اے این پی ان ہاوس تبدیلی کی حمایت نہیں کرتی، ایمل ولی خان 

  اے این پی ان ہاوس تبدیلی کی حمایت نہیں کرتی، ایمل ولی خان 

  

نوشہرہ (بیورورپورٹ ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ عوامی نیشنل پارٹی ان ہاوس تبدیلی کی حمایت نہیں کرتی کیونکہ پی ٹی آئی حکومت اس ملک کے لئے سیکورٹی رسک بن چکی ہے نئے انتخابات ناگزیر ہو چکے ہیں شوگر مافیا، کرپٹ مافیا، پیٹرول مافیا کا مزید اقتدار میں رہنا ملک کیلئے خطرناک ہے اگر اپوزیشن جمایتیں اب بھی متحد نہ ہوئیں تو ملکی سیاسی، اقتصادی اور معاشی صورتحال مزید بڑجائے گی ان خیالات کا اظہار اانہوں نے نوشہرہ میں حلقہ پی کے 63پر ضمنی انتخابات کے امیدوارانجینئر میاں وجاہت کاکاخیل کے انتخابی مہم کے سلسلے میں ایک اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ضلعی صدر جمال خان خٹک، جنرل سیکرٹری انجینئر حامد علی خان، تحصیل نوشہرہ صدر زاہد خا ن اور امیدوار حلقہ پی کے 63انجینئر میاں وجاہت کاکاخیل نے بھی خطاب کیا جبکہ مرکزی کونسل کے رکن میاں یحییٰ شاہ کاکاخیل، شازیہ اورنگزیب، سلیمہ جہانگیر،سکندر مسعود عباس خٹک، بابر شاہ کاکاخیل، ملگر ی وکیلان کے صدر ظفر اللہ خان ایڈوکیٹ،تحصیل پبی کے صدر زر علی خان، تحصیل جہانگیرہ کے صدر اطلس خان خٹک، ملگری لیکوالان کے صدر میاں لطیف شاہ شاہد،ملگری استاذان کے صدر محمد ناہید خان سمیت دیگر زیلی تنظیموں کے عہدیداران بھی اجلاس میں موجود تھے واضح رہے کہ اس موقع پر رحمان بابا کالونی نوشہرہ کینٹ کے محمد گل عرف واہ واہ خان کی قیادت میں امیر محمد، زبیر خان، آصف، نور الرحمان، اپنے خاندانوں اور درجنوں ساتھیوں سمیت پی ٹی آئی اور پی پی پی سے مستفی ہو کر عوامی نیشنل پارٹی میں شامل ہو گئے ایمل ولی خان نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ موجودہ حکومت ملکی تاریخ کی سب سے کرپٹ اورناکام ترین حکومت ہے خیبر پختونخوا سمیت ملک بھر میں جاری میگا کرپشن پر نیب سمیت دیگر تحقیقاتی اداروں کی خاموشی معنی خیز اور سمجھ سے بالاتر ہے کیونکہ معالم جبہ، بلین سونامی ٹری منصوبہ سمیت بی آر ٹی منصوبوں میں اپنی بھاری کمیشن کی خاطر قوم کے اربوں روپے ضائع کر دئیے گئے ہیں اور بی آرٹی کا مستقبل سابقہ جی ٹی ایس کی سی نظر آرہی ہے انہوں نے مزید کہا کہ قت کا تقاضا ہے کہ اپوزیشن جماعیتں متحد ہو جائیں اور قوم کو ان کرپٹ حکمرانوں سے چھٹکارا دلاکر اقتدار جمہوریت پسنداور عوام کے حقیقی نمائندوں کے حوالے کریں ویسے بھی حلقہ پی کے 63کے ضمنی انتخابات میں نوشہرہ سے سیاسی قبضہ گروپ کا خاتمہ ہونے والا ہے اور وہ بھی عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار کے ہاتھوں انہوں نے کہا  الحمداللہ عقیدہ ختم نبوت پر مکمل یقین اور اعتماد ہے او ر جدی پشتی اسلام کے ٹھیکیداروں سے بہتر سچا اور کھرا مسلمان ہوں لیکن اس وقت میرے بیان کو سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا تھا جس کا مقصد بد نیتی کے سوا کچھ نہیں تھا انہوں نے کہا کہ جنگ کفر اور اسلام کا نہیں بلکہ جنگ وسائل پر اختیار کا ہے جو 18ویں ترمیم کی شکل میں پختون قوم وہ جنگ جیت چکی ہے اب مزید اپنے وسائل پر کسی اور کا اختیار برداشت نہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -