بیکن ہاؤس گروپ کا سیلاب متاثرین کیلئے امداد کا اعلان

  بیکن ہاؤس گروپ کا سیلاب متاثرین کیلئے امداد کا اعلان

  

لاہور(پ ر)پاکستان کے نجی تعلیمی اداروں کے سب سے بڑے نیٹ ورک بیکن ہاؤس نے اپنے فلاحی ادارے محمود علی قصوری ویلفیئر ٹرسٹ کے ذر یعے پاکستا ن میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں اور خاندانوں کی امداد اور تعمیر نو کے کاموں میں مدد کے لیے ڈیڑھ کروڑ روپے کا عطیہ دیا ہے۔بیکن ہاؤس نے اخوت فاؤنڈیشن کے ساتھ مل کر پنجاب میں ڈی جی خان، خیبرپختونخوا میں نوشہرہ،سندھ میں خیرپور اور ٹھٹھہ جبکہ بلوچستان کے علاقے  پشین میں ایک کروڑ روپے کے 2,000 راشن بیگ تقسیم کرکے سیلاب متاثرین کی مدد کی ہے۔ راشن بیگ میں چھ سے سات افراد کے لیے تقریباً ایک ماہ تک کے کھانے پینے کی مختلف اشیا ئفراہم کی گئی ہیں۔ اس کے علاوہ محمود علی قصوری ویلفیئر ٹرسٹ کے ذریعے متاثرہ علاقوں کی طویل مدتی بحالی کے لیے 50 لاکھ روپے کا مزید عطیہ بھی دیا جا رہا ہے۔سکولوں کی بہتری کے لیے کام کرنے والے پروجیکٹ پریمیئر ڈائیورسی لرننگ (PDLC)  کے ذریعے بیکن ہاؤس گروپ نے400 خاندانوں کو سندھ کے علاقے کولاب جیال میں سندھ گورنمنٹ کے زیر انتظام سکول میں ایک ماہ کے لیے خوراک کی فراہمی اور صحت کی بنیادی سہولیات بھی فراہم کیں۔بیکن ہاؤس گروپ کی جانب سے اخوت فاؤنڈیشن کے کلاتھ بنک کیلئے ملک بھر میں موجود بیکن ہاؤس، دی ایجوکیٹرز اور کنکورڈیا کالجز کے 1100 سے زائدکیمپسزمیں کپڑوں اور بستروں کے عطیہ کے حوالے سے ایک ہفتے کی مہم کا بھی اہتمام کیا گیا۔اس بارے میں مزید بات چیت کرتے  ہوئے بیکن ہاؤس کی بانی اور چیئرپرسن مسز نسرین محمود قصوری نے کہا کہ ''بیکن ہاؤس سماجی ذمہ داری کا حامی ادارہ ہے جو کہ اپنے وسیع تراقدامات کے ذریعے عوامی خدمات سر انجام دیتا ہے۔

 محمود علی قصوری ویلفیئر ٹرسٹ کے ذریعے ہم نے مشکل وقت میں ایک بار پھرپاکستان کا ساتھ دیا ہے اوراسی طرح دیتے رہیں گے۔ مجھے یقین ہے کہ ہم مل کر لاکھوں متاثرین کی زندگیوں اور گھروں کی تعمیر میں مدد کر سکتے ہیں ''۔بیکن ہاؤس گروپ نے ہمیشہ معاشرے کی بہتری کے لیے اہم کردار ادا کیا ہے اور یہ شراکت داری بھی اس کا ایک نمونہ ہے۔ بیکن ہاؤس گروپ پاکستان کا اعلیٰ تعلیمی ادارہ ہونے کے ناطے کمیونٹی کی خدمت اور متعدد سی ایس آر سرگرمیوں کے ذریعے معاشرے میں بہتری کے اپنے مشن کو جاری رکھے ہوئے ہے۔

مزید :

کامرس -