اینکر پرسن کامران خان نے آرمی چیف کی پارلیمانی لیڈروں کے ساتھ اجلاس کی اندرونی کہانی بتا دی

اینکر پرسن کامران خان نے آرمی چیف کی پارلیمانی لیڈروں کے ساتھ اجلاس کی ...
اینکر پرسن کامران خان نے آرمی چیف کی پارلیمانی لیڈروں کے ساتھ اجلاس کی اندرونی کہانی بتا دی

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)معروف تجزیہ کار کامران خان نے دعویٰ کیا ہے کہ اپوزیشن جماعتو ں کی اے پی سی سے دو روز پہلے آئی ایس آئی کے میس میں ایک اجلاس ہواجس کے میزبان جنرل قمر باجوہ اور جنرل فیض حمید تھے۔کامران خان کے مطابق اس اجلاس میں ہر جماعت کے سینئر لیڈران موجود تھے، مہمانان میں شہباز شریف، بلاول بھٹو تمام اپوزیشن جماعتیں حتیٰ کہ مولانا فضل الرحمان کے صاحبزادے مولانا اسد محمود بھی۔کامران خان کا کہنا تھا کہ اس اجلاس کا موضوع تھا کہ گلگت بلتستان کو صوبہ بنانے کیلئے قومی سیاسی جماعتیں ایک پلیٹ فارم پر آئیں۔یہ اجلاس وزیراعظم عمران خان کی معلومات پہ اور انکی خواہش پہ ہوئی تھی۔اپنے یو ٹیوب چینل پر اینکر پرسن نے بتا یا کہ اس موقع پرفوجی لیڈرشپ نے اپوزیشن سے درخواست کی کہ خدارا آئندہ الیکشن کی تیاری کریں، الیکشن ریفارمز کریں تاکہ بہترین الیکشن ہو، آپ اپنے مسائل خود حل کریں، دوسری چیز یہ ہے کہ ہم قومی مسائل حل کرنے کی بجائے بیرکس میں بیٹھے رہیں اگر سیاسی لیڈرشپ قومی مسائل حل کرنے کی صلاحیت رکھے یا اسکے قابل ہوجائے گا۔

کامران خان کے مطابق یہ بہت مزے کی میٹنگ تھی کہ اپنی توجہ الیکشن ریفارمز پہ مرکوز رکھیں، ڈھائی سال ہوگئے اس حکومت کو آئے ہوئے، آپ الیکشن ریفارمز نہیں کررہے، اپنے حالات کو بہتر بنائیے۔ انہوں نے آرمی چیف کی باتیں بڑے انہماک سے سنیں، ان کی باتوں سے اتفاق کیالیکن انہوں نے اپنی اے پی سی میں اسٹیبشلمنٹ اسٹیبلشمنٹ کی تکرار لگادی۔

مزید :

قومی -