قومی بجٹ کی تیاری میں تاجر برادری سے مشاورت خوش آئند ہے،فیصل آبادچیمبر

قومی بجٹ کی تیاری میں تاجر برادری سے مشاورت خوش آئند ہے،فیصل آبادچیمبر

فیصل آباد (آن لائن) فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر چوہدری محمد نواز نے قومی بجٹ کی تیاری کے سلسلہ میں ملک بھر کی تاجر برادری کی مشاورت کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کم از کم 5 سالوں کیلئے یکساں ٹیکس پالیسی کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے پری بجٹ سیمینار میں شرکت کے بعد واپسی پر انہوں نے کہا کہ اس وقت ملک بھر کے چیمبر بجٹ تجاویز کی تیاری میں مصروف ہیں ۔ فیصل آباد چیمبر نے بھی اپنی بجٹ تجاویز تیار کر لی ہیں اور عنقریب فیصل آباد میں بھی پری بجٹ سیمینار ہوگا۔

ا نہوں نے کہا کہ نئے بجٹ میں حکومت کو یکساں پالیسی کے تحت کم از کم پانچ سالوں کیلئے ٹیکس کا اعلان کردینا چاہیئے۔ اس طرح خاص طور پر تاجر اور صنعتکار طبقہ ٹیکسوں کی بجائے اپنی پوری توجہ کاروبار پر دے سکے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ٹیکس دہندگان کی تعداد بڑھانے کیلئے یکساں ٹیکس نظام ضروری ہے۔ ہر شخص جو بھی کماتا ہے اسے اپنی حیثیت کے مطابق تھوڑا یا زیادہ ٹیکس ضرور دینا چاہیئے۔ اس سلسلہ میں کسی شعبہ کو بھی ٹیکس سے استثنیٰ حاصل نہیں ہونا چاہیئے۔ اس طرح جہاں نئے ٹیکس دہندگان کی تعداد بڑھے گی وہاں حکومت ٹیکسوں کی موجودہ شرح کو بھی کم کر سکے گی۔ انہوں نے ملک سے بلیک اکانومی کے خاتمہ پر بھی زور دیا مگر کہا کہ اس سلسلہ میں حکومت کے تمام اقدامات سطحی ہیں اور اس سے کوئی مثبت نتیجہ برآمد نہیں ہوا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ٹیکس دہندگان کی حوصلہ افزائی کی بجائے ہر چار یا پانچ سال بعد ٹیکس نہ دینے والوں کو ایمنسٹی کی شکل میں مختلف قسم کی مراعات دیتی ہے۔ حالانکہ یہ اقدام محب وطن ٹیکس دہندگان کے ساتھ صریحاً زیادتی ہے جو گزشتہ کئی سالوں سے ذمہ داری کا ثبوت دیتے ہوئے مسلسل ٹیکس دے رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلہ کو ہمیشہ اور مستقل بنیادوں پر ختم کرنے کیلئے این ٹی این نمبرنہ رکھنے والوں کیلئے کوئی بھی چیز خریدنے یا بیچنے پر مکمل پابندی لگا دینی چاہیئے تا کہ ان کو ٹیکس کے قومی دھارے میں لایا جا سکے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایف بی آر کی استعداد کار کو بڑھانے اور موجودہ نظام کی خامیوں کو دور کرنے کیلئے بھی فوری اقدامات ضروری ہیں۔ انہوں نے اس توقع کا اظہار کیا کہ تاجروں کی مشاورت سے بننے والے بجٹ سے نہ صرف تاجر بلکہ عوام بھی مطئن ہونگے اور وہ خوش دلی سے اپنے ذمہ ٹیکس بھی ادا کریں گے۔

مزید : کامرس