آغا سراج درانی کی درخواست ضمانت پر سماعت 23ستمبر تک ملتوی

آغا سراج درانی کی درخواست ضمانت پر سماعت 23ستمبر تک ملتوی
آغا سراج درانی کی درخواست ضمانت پر سماعت 23ستمبر تک ملتوی

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن ) سندھ ہائی کورٹ نے سپیکر صوبائی اسمبلی آغا سراج درانی کی درخواست ضمانت پر سماعت 23ستمبر تک ملتوی کردی۔سپیکر صوبائی اسمبلی نے قومی احتساب بیورو(نیب ) کی ممکنہ گرفتاری سے بچنے کے لئے عدالت سے رجوع کیا تھا۔

نجی ٹی وی 24نیوز کے مطابق سندھ ہائی کور ٹ میں جسٹس اقبال کلہوڑو نے سپیکر صوبائی اسمبلی آغا سراج درانی ودیگر کی درخواست ضمانت پر سماعت کی۔سپیکر سندھ اسمبلی کے وکیل عدالت میں پیش ہوئے او ر بتایا کہ آغا سراج درانی1988میں پہلی بار رکن اسمبلی بنے،نیب یہ تاثر دے رہا ہے کہ عوامی عہدے کے بعد جائیداد بنائی گئی۔

عدالت کی جانب سے جائیداد سے متعلق استفسار کیا گیا جس پر وکیل نے بتایا کہ تین ہزار 600ایکٹر زرعی پراپرٹی ہے، اگر اثاثے چھپائے ہیں تو فیڈ رل بورڈآف ریونیو(ایف بی آر ) کا کیس بنتا ہے۔عدالت نے استفسار کیا کہ کیا یہ پراپرٹی وراثت میں ملی ہے؟، جس پر وکیل نے بتایا کہ جی یہ پراپرٹی وراثت میں ملی ہے۔

آغا سراج درانی کے وکیل نے دلائل دیئے کہ نیب نے مزید کارروائی کے لئے دوبارہ کال اپ نوٹس بھیجا،ثابت ہوتا ہے کہ ہمار ا کیس مزید انکوائر ی کا ہے،اہلخانہ کوئی عوامی عہدہ نہیں رکھتے ہیں انہیں ملزم نہیں بنانا چاہیے تھا،گھریلو خواتین ہیں ان کو بھی نامزد کردیا گیا ہے۔

عدالت نے نیب پراسیکیوٹر سے استفسار کیا کہ ریفرنس کے تفتیشی افسر کہاں ہیں؟، جس کے جواب میں پراسیکیوٹر نے بتایا کہ تفتیشی افسر لاہور گئے ہیں جب عدالت کہے گی پیش ہوجائیں گے۔

بعدازاں عدالت نے کیس کی مزید سماعت 23ستمبر تک ملتوی کردی۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -