محکمہ صحت لودھراں:300ملازمین کی اپ گریڈیشن جعلی قرار 

  محکمہ صحت لودھراں:300ملازمین کی اپ گریڈیشن جعلی قرار 

  

 گوگڑاں (نمایندہ پاکستان) سیکرٹری ہیلتھ کے بعد آڈیٹر جنرل آف پنجاب نے بھی محکمہ صحت کی اب گریڈیشن کو  بوگس قرار دے کر ریکوری ڈال دی لیٹر وصول ہوتے ہی مافیاز کی نیندیں حرام ہوگئیں تفصیلات کے مطابق روز نامہ پاکستان کی نشان دہی سچ ثابت ہوئی محکمہ صحت کی طرف سے  تین سو ملازمین کی جعلی اپ گریڈیشن کی حقیقت کھل کر سامنے آگئی سیکرٹری ہیلتھ کی(بقیہ نمبر45صفحہ 6پر)

 طرف سے چند روز قبل اس اب گریڈیشن کو جعلی اور بوگس کہا گیا تھا  اب آڈیٹر جنرل پنجاب نے بھی اس اب گریڈیشن  کو جعلی اور بوگس قراردیتے ہوئے تقریباً دو کروڑ روپے کی ریکوری ڈالتے ہوئے فوری طور پر ملازمین کو ریوارڈ کرنیکا لیٹر جاری کردیا ہے گزشتہ روز لیٹرکی وصولی کے بعد لاکھوں روپے اب گریڈیشن کی مد میں رشوت وصول کرنے والے مافیاز کی نیدیں حرام ہو گئی کیونکہ اگر یے اب گرڈیشن ریوارڈ پر عملدرآمد کیا جاتا ہے تو محکمہ صحت کے تمام ملازمین سے اب گریڈیشن کی مد میں جمع کیے گیے تمام پیسے بھی واپس کرنا ہونگے جس وجہ سے، مافیاز دن رات اس جعلی اب گرڈیشن کو برقرار رکھنے کیلئے سیاسی ڈیروں کے چکر لگا رہے ہیں تاکہ سی او ہلیتھ کو پریشر دلوا کر ملازمین کو ریکوری ڈلنے سے بچایا جاسکے لودھراں کی عوامی و سماجی حلقوں نے روز نامہ پاکستان کی اس بہترین کاوش کو سراہا  لودھراں کے عوامی حلقوں نے کہا کہ روز نامہ پاکستان  نے  محکمہ صحت  میں جعلی اب گرڈیشن کی مد میں کی جانے والی کرپشن کو بروقت شائع کرکے اعلی افسران سے ایکشن کراتے ہوئے سرکاری خزانے کو مزید نقصان ہونے سے بچا لیا جس پر روز نامہ پاکستان کی تمام ٹیم کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں اور ڈپٹی کمشنر لودھراں  سید عمران قریشی سے مطالبہ کرتے ہیں کہ فوری طور پر جعلی اب گریڈیشن والے تمام ملازمین کو ریکوری ڈالتے ہوئے ان کو ریوارڈ کیا جائے تاکہ محکمہ صحت میں ہونے والی تمام دو نمبری کا خاتمہ ہوسکے۔

جعلی قرار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -