عمران خان نے نوازشریف سمیت سب کی تقاریر دکھانے کی اجازت دی لیکن مولانا فضل الرحمان کی تقریر کس نے روکی ؟ حکومت نے بڑا دعویٰ کر دیا 

عمران خان نے نوازشریف سمیت سب کی تقاریر دکھانے کی اجازت دی لیکن مولانا فضل ...
عمران خان نے نوازشریف سمیت سب کی تقاریر دکھانے کی اجازت دی لیکن مولانا فضل الرحمان کی تقریر کس نے روکی ؟ حکومت نے بڑا دعویٰ کر دیا 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمٰن کی پریس کانفرنس ہم نے نہیں روکی بلکہ اسے خود اے پی سی نے نہیں جانے دیا۔

 وفاقی وزرا شاہ محمود قریشی، اسد عمر اور فواد چوہدری کے ہمراہ پریس کانفرنس میں انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے فیصلہ کیا تھا کہ نواز شریف سمیت تمام اپوزیشن رہنماوں کی تقاریر کو براہ راست چلنے دیا جائے، جس کے باعث نواز شریف، آصف زرداری اور بلاول بھٹو کی تقریر نشر ہوئی ۔تاہم انہوں نے کہا کہ فضل الرحمٰن کی تقریر ہم نے نہیں روکی بلکہ پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ (ن) نے ان کی تقریر نہیں جانے دی، ہم تو اس کے لیے تیار تھے کہ وہ بھی بات کرتے۔

انہوں نے کہا کہ اے پی سی میں نواز شریف نے الیکشن کے عمل کو مشکوک بنانے کی کوشش کی اور اس انتخابات کو دھاندلی زدہ بنانے کی کوشش کی، تاہم حقائق اور تاریخ کچھ اور بتاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ نوازشریف ملک کے 3 مرتبہ وزیراعظم رہے تب تو وہ الیکشن ٹھیک تھے لیکن شاید انہیں صاف اور شفاف انتخابات کی عادت نہیں ہے اور اس مرتبہ صاف و شفاف الیکشن ہوئے اور اس میں وہ حکومت نہیں بناسکے اور حکومت بنانے جتنی نشستیں حاصل نہیں کرسکے تو اس پر وہ سیخ پا ہیں۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -