وفاقی حکومت خود کام نہیں کرتی اور نہ ہی فنڈز دیتی ہے:مرتضیٰ وہاب

وفاقی حکومت خود کام نہیں کرتی اور نہ ہی فنڈز دیتی ہے:مرتضیٰ وہاب
وفاقی حکومت خود کام نہیں کرتی اور نہ ہی فنڈز دیتی ہے:مرتضیٰ وہاب

  


کراچی(ڈیلی پاکستان آنلائن)پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت خود کام کرتی ہے اور نہ ہی صوبے کو  فنڈز دیتی ہے ، عمران خان نے کراچی آکر162ارب روپے ترقیاتی منصوبوں کا اعلان کیا مگر کراچی  اب بھی منتظر ہے کیونکہ کراچی پر ایک روپیہ کا خرچ نہیں کیا گیا،وفاق کی جانب سے سندھ کے حصے کے پورے پیسے نہیں دئے جارہے۔

 کورنگی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ انڈسٹری (کاٹی)میں ممبران سے خطاب کرتے ہوئے بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ وفاق کی جانب سے این ایف سی میں سندھ کے حصے کی رقم موصول نہ ہونے کے باعث 160ارب روپے کا شارٹ فال ہے جس کے باعث ترقیاتی منصوبے متاثر ہورہے ہیں، گزشتہ سال 95ارب کا شارٹ فال تھا جبکہ اس سال جولائی اور اگست کے دوماہ میں 60ارب روپے کا شارٹ فال ہے،کراچی ہم سب کا ہے، کراچی چلے گا تو ملک چلے گا، وفاقی حکومت کام نہیں کرتی اور نہ ہی صوبے کو  پیسے دیتی ہے،میں چیلنج کرتا ہوں وفاقی حکومت نے ایک پیسوں کا کام نہیں کیا،نہ ہی بجٹ بک میں کراچی پیکیج کی رقم کا کوئی ذکر  موجود ہے،جو ساڑھے 12 ارب رکھے گئے ہیں اس میں سے8ارب روپے میاں نوازشریف حکومت کے پیکیج کے ہیں۔انہوں نے کہا کہ گورنر صاحب نے ایک چینل پر آکر کہا کہ 42 ارب ہیں جس میں کراچی کے ساڑھے 12 ارب روپے اپنے بجٹ میں رکھے گئے ہیں،میں  یہ چیلنج سے کہہ سکتا ہوں کہ وہ غلط کہہ رہے ہیں،16ستمبر  2018کو خان صاحب کراچی آتے ہیں اور المیہ یہ ہے کہ 10منٹ وزیراعظم نے ٹائم دیا ، یہ انکی سندھ سے دلچسپی ہے، سوال ہم سے ہوتا ہے تو وفاق سے بھی ہوناچاہیے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی


loading...