مظفرگڑھ:نیوجوڈیشل کمپلیکس،وکلاء کالونی کی تعمیر کامنصوبہ کھٹائی کاشکار

مظفرگڑھ:نیوجوڈیشل کمپلیکس،وکلاء کالونی کی تعمیر کامنصوبہ کھٹائی کاشکار

  

مظفرگڑھ(نامہ نگار) مظفرگڑھ میں انڈس ہسپتال اور ترکش کالونی کے نزدیک ڈیرہ غازی خان روڈ پر نیو جوڈیشل کمپلیکس اور وکلاء کالونی کی تعمیر کا منصوبہ التواء,کا شکار ہوگیا۔, مظفرگڑھ میں پنجاب حکومت نے 1176 کنال اراضی وکلاء کالونی اور 735 کنال اراضی نیو جوڈیشل کمپلیکس اور جوڈیشل کالونی کے لئے موضع رکھ خانپور شمالی میں مختص کی تھی, ابتدائی طور (بقیہ نمبر22صفحہ 6پر)

پر سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے مظفرگڑھ بار کو وکلاء  کالونی کے لئے ایک کروڑ روپے کی گرانٹ جاری کی, جو اس وقت بار کے اکاؤنٹ میں موجود ہے, اب جوڈیشل کمپلیکس اور وکلاء  کالونی کے لئے مختص اراضی میں سے این ٹی ڈی سی نے بغیر بلااجازت بجلی کی ہیوی لائن گزار دی, جس سے لوکیشن خراب ہو گئی, ہے اس بارے صدر بار مظفرگڑھ ملک ارشد حسین بھٹی اور جنرل سیکرٹری زبیر خان سہرانی نے سیشن جج مظفرگڑھ عبدالرحمن بودلہ اور ڈی سی مظفرگڑھ امجد شعیب ترین کو آگاہ کیا, چنانچہ بار عہدے داران اور انتظامی افسران نے سیشن جج کے ہمراہ جگہ کا معائینہ کیا, جبکہ سیشن جج نے ڈی سی کو اس حوالے سے پراگریس رپورٹ بنانے اور محکمہ ریونیو کو اراضی کی نشان دہی کر کے اسے محفوظ بنانے کی ہدایت کی ہے, صدر بار ملک ارشد ایڈووکیٹ نے بتایا کہ جلد چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ سے ملاقات کر کے انہیں صورت حال سے آگاہ کیا جائے گا, تاکہ ابتدائی مرحلے میں نیو جوڈیشل کمپلیکس مظفرگڑھ کی تعمیر کے لئے حکومت پنجاب سے فنڈز کو جاری کرایا جا سکے, یہ امر قابل ذکر ہے کہ وکلاء  کالونی کی اراضی کے قبضے کے بارے محکمہ ریونیو کے خلاف بار کی رٹ پٹیشن عدالت عالیہ ملتان بنچ میں زیرسماعت ہے۔

منصوبہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -