ سے امریکہ نہیں جاسکتے۔ ذرائع کے حوالے سے دعوی کیا ہے کہ سعودی ولی عہد نے وزیر اعظم عمران خان کو امریکاجانے کیلئے اپنا ذاتی طیارہ فراہم کردیا۔وزیر اعظم عمران خان پاکستانی وقت کے مطابق صبح 11 بجے سعودی عرب سے محمد بن سلمان کے ذاتی جہاز میں امریکہ کیلئے روانہ ہوئے۔

مزید : اہم خبریں /قومی


loading...