میجر عدیل شاہد شہید پورے فوجی اعزاز کے ساتھ سپرد خاک ،گورنر ،وزیراعلی سندھ ،کور کمانڈر کراچی اور ہزاروں افراد   کی شرکت

میجر عدیل شاہد شہید پورے فوجی اعزاز کے ساتھ سپرد خاک ،گورنر ،وزیراعلی سندھ ...
میجر عدیل شاہد شہید پورے فوجی اعزاز کے ساتھ سپرد خاک ،گورنر ،وزیراعلی سندھ ،کور کمانڈر کراچی اور ہزاروں افراد   کی شرکت

  


کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)پاک افغان سرحد پر دہشت گرودں کی جانب سے بارودی دھماکے میں شہید ہونے والےپاک فوج کےمیجر عدیل شاہد کی نماز جنازہ کراچی میں ادا کرنے کے بعد مقامی قبرستان میں پورے فوجی اعزاز کے ساتھ  تدفین کر دی گئی ،میجر عدیل شاہد کی نماز جنازہ میں گورنر سندھ عمران اسماعیل، وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ،کور کمانڈر کراچی سمیت سیاسی و سماجی رہنماؤں اور لوگوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

 تفصیلات کے مطابقگذشتہ روز پاک افغان سرحد پر بارودی سرنگ دھماکے میں شہید ہونے والے میجر عدیل شاہد کی  نماز جنازہ کراچی کے انچولی امام بارگاہ میں ادا کی گئی،نماز جنازہ میں گورنر سندھ عمران اسماعیل، وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ،کور کمانڈر کراچی،اپوزیشن لیڈر فردوس شمیم نقوی،رکن صوبائی اسمبلی عباس نقوی سمیت سیاسی و سماجی رہنماؤں اور لوگوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔نماز جنازہ کے بعد میجر عدیل شاہد کی میت کو وادی حسینؓ قبرستان میں پورے فوجی اعزاز کے ساتھ سپرد خاک کیا گیا،اس موقع پر پاک فوج کے چاق و چوبند دستے نے سلامی بھی پیش کی جبکہ شہید کی قبر پر پھول چڑھائے اور قومی پرچم بھی لہرایا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز دہشتگردوں نے ایک بار پھر پاک فوج کو نشانہ بنایا تھا، پاک افغان سرحد پر بارودی سرنگ کے دھماکے میں پاک فوج کے میجر اور ایک سپاہی شہید ہو گئے تھے۔آئی ایس پی آر کے مطابق میجر عدیل ضلع مہمند میں پاک افغان سرحد پر باڑ تنصیب کے کام کا جائزہ لینے والے سکواڈ کی قیادت کر رہے تھے۔ شہید میجر عدیل شاہد کا تعلق کراچی جبکہ شہید سپاہی فراز حسین کا کوٹلی آزاد کشمیر سے ہے۔ترجمان پاک فوج کا کہنا تھا کہ بارودی سرنگ سرحد پار سے آنے والے دہشتگردوں نے لگائی، یہ علاقہ دہشتگردوں کی آمدورفت کا اہم راستہ تھا۔یاد رہے کہ سرحد پر باڑ لگانے کے دوران افغانستان میں موجود دہشت گردوں نے وقفے وقفے سے متعدد مرتبہ پاک فوج پر حملے کیے ہیں جن میں کئی جوان شہید بھی ہوچکے ہیں۔گزشتہ روز کے واقعہ ان 2 واقعات کے ایک ہفتے سے بھی کم وقت میں ہوا ہے جس میں مغربی سرحد کے قریب فائرنگ سے پاک فوج کے 4 جوان شہید ہوئے تھے۔  شمالی وزیرستان میں اسپن وام کے علاقے اباخیل میں گشت پر مامور سیکیورٹی فورسز پر شدت پسندوں نے فائرنگ کردی تھی جس کے نتیجے میں بلتستان کے 23 سالہ سپاہی اختر حسین نے جام شہادت نوش کیا جبکہ جوابی کارروائی کے نتیجے میں دو دہشتگرد مارے گئے تھے۔اسی روز دیر میں پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے کے کام میں مصروف پاک فوج کے جوانوں پر دہشت گردوں نے فائرنگ کی تھی، جس کے نتیجے میں کم از کم 3 اہلکار شہید اور ایک شدید زخمی ہو گیا تھا۔یاد رہے کہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان 2 ہزار کلومیٹر سے زائد طویل سرحد پر باڑ لگانے کا کام جاری ہے اور پاکستان پہلے ہی 900 کلو میٹر سے زائد حصے پر یہ کام مکمل کرچکا ہے۔ اس باڑ لگانے کا مقصد شرپسندوں اور دہشت گردوں کی پاک افغان سرحد پر نقل و حرکت کو روکنا ہے۔

مزید : دفاع وطن /علاقائی /سندھ /کراچی


loading...