پاکستان کو آج بنگلہ دیش سے ہر صورت جیتنے کی ضرورت

پاکستان کو آج بنگلہ دیش سے ہر صورت جیتنے کی ضرورت
پاکستان کو آج بنگلہ دیش سے ہر صورت جیتنے کی ضرورت

  

پاکستان اور بنگلہ دیش کی کرکٹ ٹیمیں آج تیسرے اور آخری ون ڈے کے لئے میدان میں اتر رہی ہیں بنگلہ دیش کی ٹیم سیریز پہلے ہی اپنے نام کرچکی ہے جبکہ پاکستان کی ٹیم کو مسلسل دو میچوں میں ناکامی ہوئی ہے آج کا میچ پاکستان کی نسبت بنگلہ دیش کی ٹیم کے لئے بہت زیادہ اہمیت کا حامل ہے اگر آج وہ ایک مرتبہ دوبارہ پاکستان کو شکست دینے میں کامیاب ہوگئی تو وہ ایک اور نئی تاریخ رقم کرلے گی و ہ پاکستان کے خلاف کلیئن سوئپ کامیابی کی صورت میں جبکہ پاکستانی ٹیم جو اس وقت پہلے ہی بہت مشکلات کا شکار ہے اس کیلئے یہ ایک اور شکست مزید شرمندگی کا باعث بنے گی پاکستان کے لئے بنگلہ دیش کو اس کی سر زمین پر شکست دینا اتنا مشکل نہیں تھا جتنا کہ مشکل نظر آیا بنگلہ دیش کے خلاف پاکستان نے اس سے قبل بھی کئی مرتبہ اس کی سر زمین پر کھیلا ہے اور کامیابی حاصل کی ہے لیکن اب جب ٹیم کو آگے بڑھنے کی ضرورت ہے ایسے موقع پر ٹیم کی جانب سے اس طرح کی کارکردگی قابل تشویش ہے امید ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ اس موقع پر کردار ادا کرتے ہوئے وہ اسباب تلاش کرے گا جس کی وجہ سے ٹیم مسلسل دباؤ کا شکار نظر آتی ہے اور جب تک وہ دباؤ ختم نہیں ہوگا پاکستان کے لئے مشکلات کھڑی رہیگی آج پاکستان کی ٹیم کو ہر صورت جیتنے کی ضرورت ہے پاکستان کرکٹ بورڈ نے ورلڈ کپ میں ناکامی کے بعد نئی ٹیم تشکیل دینے کا فیصلہ کیا اور بہت سوچ و بچار کے بعد ٹیم کے کھلاڑیوں کا تینوں فارمیٹس کے لئے چناؤ کیا جس سے لگ رہا تھا کہ اب بنگلہ دیش کے خلاف سیریز سے پاکستان کی کرکٹ ٹیم اپنی فتوحات کا نیا سلسلہ شروع کرے گی لیکن افسوس اظہر علی جن کو نیا کپتان مقرر کیا گیا تھا وہ توقعات پر پورا نہ اترسکے اور ان کے لئے یہ پہلی سیریز ہی بطور کپتان ایک ڈراؤنا خواب بن گئی لیکن ابھی بھی وقت ہے کہ وہ بطور کپتان ٹیم کو ٹھیک طریقہ سے ساتھ لیکر چلیں اور ٹیم کے باقی کھلاڑیوں کو بھی ان کا بھرپور ساتھ دینے کی ضرورت ہے ٹیم نے اس سیریز کے بعد سر ی لنکا کے خلاف کھیلنا ہے اور اس کیلئے پاکستان کو اس سیریز میں بہت اچھی پرفارمنس دکھا کر اپنے حوصلے بلند کرنے کی اشد ضرورت تھی۔

مزید : کالم