نوجوان لڑکی نے 50 کلو وزن کم کرلیا، دیکھ کر آنکھوں پر یقین نہ آئے

نوجوان لڑکی نے 50 کلو وزن کم کرلیا، دیکھ کر آنکھوں پر یقین نہ آئے
نوجوان لڑکی نے 50 کلو وزن کم کرلیا، دیکھ کر آنکھوں پر یقین نہ آئے
کیپشن:    سورس:   Instagram/jenatkinuk

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک ) موٹاپے سے نجات حاصل کرنا جان جوکھوں کا کام ہے لیکن برطانیہ میں ایک ماڈل نے حیران کن طور پر موٹاپے میں کمی کرکے ایسی کامیابی بھی حاصل کر لی کہ سن کر یقین کرنا مشکل ہو جائے۔ میل آن لائن کے مطابق اس 26سالہ ماڈل کا نام جین ایٹکن ہے جس کا وزن 114کلوگرام سے زائد تھا اور وہ گوشت کا پہاڑ لگتی تھی۔ وہ برطانیہ کے مقابلہ حسن ’مس گریٹ بریٹن 2020ء‘ میں حصہ لینا چاہتی تھی لیکن اس موٹاپے کے ساتھ وہ اس کی اہل قرار نہیں پا سکتی تھی چنانچہ اس نے وزن میں کمی لانے کا فیصلہ کر لیا۔

رپورٹ کے مطابق جین نے اپنی خوراک کو صحت مندانہ بنایا، اس سے پیزا، برگر اور دیگر ایسی ناقص اشیاءکو نکال دیا اور ورزش کرنے لگی اور بہت کم عرصے میں اس نے اپنے وزن میں 50کلوگرام سے زائد کمی کر ڈالی اور سلم سمارٹ لڑکی بن گئی۔ اس کے بعد اس نے ’مس جی بی‘ میں حصہ لیا اور تاج اس کے سر سجا دیا گیا۔ جین ایٹکن کا کہنا تھا کہ دو سال قبل میں نے مس جی بی کے لیے اپلائی کیا تھا لیکن مجھے موٹاپے کا شکار کہہ کر مسترد کر دیا گیا۔ سوسائٹی میں بھی لوگ موٹاپے کی وجہ سے میرا مذاق اڑاتے تھے۔ میرے خیال میں موٹاپا کوئی ایسی چیز نہیں ہے کہ جس پر لوگوں کو شرمندہ کیا جائے۔ ہمیں موٹاپے کے شکار لوگوں کو صحت مندانہ خوراک کھانے کی ترغیب دینی چاہیے نہ کہ ان کا مذاق اڑائیں کیونکہ اس طرح ان کا موٹاپا کم نہیں ہوتا بلکہ بڑھتا ہی ہے اور ان کی ذہنی صحت بھی متاثر ہوتی ہے۔ میرے خیال میں ہمیں موٹاپے کے شکار لوگوں کو یہ بھی نہیں کہنا چاہیے کہ اپنا موٹاپا ختم کرو۔ ہمیں ان سے کہنا چاہیے کہ اپنا شام کا پیزا ختم کرو۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -