جعلی رجسٹری اور انتقال کے ذریعے گھر پر قبضہ کیس میں شہادتیں طلب 

جعلی رجسٹری اور انتقال کے ذریعے گھر پر قبضہ کیس میں شہادتیں طلب 

  

لاہور(نامہ نگار)رینٹ کنٹرولر جج محمد زاہد فرید نے جعلی رجسٹری اور انتقال کے ذریعے گھر پر قبضہ کرنے کے حوالے سے صادق مسیح بنام شہباز مسیح کیس کی سماعت 28ستمبر تک ملتوی کرتے ہوئے آئندہ سماعت پرشہادتیں طلب کر لیں مدعی فریق شہباز مسیح پر جرح کے دوران انکشاف انگیز امور سامنے آئے اور گلیکسو ٹاؤن میں واقع 5مرلے کے مکان پر قابض شہباز مسیح نے خود تسلیم کر لیا کہ اس نے مذکورہ جگہ 3مرلے کے محض کاغذات خریدے ہیں لیکن جگہ نہیں خریدی جگہ میں نے رشید جٹ سے جو اشٹام فروش ہے اس سے قسطوں پر جگہ لی ہے عدالت نے مذکورہ بالاحکم کے ساتھ کیس کی مزید سماعت آئندہ پیشی تک ملتوی کردی   متاثرہ شخص کاکہناہے کہ حلقہ پٹواری نے شہباز مسیح سے مل کر ٹائٹل خریدا اور شہباز مسیح کو مالک بنا دیا اور وہ غریب آدمی جو کہ رکشہ ڈرائیور ہے اسکے سر سے چھت چھین لی،میری تمام اعلیٰ افسران سے اپیل ہے کہ کیس میں فوری احکامات درج کر کے  انتقال نمبر2409کی پڑتال کی جائے اور میرٹ پر فیصلہ کر کے انتقال نمبر2409کو خارج کریں۔ 

 اور قبضہ مافیا محمد جاوید کے ساتھ مل کر پٹواری، منشی، رجسٹری محرر اور باقی جو بھی اس کیس میں ملوث ہیں ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے۔

شہادتیں طلب

مزید :

علاقائی -