کوئی روئے یا ہنسے آئندہ بھی پی ٹی آئی کی حکومت ہوگی: اسد قیصر 

  کوئی روئے یا ہنسے آئندہ بھی پی ٹی آئی کی حکومت ہوگی: اسد قیصر 

  

صوابی (بیورورپورٹ)سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے دو ٹوک الفاظ میں واضح کر دیا ہے کہ اگر کوئی ہنسے یا رویے پاکستان میں آئندہ بھی پی ٹی آئی کی حکومت ہو گی عوام اس سلسلے میں ٹینشن نہ لے۔ پی ٹی آئی پانچ سال پورے کرئے گی ان خیالات کااظہار انہوں نے موضع کلابٹ میں سوئی گیس کی افتتاحی تقریب سے خطاب کر تے ہوئے جس سے حاجی عاقب اللہ خان نے بھی خطاب کیا۔ سپیکر اسد قیصر نے اپوزیشن کی طرف اشارہ کر تے ہوئے کہا کہ آج پاکستان پر مسلسل حکمرانی کرنے والی سارے سیاستدان اس لئے اکٹھے ہوئے ہیں کہ یہ ملک کی تاریخ میں پہلی بار عوام پر حکمرانی کرنے سے نکل چکے ہیں انہوں نے کہا کہ گذشتہ تیس سالوں سے پی پی پی اور مسلم لیگ ہمیشہ سندھ اور پنجاب کے علاوہ کئی بار وفاقی سطح پر بھی حکومت کر تی رہی انہوں نے کہا کہ سابقہ حکمرانوں کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ملک معاشی لحاظ سے بحران سے گزر رہاہے انہوں نے کہا کہ سپیکر قومی اسمبلی کی حیثیت سے میں نے جو بھی کچھ کیا ہے وہ قانون کے عین مطابق اور ملک کے وسیع تر مفاد میں کیا ہے اور مستقبل میں بھی کرونگا انہوں نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلے بھی صوابی کو اہم نمائندگی یا پوزیشن نہیں دی گئی تھی لیکن پی ٹی آئی نے اقتدار میں آکر صوابی کو وفاقی حکومت میں مضبوط نمائندگی دی اور آج عملاً صوبے اور مرکز میں ''صوابی والوں کی حکومت ہے''۔صوابی کو اختیار اور حق ملنے پر نہ صرف صوبائی وزیر بلکہ وفاقی وزراء بھی صوابی آتے رہیں گے۔ صوابی کے ترقی کے لئے سب مل کر عملی اقدامات اُٹھائیں گے۔تقریب سے وفاقی وزیر پانی و بجلی عمر ایوب خان نے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ پارلیمنٹ میں صحیح معنوں میں سپیکر اسد قیصر ہی اپنے ضلع اور عوام کی نمائندگی کر رہے ہیں اور اس کا سارا کریڈٹ صوابی کے عوام کو جارہا ہے کیونکہ عوام ہی نے اسد قیصر کا درست انتخاب کیا تھا۔ انہوں نے سپیکر اسد قیصر کے حلقے میں تین ارب روپے کی لاگت سے گیس کے منصوبے پر کام جاری ہیں اتنی کثیر رقم اس سے قبل کسی رکن اسمبلی نے حکومت سے منظور نہیں کرائی ہیں یہ سپیکر اسد قیصر کی محنت، محبت اور جدوجہد کا نتیجہ ہے صوبائی وزیر تعلیم شہرام خان ترکئی کا حلقہ شامل کر کے کل ساڑھے چار ارب روپے کی لاگت سے گیس کے منصوبے پر کا م جاری ہیں انہوں نے کہا کہ جب بھارت نے بالا کوٹ پر حملہ کیا تو عمران خان واحد وزیر اعظم تھے جنہوں نے بھارت کو جواب دیا کہ پاکستان پہلے بھارتی حملے کا جواب دیگا اس کے بعدبات چیت کی جائے گی۔ اس پر چوبیس گھنٹے کے اندر اندر کارروائی کر کے پاکستان میں بھارت کے دو طیارے مار گرائے یہ وزیر اعظم عمران خان کی بہتر پالیسیوں کا نتیجہ ہیں آج پاکستان دشمن کے تمام عزائم خاک میں ملانے سے دریغ نہیں کریگا اور کوئی بھی وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں پاکستان کو میلی نظر سے نہیں دیکھے گا۔ مودی سر کار پاکستان کے خلاف اپنی سازشوں میں ناکام ہونگے۔ 

مزید :

صفحہ اول -