نوشہرہ میں انسداد پولیو مہم کا باقاعدہ آغاز

نوشہرہ میں انسداد پولیو مہم کا باقاعدہ آغاز

  

پبی (نما ئندہ پاکستان) صوبہ خیبر پختونخوا کے دیگر علاقوں کی طرح نوشہرہ میں انسداد پولیو قطرے پلانے کی مہم کا باقاعدہ آغاز کردیا گیا۔چئیرمین قائمہ کمیٹی برائے توانائی ڈاکٹر عمران خٹک اور وزیر اعلیٰ کے مشیر برائے خوراک میاں خلیق الرحمن نے بچوں کو انسداد پولیو کے قطرے پلاکر مہم کا باقاعدہ آغاز کردیا۔ نوشہرہ میں 21 ستمبر سے 25 ستمبر تک شروع ہونیوالی انسداد پولیو مہم کے دوران اڑھائی لاکھ بچوں کو قطرے پلانے کا ٹارگٹ رکھا گیا ہے۔ پانچ روزہ مہم کے لئے کے لئے ضلع نوشہرہ میں 1241 ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔تفصیلات کے مطابق ملک کے دیگر اضلاع کی طرح نوشہرہ میں بھی بچوں کو انسداد پولیو قطرے پلانے کی قومی مہم آج سے شروع ہو رہی ہیں۔ پانچ روزہ مہم 21 ستمبر سے25 ستمبر تک جاری رہیگی۔ مہم کے دوران اڑھائی لاکھ بچوں کو انسداد پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔ جس کے لئے ضلع بھر میں 1241 خصوصی ٹیمیں تشکیل دیدی گئی ہیں۔ اس حوالے سے نوشہرہ کی تحصیل پبی میں انسداد پولیو کی مہم کا باقاعدہ افتتاح ہوا۔ چئیرمین قائمہ کمیٹی برائے توانائی ڈاکٹر عمران خٹک اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے مشیر برائے خوراک میاں خلیق الرحمن نے پانچ سال سے کم عمر کے بچوں کو انسداد پولیو کے قطرے پلا کر مہم کا آغاز کیا۔ اس موقع پر چئیرمین قائمہ کمیٹی ڈاکٹر عمران خٹک اور مشیر خوراک میاں خلیق الرحمن نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آج سے ملک بھر میں انسداد پولیو مہم شروع ہو رہی ہے پولیو ورکر محکمہ صحت کے اہلکارہمارے بچوں کے صحت مند اور خوشحال مستقبل کی خاطر گھر گھر جائیں گے عوام ان سے بھرپور تعاون کریں اور اپنے پانچ سال تک بچوں کو انسداد پولیو کے قطرے ضرور بلوائیں۔ تاکہ ہمارے ملک و قوم کا مستقبل محفوظ بن سکیں۔ انہوں نے کہا کہ پولیو کے مکمل خاتمے تک ملک میں یہ مہم جاری رہے گی۔ اور ہماری اولین ذمہ داری ہے کہ اپنے بچوں کا مستقبل محفوظ بنا ئیں۔ بچوں کو معذور ہونے سے بچانے کے لئے ہر بار ہمیں اپنے بچوں کو انسداد پولیو کے قطرے پلوانے ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ اگر کسی بچے تک پولیو کی ٹیم نہ پہنچ پائیں تو والدین خود قریبی مرکز لے جاکر ان کو انسداد پولیو کے قطرے ضرور پلوائیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -