اپوزیشن کے نئے سیاسی اتحاد کا نام پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ رکھا گیا لیکن یہ کس کی تجویز تھی؟مقامی اخبار نے دعویٰ کردیا

اپوزیشن کے نئے سیاسی اتحاد کا نام پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ رکھا گیا لیکن یہ ...
اپوزیشن کے نئے سیاسی اتحاد کا نام پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ رکھا گیا لیکن یہ کس کی تجویز تھی؟مقامی اخبار نے دعویٰ کردیا

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک)نوائے وقت نے دعویٰ کیا ہے کہ  آل پارٹیز کانفرنس میں نئے سیاسی اتحاد کا نام پاکستان مسلم لیگ (ن) کی تجویز پر پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ رکھا گیا۔ مولا نا فضل الرحمن اس اتحاد کا نام ”میثاق پاکستان“ رکھنا چاہتے تھے۔

رپورٹ کے مطابق آل پارٹیز کانفرنس میں فوری طور اسمبلیوں سے استعفے دینے پر اتفاق رائے نہ ہو سکا۔ نواز شریف نے کہا کہ وہ اصولی طور پر استعفے دینے کے حق میں ہیں۔ مولانا فضل الرحمن سے اتفاق کرتا ہوں وہ جب چاہیں استعفے دے دیں گے۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ نواز شریف پاکستان واپس آئیں ہم اپنے استعفے ان کے حوالے کریں گے وہ جا کر استعفے اسمبلیوں کے حوالے کر دیں۔ ذرائع کے مطابق پی ڈی ایم کے صدر کے بارے میں تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔ جب نوائے وقت نے اس سلسلے میں استفسار کیا تو بلاول بھٹو نے کہا کہ اس بات کا بھی جلد فیصلہ کر لیا جائے گاتاہم ان ہاﺅس تبدیلی اور اجتماعی استعفوں کے بارے میں مناسب وقت کا فیصلہ کرنے کے لئے کمیٹی قائم کی جا رہی ہے۔

مزید بتایا گیا کہ  مشترکہ اعلامیہ میں بار بار تبدیلی کی وجہ سے پریس کانفرنس میں تاخیر ہو گئی۔ مریم نواز نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ میاں شہباز شریف کا موقف مختلف ہو سکتا ہے لیکن جب میاں نواز شریف جو فیصلہ کر دیتے اس پر حرف بہ حرف عمل درآمد کرتے ہیں۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -