متفرق ویلج کونسلزکے خلاف کمالی حلیمزئی عوام کاقومی جرگہ

 متفرق ویلج کونسلزکے خلاف کمالی حلیمزئی عوام کاقومی جرگہ

  

 مہمند(نمائندہ پاکستان)غازی بیگ بازارمیں مشتہر غیر منصفانہ اور متفرق ویلج کونسلزکے خلاف کمالی حلیمزئی عوام کاقومی جرگہ۔ویلیج کونسلز کے تقسیم میں علاقے کیساتھ ناانصافی اور امتیازی سلوک ہوا ہے۔انصاف کیلئے عدالت کا دروازہ کھٹکھٹا نے اورآئندہ ہفتہ کورٹ سے رجوع کرنے کا فیصلہ۔کیس اخراجات کے لئے قومی چندہ اکھٹا کرلیا۔جرگے کا اعلامیہ۔قبائلی اضلاع کے انضمام کے ساتھ بلدیاتی نظام رائج کرنے کے لئے گزشتہ روز الیکشن آفس غلنئی میں اعتراضات کے لئے تشکیل کردہ ویلج کونسلز اور نیبر ہوڈ کونسلز مشتہر کئے گئے۔جس پر کمالی حلیمزئے نے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے غازی بیگ بازار میں قومی جرگہ کیا۔اور علاقے کے عوام میں تشکیل کردہ و یلج کونسلوں میں ناانصافی اور امتیازی سلوک کا خبر جنگل کے آگ کے طرح پھیل گیا۔اور مذکورہ جرگہ میں تمام پارٹیوں سمیت علاقے کے عمائدین اور عوام نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔جرگہ سے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے حاجی رحیم پی پی پی، نوید خان جے آئی، گلاب شیر اے این پی، جہانگیر پی ٹی آئی سمیت دیگر نے کہا۔کہ تیارکردہ ویلج کونسلوں میں علاقے کے ساتھ ناانصافی ہوا ہے۔اور متعلقہ محکمہ نے جان بوجھ کر منظور نظر اور بااثر علاقوں میں کم ابادی پر جبکہ اس کے برعکس پسماندہ اور دور دراز علاقوں میں زیادہ ابادی پر ویلج کونسل تشکیل دی ہیں۔اور یہ تمام تر کاروئیاں راتوں رات بند کمروں میں سرانجام دی ہیں۔اور اب بھی متعلقہ محکموں کے ساتھ جغرافیائی، قومی اور ابادی کے لحاظ سے کوئی ریکارڈ موجود نہیں۔مقررین نے واضح کیا کہ مذکورہ ناانصافی اور امتیازی سلوک کا اہلیان علاقہ کو ایک ماہ پہلے انکشاف ہوا تھا۔جس پر ڈی سی مہمند سمیت لوکل گورنمنٹ اور الیکشن کمیشن کے ذمہ داران کے علاوہ دوسرے محکموں میں بھی اپنے فریاد کی۔اور ڈی سی سمیت تمام متعلقہ محکموں کے افسران کو باقاعدہ درخواستیں دیدی۔کہ مذکورہ علاقے کے ساتھ باقی ضلع کے طرح پالیسی اپنایا جائے۔اور علاقے کے ساتھ ہونے والے ناانصافی اور امتیازی سلوک پر نظرثانی کی جائے۔مگر تاحال کوئی شنوائی نہ ہوسکی۔مگر اب اہلیان علاقہ کے ساتھ مشتہر کئے گئے ویلج کونسلوں میں انصاف دلانے کے لئے عدالت کے سوا کوئی اورراستہ نہیں۔ جن کے لئے جرگہ نے قومی چندہ کرکے آئندہ ہفتہ عدالت سے رجوع کرنے کافیصلہ کرلیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -